ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

بہار : محکمہ تعلیم کے اس ایک فیصلہ سے تقریبا 50 ہزار ڈرائیور اور کنڈیکٹر کی تنخواہوں پر آفت

پرائیویٹ اسکول اینڈ چلڈرین ویلفیئر ایسوسی ایشن کا کہنا ہے کہ بہار کے 25 ہزار نجی اسکولوں میں چھوٹی اور بڑی گاڑیوں پر تقریبا 50 ہزار ڈرائیور اور کنڈیکٹر کام کرتے ہیں ۔

  • Share this:
بہار : محکمہ تعلیم کے اس ایک فیصلہ سے تقریبا 50 ہزار ڈرائیور اور کنڈیکٹر کی تنخواہوں پر آفت
بہار : محکمہ تعلیم کے اس ایک فیصلہ سے تقریبا 50 ہزار ڈرائیور اور کنڈیکٹر کی تنخواہوں پر آفت

لاک ڈاؤن کو دیکھتے ہوئے بہار کے محکمہ تعلیم نے نجی اسکولوں کے حوالے سے کافی اہم فیصلہ کیا ہے۔ محکمہ نے ٹرانسپورٹیشن فیس لینے پر پوری طرح سے روک لگا دی ہے ۔ محکمہ کے اس فیصلہ کا لوگوں نے خیر مقدم کیا ہے ۔ مارچ اور اپریل کے مہینے میں نجی اسکولوں کے طلبہ و طالبات کے سرپرستوں نے اطمینان کی سانس لی ہے ۔ ادھر پرائیویٹ اسکول اینڈ چلڈرین ویلفیئر ایسوسی ایشن نے اس معاملہ پر سوال کھڑا کیا ہے ۔ ایسوسی ایشن کے مطابق ضلع کے ڈی ایم نے پہلے سے ہی ٹرانسپورٹیشن فیس نہیں لینے کی اسکولوں کو ہدایت دی ہے ۔ اب محکمہ تعلیم نے بھی اس پر روک لگا دی ہے۔ مسلہ ٹرانسپورٹیشن فیس کا نہیں ہے ۔ لاک ڈاؤن میں حکومت کے اس فیصلہ کے خلاف ایسوسی ایشن نہیں ہے ، بلکہ ہم یہ چاہتے ہیں کی حکومت نجی اسکولوں کے لئے اسپیشل رقم مہیا کرائے ۔


پرائیویٹ اسکول اینڈ چلڈرین ویلفیئر ایسوسی ایشن کے قومی صدر شمائل احمد لگاتار اس بات کا اعادہ کررہے ہیں کی نجی اسکولوں کی حالت خراب ہوتی جارہی ہے ۔ شمائل کے مطابق نجی اسکولوں کے سامنے اپنے تدریسی اور غیر تدریسی ملازمین کو تنخواہ دینے کا سوال پیدا ہوگیا ہے اور صوبہ کے زیادہ تر اسکول مالی بحران کے شکار ہیں ۔ اوپر سے محکمہ تعلیم نے ڈرائیور کو بھی مشکل میں ڈال دیا ہے۔


پرائیویٹ اسکول اینڈ چلڈرین ویلفیئر ایسوسی ایشن کا کہنا ہے کہ بہار کے 25 ہزار نجی اسکولوں میں چھوٹی اور بڑی گاڑیوں پر تقریبا پچاس ہزار ڈرائیور اور کنڈیکٹر کام کرتے ہیں ۔ اسکول کو ٹرانسپورٹیشن فیس اب ملےگی نہیں ، ایسے میں زیادہ تر اسکول اپنے ڈارائیور کو تنخواہ نہیں دے سکیں گے ۔ ایسوسی ایشن کے صدر کا کہنا ہے کہ ڈرائیور اور ان کے گھر والوں کے سامنے دو وقت کی روٹی کا سوال کھڑا ہوگیا ہے ۔ ایسے میں حکومت جلد سے جلد نجی اسکولوں کے لئے خصوصی مراعات کا اعلان کرے ۔ حکومت اگر ایسوسی ایشن کے مطالبات پر غور نہیں کرتی ہے ، تو اسکولوں میں کام کرنے والے ڈرائیور اور ان جیسے دوسرے ملازمین کی مالی مشکلات کافی بڑھ جائیں گی ۔

First published: Apr 13, 2020 09:56 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading