உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Big News: یاسین ملک نے اپنے اوپر لگے الزامات کو صحیح مانا، 19 مئی کو سزا پر سماعت

    Big News: یاسین ملک نے اپنے اوپر لگے الزامات کو صحیح مانا، 19 مئی کو سزا پر سماعت

    Big News: یاسین ملک نے اپنے اوپر لگے الزامات کو صحیح مانا، 19 مئی کو سزا پر سماعت

    Yasin Malik News: کشمیر کے علاحدگی پسند لیڈر یاسین ملک نے پٹیالہ ہاوس کورٹ کی این آئی اے عدالت میں اپنی غلطی تسلیم کی ہے ۔ ساتھ ہی انہوں نے کورٹ سے قانون کے مطابق سزا دینے کا مطالبہ کیا ہے ۔ اب یاسین ملک کی سزا پر 19 مئی کو عدالت میں سماعت کی جائے گی ۔

    • Share this:
      نئی دہلی : کشمیر کے علاحدگی پسند لیڈر یاسین ملک نے اپنے اوپر لگے الزامات کو صحیح مانا ہے ۔ کشمیر کے علاحدگی پسند لیڈر یاسین ملک نے پٹیالہ ہاوس کورٹ کی این آئی اے عدالت میں اپنی غلطی تسلیم کی ہے ۔ ساتھ ہی انہوں نے کورٹ سے قانون کے مطابق سزا دینے کا مطالبہ کیا ہے ۔ اب یاسین ملک کی سزا پر 19 مئی کو عدالت میں سماعت کی جائے گی ۔ یاسین ملک پر غیر قانونی سرگرمی ، ملک کے خلاف جنگ چھیڑنے اور مجرمانہ سازش رچنے کے الزامات لگائے گئے ہیں ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: اننت ناگ کے ڈورو علاقے میں انکاونٹر، 2 ملی ٹینٹ ہلاک، سیکورٹی فورسیز کے 4 جوان زخمی


      عدالت کے ذرائع نے کہا کہ ملک نے عدالت کو بتایا کہ وہ یو اے پی اے کے دفعہ 16 ( دہشت گردانہ سرگرمی) ، 17 ( دہشت گردانہ سرگرمی کیلئے رقم جمع کرنا)، 18 ( دہشت گردانہ فعل کی سازش رچنا) اور آئی پی سی کی دفعہ 120 بی و 124 اے کے تحت خود پر لگے الزامات کو چیلنج کرنا نہیں چاہتا ۔ خصوصی جج پروین سنگھ 19 مئی کو ملک کے خلاف لگائے گئے الزامات کے لئے سزا کے سلسلہ میں دلیلیں سنیں گے ، جن میں زیادہ سے زیادہ سزا عمر قید ہے ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: محبوبہ مفتی نے ایل جی کو سوریہ مندر میں پوجا کرنے پر تنقید کا نشانہ بنایا، کہی یہ بات


      اس درمیان عدالت نے فاروق احمد ڈار عرف بٹٹا کراٹے ، شبیر شاہ ، مسرت عام ، محمد یوسف شاہ ، آفتاب احمد شاہ، الطاف احمد شاہ ، نعیم خان، محمد اکبر کھانڈے ، راجا محی الدین کلوال ، بشیر احمد بھٹ سمیت دیگر کشمیری علاحدگی پسند لیڈروں کے خلاف رسمی طور پر الزامات طے کئے ۔

      لشکر طیبہ کے بانی حافظ سعید اور حزب المجاہدین کے سربراہ سید صلاح الدین کے خلاف بھی چارج شیٹ دائر کی گئی تھی ، جنہیں معاملہ میں مفرور اعلان کیا گیا ہے۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: