உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ED نے کھولے ارپتا مکھرجی اور پارتھ چٹرجی کے درمیان کے کئی راز، دونوں کا تھا یہ پلان

    ED  نے کھولے ارپتا مکھرجی اور پارتھ چٹرجی کے درمیان کے کئی راز، دونوں کا تھا یہ پلان ۔ تصویر : ANI

    ED نے کھولے ارپتا مکھرجی اور پارتھ چٹرجی کے درمیان کے کئی راز، دونوں کا تھا یہ پلان ۔ تصویر : ANI

    secrets between Partha Chatterjee and Arpita Mukherjee: جیسے جیسے جانچ آگے بڑھ رہی ہے، انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ کے ذریعہ مغربی بنگال کے وزیر پارتھ چٹرجی اور ان کی قریبی ساتھی ارپتا مکھرجی کے درمیان کے کئی راز بھی بے نقاب ہو رہے ہیں۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • West Bengal | Kolkata [Calcutta] | Kolkata
    • Share this:
      کولکاتہ : جیسے جیسے جانچ آگے بڑھ رہی ہے، انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ کے ذریعہ مغربی بنگال کے وزیر پارتھ چٹرجی اور ان کی قریبی ساتھی ارپتا مکھرجی کے درمیان کے کئی راز بھی بے نقاب ہو رہے ہیں۔ ای ڈی کی جانچ میں یہ بات ثابت ہوئی ہے کہ ارپتا اور پارتھ چٹرجی کی جائیداد کی جوائنٹ سیل ڈیڈ ہے۔ یہ سیل ڈیڈ چھاپے کے دوران ملی ہے ۔ مشترکہ نام سے سیل ڈیڈ سے یہ پتہ چلتا ہے کہ دونوں مشترکہ طور پر جائیداد خرید رہے تھے۔

       

      یہ بھی پڑھئے: سری نگر کے تاریخی لال چوک کے گھنٹہ گھر پر لہرایا ترنگا


      ای ڈی کے مطابق پارتھ چٹرجی کے گھر سے ارپتا مکھرجی کی جائیداد کے دستاویزات ملے ہیں۔ اس کے علاوہ ای ڈی کو پارتھ چٹرجی اور ارپتا مکھرجی کے مشترکہ اثاثوں سے متعلق دستاویزات بھی ملے ہیں۔ یہ پراپرٹی پارتھ نے 2012 میں خریدی تھی۔

       

      یہ بھی پڑھئے: دھونی کی بڑھیں مشکلیں! سپریم کورٹ نے پیسے کے لین دین میں بھیجا نوٹس


      جانچ سے پتہ چلا ہے کہ پارتھ چٹرجی ہمیشہ ارپتا مکھرجی کے ساتھ رابطے میں رہتے تھے ۔ پارتھ اپنے موبائل فون کے ذریعہ ارپتا سے باقاعدہ رابطے میں تھے۔ اس دوران پارتھ چٹرجی نے اپنے گرفتاری میمورنڈم پر دستخط کرنے سے انکار کر دیا تھا ۔

      ارپتا نے پوچھ گچھ کے دوران یہ بھی تسلیم کیا کہ نقدی پارتھ کی ہے۔ اگر ارپتا مکھرجی کے گھر پر چھاپہ نہ مارا جاتا تو ایک دو دن میں ان کے گھر سے نقد رقم باہر لے جانے کا منصوبہ تھا۔ جانچ کے مطابق پارتھ ارپتا مکھرجی سے منسلک کمپنیوں میں پیسہ لگانے کا منصوبہ بنا رہے تھے۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: