உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Big News on RRB-NTPC Protest:سشیل مودی کا دعویٰ- وزیر ریلوے اشونی ویشنو نے مان لی طلبہ کی مانگ

    سشیل مودی نے دعویٰ کیا ہے کہ احتجاجی طلبہ کا مطالبہ مان لیا گیا ہے۔

    سشیل مودی نے دعویٰ کیا ہے کہ احتجاجی طلبہ کا مطالبہ مان لیا گیا ہے۔

    بتایا جا رہا ہے کہ ریلوے کے وزیر اشونی ویشنو نے طلباء کا مطالبہ مان لیا ہے۔ انہوں نے یقین دلایا ہے کہ گروپ ڈی کا امتحان ایک ہی ہوگا۔ بی جے پی لیڈر اور ایم پی سشیل مودی نے دعوی کیا ہے کہ اشونی ویشنو نے طلبہ کی مانگ مان لی ہے۔

    • Share this:
      پٹنہ:ریلوے کے این ٹی پی سی امتحان میں طلبا کی طرف سے بہار بند کے اعلان کے بعد ایک بڑی خبر آ رہی ہے۔ بتایا جا رہا ہے کہ ریلوے کے وزیر اشونی ویشنو نے طلباء کا مطالبہ مان لیا ہے۔ انہوں نے یقین دلایا ہے کہ گروپ ڈی کا امتحان ایک ہی ہوگا۔ بی جے پی لیڈر اور ایم پی سشیل مودی نے دعوی کیا ہے کہ اشونی ویشنو نے طلبہ کی مانگ مان لی ہے۔

      سوشل میڈیا پر پوسٹ کرتے ہوئے سشیل مودی نے کہا ہے کہ ریلوے کے وزیر اشونی وشنو نے یقین دلایا ہے کہ گروپ-ڈی کے دو کے بجائے ایک امتحان ہوگا اور NTPC امتحان کے 3.5 لاکھ اضافی نتائج کا ’ایک طالب علم-ایک نتیجہ‘ کی بنیاد پر اعلان کیا جائے گا۔ پر وزیر ریلوے نے سشیل مودی کو یقین دلایا ہے کہ حکومت طلباء کے ساتھ متفق ہے اور ان کے مطالبے کے مطابق جلد ہی فیصلہ لیا جائے گا۔ سشیل مودی نے ریلوے کے وزیر ویشنو کو لاکھوں امیدواروں کے مسائل اور مطالبات کے بارے میں تفصیل سے آگاہ کیا۔ مودی نے وزیر ریلوے پر زور دیا کہ این ٹی پی سی کے معاملے کا فیصلہ ’ایک امیدوار ایک نتیجہ‘ کے اصول پر کیا جانا چاہیے۔ سشیل مودی نے ریاست کی پولیس انتظامیہ سے بھی اپیل کی ہے کہ طلباء کے خلاف کوئی زبردستی کارروائی نہ کی جائے۔ طلباء کوئی مجرم نہیں ہیں۔


      سشیل مودی نے اس بارے میں ایک کے بعد ایک ٹویٹ کیا ہے۔ انہوں نے اپنے ایک ٹویٹ میں لکھا - ’میں ریاست کی پولیس انتظامیہ سے اپیل کرتا ہوں کہ طلباء کے خلاف کوئی زبردستی کارروائی نہ کی جائے۔ طلباء کوئی مجرم نہیں ہیں۔ طلباء سے اپیل ہے کہ وہ تحمل کا مظاہرہ کریں تاکہ ریلوے بورڈ معاملے کے تمام پہلوؤں کی تحقیقات مکمل کر کے امتحان دینے والوں کے مفاد میں فیصلہ لے سکے۔‘

      طلبہ نے کیا ہے بہار بند کا اعلان
      طلبہ تنظیموں نے 28 جنوری کو بہار بند کا اعلان کیا ہے۔ طلباء کے اس بند کی حمایت کرتے ہوئے مہا گٹھ بندھن کی تمام جماعتوں نے بند میں شامل ہونے کی بات کہی ہے۔ آر جے ڈی، کانگریس، مالے، سی پی آئی سمیت این ڈی اے کے اتحادیوں اور ہم پارٹی کے سربراہ جیتن رام مانجھی نے بھی بند کی حمایت کی ہے۔ اب دیکھنا یہ ہے کہ ریلوے امیدوار اپنے اعلان کردہ بند کو کیسے اپناتے ہیں۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: