ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

Bihar Election Results: سیمانچل کی 5 سیٹوں پر اے آئی ایم آئی ایم نے کیا قبضہ، حیدرآباد میں منایا گیا جشن، اسد الدین اویسی نے کیا وعدہ پورا کرنے کا عزم

بہار اسمبلی انتخابات 2020 (Bihar Election Results) میں پارٹی کی کارکردگی سے خوش اسدالدین اویسی (Asaduddin Owaisi) نے ٹوئٹ کرکے کہا کہ یہ ہمارے لئے خوشگوار لمحہ ہے، کیونکہ بہار کے لوگوں نے ہمیں اتنے ووٹوں سے سرفراز کیا ہے۔

  • Share this:
Bihar Election Results: سیمانچل کی 5 سیٹوں پر اے آئی ایم آئی ایم نے کیا قبضہ، حیدرآباد میں منایا گیا جشن، اسد الدین اویسی نے کیا وعدہ پورا کرنے کا عزم
سیمانچل کی 5 سیٹوں پر اے آئی ایم آئی ایم نے کیا قبضہ، حیدرآباد میں منایا گیا جشن

پٹنہ: بہار اسمبلی انتخابات میں اسد الدین اویسی (Asaduddin Owaisi) کی پارٹی آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین (AIMIM) کو پانچ سیٹوں پر جیت ملی ہے۔ بہار میں پارٹی کی اس شاندار کارکردگی سے تلنگانہ میں جشن کا ماحول دیکھا گیا۔ حیدرآباد میں اسد الدین اویسی کی رہائش گاہ کے باہر پارٹی کارکنان نے آتش بازی کرکے جشن منایا۔ بہار اسمبلی الیکشن میں پارٹی کی کارکردگی سے خوش اسدالدین اویسی نے ٹوئٹ کرکے کہا کہ یہ ہمارے لئے شاندار لمحہ ہے، کیونکہ بہار کے لوگوں نے ہمیں اتنے ووٹوں سے سرفراز کیا ہے۔ ہمارے لیڈروں اور کارکنان نے بہار میں پارٹی کو مضبوط بنانے کے لئے سخت محنت کی۔ آگے ہمارے ذریعہ کئے گئے وعدوں کو پورا کرنے کی کوشش ہم کریں گے۔


 






مجلس اتحاد المسلمین (اے آئی ایم آئی ایم) نے کہا کہ منگل کو ریاست کی عوام نے ان لوگوں کو معقول جواب دیا ہے، جو اسے بہار اسمبلی انتخابات میں ’ووٹ کٹوا’ کہہ رہے تھے۔ اسد الدین اویسی کی قیادت والی پارٹی بہار کے سیمانچل علاقے کی پانچ سیٹوں پر جیت حاصل کرنے میں کامیاب ہوئی ہے۔ ان علاقوں میں مسلمانوں کی آبادی زیادہ ہے۔ بہار کے اسمبلی انتخابات نتائج کی تصویر صاف ہوگئی ہے۔ بی جے پی - جے ڈی یو اتحاد (این ڈی اے) کو واضح اکثریت حاصل ہوگئی ہے۔

بہار اسمبلی الیکشن میں پارٹی کی کارکردگی سے خوش اسدالدین اویسی نے ٹوئٹ کرکے کہا کہ یہ ہمارے لئے شاندار لمحہ ہے، کیونکہ بہار کے لوگوں نے ہمیں اتنے ووٹوں سے سرفراز کیا ہے۔
بہار اسمبلی الیکشن میں پارٹی کی کارکردگی سے خوش اسدالدین اویسی نے ٹوئٹ کرکے کہا کہ یہ ہمارے لئے شاندار لمحہ ہے، کیونکہ بہار کے لوگوں نے ہمیں اتنے ووٹوں سے سرفراز کیا ہے۔


آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے قومی ترجمان عاصم وقار نے کہا تھا کہ واضح اکثریت نہ ملنے کی صورت میں پارٹی کے رخ کا فیصلہ پارٹی سربراہ اسدالدین اویسی کریں گے، لیکن پارٹی بی جے پی سے متعلقہ کسی بھی اتحاد کے ساتھ نہیں جائے گی۔ بہار اسمبلی انتخابات کی تشہیر کے وقت کانگریس کے سینئر لیڈر رندیپ سرجے والا اور پردیش کانگریس کمیٹی کے صدر مدن موہن جھا نے اے آئی ایم آئی ایم کو بی جے پی کی بی ٹم قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ یہ ’ووٹ کٹوا’ کا کردار نبھا رہی ہے۔ اس ضمن میں وقار احمد نے کہا، ’جن لوگوں نے ووٹ کٹوا کہا تھا، انہیں عوام نے معقول جواب دیا ہے’۔ مجلس اے آئی ایم آئی ایم کے امیدواروں نے آمور، کوچادھمن، جوکی ہاٹ، بہادر گنج اور بائیسی میں فیصلہ کن سبقت بنائی ہے۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Nov 11, 2020 01:36 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading