ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

بہار اسمبلی انتخابات قریب آتے ہی اقلیتی اسکیموں پر تیز ہوئی سیاست، اپوزیشن کا نتیش حکومت پر بڑا الزام

آرجے ڈی ایم ایل اے نعمت اللہ کے مطابق موجودہ نتیش حکومت اقلیتوں کے مسیحا بننے کا دعویٰ تو کرتے ہیں، لیکن اقلیتوں کے نام پر چلنے والی اسکیموں کو زمین پر اتارنے میں دلچسپی نہیں دکھاتے ہیں۔

  • Share this:
بہار اسمبلی انتخابات قریب آتے ہی اقلیتی اسکیموں پر تیز ہوئی سیاست، اپوزیشن کا نتیش حکومت پر بڑا الزام
بہار اسمبلی انتخابات قریب آتے ہی اقلیتی اسکیموں پر تیز ہوئی سیاست

پٹنہ: بہار میں کوئی بھی پارٹی ریاست کے 17 فیصدی اقلیتی ووٹوں کو گنوانا نہیں چاہتی ہے۔ یہی وجہ ہےکہ ہر انتخابات میں اقلیتوں کے معاملے پر جم کر سیاست ہوتی ہے بلکہ یوں کہیں کہ اقلیتی ووٹوں کے ارد گرد بہار کی سیاست گھومتی رہی ہے، لیکن گزشتہ انتخابات میں اقلیتوں کو نظر انداز کیا گیا تھا اور اقلیتی سماج کے مدّعہ کو ان پارٹیوں نے بھی اٹھانا ضروری نہیں سمجھا تھا، جن پارٹیوں کا بنیادی ووٹ اقلیتی سماج رہا ہے۔ اس سے اقلیت بالخصوص مسلمانوں میں سخت ناراضگی دیکھی گئی تھی، اس بار حالات مختلف ہیں۔


اپوزیشن پارٹی نے اقلیتوں کے مدّعہ کو اٹھا کر اقلیتی سماج کے ہمدرد بننے کا دعویٰ کیا ہے۔ آرجے ڈی ایم ایل اے نعمت اللہ کے مطابق موجودہ نتیش حکومت اقلیتوں کے مسیحا بننے کا دعویٰ تو کرتے ہیں، لیکن اقلیتوں کے نام پر چلنے والی اسکیموں کو زمین پر اتارنے میں دلچسپی نہیں دکھاتے ہیں۔ نعمت اللہ کا کہنا ہے کہ ایک سال پرانا اقلیتی رہائشی منصوبہ ابھی بھی کاغذ پر ہےجبکہ اس منصوبہ کو شروع کرنے سے مزدوروں کو روزگار ملنے کے علاوہ اقلیتی آبادی کی تعلیمی مشکلیں بھی حل ہو سکتی ہے، لیکن اس تعلق سے نتیش کمار بالکل سنجیدہ نہیں ہے۔


جے ڈی یو کے ایم ایل سی مولانا غلام رسول بلیاوی کے مطابق نتیش کمار بہار کے پہلے وزیر اعلیٰ ہیں، جنہوں نے اقلیتوں کے فلاح کا کام شروع کیا ہے۔ فائل فوٹو
جے ڈی یو کے ایم ایل سی مولانا غلام رسول بلیاوی کے مطابق نتیش کمار بہار کے پہلے وزیر اعلیٰ ہیں، جنہوں نے اقلیتوں کے فلاح کا کام شروع کیا ہے۔ فائل فوٹو


آرجے ڈی نے کہا کی اگر اس مسئلہ پر فوری طور پر حکومت غور نہیں کرتی ہے تو پارٹی ریاست گیر سطح پر مہم چلائےگی۔ وہیں جے ڈی یو، آر جے ڈی کے الزام پر سخت ناراضگی کا اظہار کیا ہے۔ جے ڈی یو کے ایم ایل سی مولانا غلام رسول بلیاوی کے مطابق نتیش کمار بہار کے پہلے وزیر اعلیٰ ہیں، جنہوں نے اقلیتوں کے فلاح کا کام شروع کیا ہے۔ مولانا بلیاوی نے کہا کی اقلیتی رہائشی اسکول سبھی اضلاع میں بننا ہے۔ تاخیر ضرور ہوئی ہے، لیکن اسکول قائم ہوگا اس میں کوئی شک نہیں ہے۔ مولانا غلام بلیاوی نے لوگوں کو بھروسہ دلایا ہے کہ جلد ہی اس منصوبہ پر عمل در آمد شروع ہوگا۔ ظاہر ہے سبھی سیاسی پارٹیوں کو اقلیتوں کا ووٹ چاہئے، انتخابات قریب ہے تو اب اقلیتی اسکیموں پر سیاست بھی شروع ہوگئی ہے۔ دیکھنا دلچسپ ہوگا کہ اس سیاست کا فائدہ اقلیتوں کو کتنا ملتا ہے یا پھر ان کے حصہ میں صرف بیان بازی اور اعلانات ہی آتا ہے۔
First published: Jun 06, 2020 10:58 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading