بنگال میں 43 ڈاکٹروں کا استعفیٰ، باقی ریاستوں میں بھی میڈیکل خدمات ٹھپ، ،ممتاحکومت کو ہائی کورٹ کی پھٹکار

دہلی میڈیکل ایسوسی ایشن (ڈی ایم اے) نےہڑتال بلائی ہے۔ اس کے علاوہ دہلی کے ساتھ ممبئی، پنجاب۔ کیرالہ، راجسھتان، بہار، مدھیہ پردیش میں بھی ڈاکٹروں نے کام کرنے سے انکار کر دیا ہے۔ یہاں کے اسپتال میں اوپی ڈی بند ہونے سے مریضوں کا برا حال ہے۔

Jun 14, 2019 02:33 PM IST | Updated on: Jun 14, 2019 03:25 PM IST
بنگال میں 43 ڈاکٹروں کا استعفیٰ، باقی ریاستوں میں بھی میڈیکل خدمات ٹھپ، ،ممتاحکومت کو ہائی کورٹ کی پھٹکار

مغربی بنگال میں  جونیئر ڈاکٹر کے ساتھ مارپیٹ کے بعد شروع ہوئی ہڑتال کی آنچ اب دہلی سمیت باقی ریاستوں تک پہنچ گئی ہے۔ بنگال کے ڈاکٹرس کے سپورٹ میں دہلی کے ساتھ ممبئی، پنجاب۔ کیرالہ، راجسھتان، بہار، مدھیہ پردیش میں بھی ڈاکٹروں نے کام کرنے سے انکار کر دیا ہے۔ یہاں کے اسپتال میں اوپی ڈی بند ہونے سے مریضوں کا برا حال ہے۔ وہیں بنگال میں ممتا حکومت سے ناراض ہوکر اب تک 43ڈاکٹرس استعفیٰ چکے ہیں۔

دہلی میڈیکل ایسوسی ایشن (ڈی ایم اے) نےہڑتال بلائی ہے۔ جس کا اثرایمس جیسےبڑے اسپتالوں میں دیکھنے کو مل رہا ہے۔ ایمس کے باہر مریضوں اور تیمارداروں کا جماوڑہ لگاہے۔ اس کے علاوہ ممبئی میں بھی ڈاکٹروں نے کام کرنے سے انکار کردیا ہے۔ ممبئی کے ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ وہ سائلینٹ پروٹیسٹ کر رہے ہیں۔ حالانکہ یہ ڈاکٹرس ایمرجنسی کیس ہینڈل کررہے ہیں۔

بتادیں کہ مغربی بنگال کے ڈاکٹروں نے وزیراعلی ممتابنرجی کے ذریعے 4گھنٹے میں ہڑتال ختم کرنے کے الٹیمیٹم دئے جانے کے باوجود اپنی ہڑتال ختم کرنے سے انکار کردیا۔ ڈکٹروں نے سی ایم پر دھمکی دینے کا الزام لگایا ہے جس کے بعد ممتا نے ڈاکٹروں سے مریضوں کی دیکھ بھال کرنے کی درخواست کی ہے۔

دہلی ایمس کی ان تصویروں میں دیکھ سکتے ہیں آپ کہ ڈاکٹر مخالفت میں ہیلمیٹ پہن کر ایمرجنسی کیس ہینڈل کر رہے ہیں۔

بتادیں کہ کولکاتہ ہائی کورٹ نے ممتا حکومت کو پھٹکار لگاتے ہوئے کہا کہ بات چیت کرکے مغربی بنگال حکومت ڈاکٹروں کا یہ مسئلہ سلجھائے۔

Loading...