ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

Bihar Election Result: رجحانات کو کبھی بھی پلٹ سکتے ہیں نتیجے، 20 سیٹوں پر ایک ہزار سے کم کا فرق

الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری کئے گئے اعدادوشمار کے مطابق ریاست کی 20 سیٹوں پر ووٹوں کا فرق 1000 سے بھی کم ہے، جس میں عطیم اتحاد کی 11 سیٹیں اور بی جے پی 6 سیٹیں ہیں۔ ایسے میں ان رجحانات پر بھروسہ کرنا جلد بازی ہوگی۔ یہ اعدادوشمار کبھی بھی تازہ رجحانات کو بدل سکتے ہیں۔

  • Share this:
Bihar Election Result: رجحانات کو کبھی بھی پلٹ سکتے ہیں نتیجے، 20 سیٹوں پر ایک ہزار سے کم کا فرق
رجحانات کو کبھی بھی پلٹ سکتے ہیں نتیجے، 20 سیٹوں پر ایک ہزار سے کم کا فرق

پٹنہ: بہار اسمبلی انتخابات 2020 (Bihar election Results 2020) کو لے کر اب تک آئے رجحانات میں این ڈی اے اکثریت کے قریب نظر آرہی ہے۔ جبکہ عظیم اتحاد بھی نتیش کمار کے چہرے پر الیکشن لڑ رہے این ڈی اے کو سخت ٹکر دے رہا ہے۔ دونوں میں کچھ ہی سیٹوں کا فرق بنا ہوا ہے۔ وہیں الیکشن کمیشن کا کہنا ہے کہ ابھی الیکشن کے حتمی نتائج کو لے کر کوئی اندازہ لگانا جلد بازی ہوگی۔ الیکشن کمیشن کے ذریعہ جاری کئے گئے اعدادوشمار کے مطابق ریاست کی 20 سیٹوں پر ووٹوں کا فرق 1000 سے بھی کم ہے۔ ایسے میں ان رجحانات پر بھروسہ کرنا جلد بازی ہوگی۔ یہ اعدادوشمار کبھی بھی تازہ ترین رجحانات کو بدل سکتے ہیں۔


الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری کئے گئے اعدادوشمار کے مطابق ریاست کی 20 سیٹوں پر ووٹوں کا فرق 1000 سے بھی کم ہے، جس میں عطیم اتحاد کی 11 سیٹیں اور بی جے پی 6 سیٹیں ہیں۔ ایسے میں ان رجحانات پر بھروسہ کرنا جلد بازی ہوگی۔ یہ اعدادوشمار کبھی بھی تازہ رجحانات کو بدل سکتے ہیں۔ وہیں تقریباً 50 سیٹیں ایسی ہیں، جہاں پر ووٹوں کا فرق تقریباً 3000 ہے۔


الیکشن کمیشن نے کہا- دیر رات تک مکمل ہوگی ووٹوں کی گنتی


الیکشن کمیشن نے اس کے ساتھ ہی امید ظاہر کی ہے کہ آج دیر رات تک گنتی پوری ہوجائے گی۔ کورونا کی وجہ سے پولنگ سینٹرس کی تعداد زیادہ تھی، جس کے لئے 1.25 لاکھ ای وی ایم مشینوں کا استعمال ہوا۔ الیکشن کمیشن نے کہا کہ ووٹوں کی گنتی سست نہیں چل رہی ہے بلکہ ای وی ایم کی تعداد زیادہ ہوگئی ہے۔ سال 2015 کے مقابلے کئی چیزوں میں اضافہ ہوا ہے۔ مثلاً پولنگ سینٹرس، بیلٹ پیپرس، ایسے میں یہ نہیں کہہ سکتے ہیں کہ ووٹوں کی گنتی سست ہو رہی ہے۔ ہاں کچھ وقت زیادہ ضرور لگ سکتا ہے۔ الیکشن کمیشن آف انڈیا نے ایک پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ پہلے ووٹوں کی گنتی کے 26-25 راونڈ ہوا کرتے تھے، اس بار یہ بڑھ کر اوسطاً 35 راونڈ ہوگئے، اس لئے ووٹنگ دیر شام تک جاری رہے گی۔ الیکشن کمیشن نے کہا کہ اب تک بغیر کسی پریشانی کے ووٹوں کی گنتی جاری ہے۔ بہار میں تقریباً ایک کروڑ سے زیادہ ووٹوں کی گنتی کی جاچکی ہے، جس کا مطلب ہے کہابھی بھی بڑے حصے کی ووٹنگ ہونی باقی ہے۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Nov 10, 2020 06:54 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading