ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

آر جے ڈی کے بہار بند میں مارے گئے عامر حنظلہ کے کنبہ کو بہار شیعہ وقف بورڈ پٹنہ میں دے گا زمین

بہار شیعہ وقف بورڈ نے مقتول کے اہل خانہ کو زمین دینے کا فیصلہ کیا ہے ۔ پٹنہ کی چاند کالونی میں گھر بنانے کے لئے زمین دی جائے گی ۔

  • Share this:
آر جے ڈی کے بہار بند میں مارے گئے عامر حنظلہ کے کنبہ کو بہار شیعہ وقف بورڈ پٹنہ میں دے گا زمین
آر جے ڈی کے بہار بند میں مارے گئے عامر حنظلہ کے کنبہ کو شیعہ وقف بورڈ پٹنہ میں دے گا زمین

کسی پر امن احتجاج میں نوجوان لڑکے کی موت کا اثر کتنا گہرا ہوتا ہے یہ کوئی عامر حنظلہ کے اہل خانہ سے پوچھے۔ سی اے اے کے خلاف آر جے ڈی کی کال پر  21  دسمبر کو بہار بند بلایا گیا تھا۔ پھلواری شریف میں دو فرقہ میں تناؤ ہوگیا ، جس میں سرپشند عناصر نے عامر حنظلہ کو موت کے گھاٹ اتار دیا ۔ تقریبا ایک ہفتہ  بعد اس کی لاش ملی اور مقتول کے اہل خانہ نے بغیر کسی احتجاج کے عامر کی تدفین کردی ۔ اس امید پر کی ایک نہ ایک دن انصاف ضرور ملےگا ۔


سیاسی ، سماجی اور مذہبی تنظیموں کے دباؤ پر پولیس نے کارروائی کی اور سرپشندوں کو گرفتار کیا گیا ۔ عامر حنظلہ اپنے گھر کا واحد ایسا چراغ تھا ، جس کی محنت اور مزدوری سے گھر کا چولہا روشن ہوتا تھا ۔ حنظلہ کی موت کے بعد اس کا گھر صدمہ میں تو تھا ہی ، اب مسئلہ گھر کی گاڑی کو چلانا تھا ، لیکن مقتول کا اہل خانہ آرجے ڈی کے مدد کا انتظار کرتا رہا ، لیکن آر جے ڈی کے دفتر سے آر جے ڈی کی گاڑی تنویر حسن کے قیادت میں مقتول کے گھر پہنچی اور ایک لاکھ روپے دے کر اپنی ذمہ داری پوری کرلی ۔ مقتول کے اہل خانہ کو تیجسوی یادو کا انتظار تھا ، لیکن تیجسوی کو مقتول کے اہل خانہ سے ملنے کا وقت نہیں ملا ۔


حکومت کی جانب سے عامر حنظلہ کے اہل خانہ کو پانچ لاکھ روپے معاوضہ دیا گیا ۔ وہ رقم بینک میں تین سالوں کے لئے لوک کردی گئی ہے ، جو تین سال بعد عامر کے والد سہیل احمد کو ملےگی ۔ اس درمیان کئی سیاسی لیڈر ان کے گھر پہنچے اور تھوڑی بہت مدد کی ۔ جےڈی یو ایم ایل سی خالد انور نے مقتول کے اہل خانہ کو ایک لاکھ روپے کی مدد کی ۔ لیکن سب سے بڑا سوال یہ تھا کی سہیل احمد کرائے کے مکان میں رہتے ہیں اور ہر مہینہ کرایہ دینا ان کے لئے ایک دشوار کن مرحلہ تھا۔




نتیجہ کے طور پر بہار شیعہ وقف بورڈ نے مقتول کے اہل خانہ کو زمین دینے کا فیصلہ کیا ہے ۔ پٹنہ کی چاند کالونی میں گھر بنانے کے لئے زمین دی جائے گی ۔ وقف بورڈ نے اعلان کیا ہے کہ گھر بنانے میں بھی بورڈ پورا تعاون کرے گا۔ شیعہ وقف بورڈ کے چیئرمین ارشاد علی آزاد نے اس موقع پر آرجےڈی کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا ۔ ارشاد علی نے کہا کہ مسلمانوں کی مسیحائی کا دعویٰ کرنے والی پارٹی اپنے ہی پروگرام میں مر جانے والوں کی خبر نہیں لیتی ہے ۔ ارشاد نے کہا کہ اب تک تیجسوی مقتول کے اہل خانہ سے ملاقات نہیں کئے ہیں ، یہ اس بات کی طرف اشارہ کرتا ہے کہ ان کو مسلمانوں کی کتنی فکر ہے ۔

تیجسوی پر ارشاد علی آزاد نے یہ بھی سوال کھڑا کیا کہ انہیں اور ان کی پارٹی کو صرف مسلمانوں کے ووٹ کی فکر رہتی ہے ، لیکن مسلمانوں کے فلاح اور ان کی مدد آرجےڈی کے ترجیحات میں کبھی بھی شامل نہیں رہی ہے ۔ اگر انہیں اپنے ووٹ دینے والوں کی فکر ہوتی تو تیجسوی کی گاڑی عامر حنظلہ کے گھر ضرور پہنچتی ، لیکن انہیں ان سب باتوں سے کوئی واسطہ نہیں ہے اور نہ ہی کسی کے آنسو پوچھنے وہ جانا پسند کرتے ہیں ۔
First published: Feb 10, 2020 09:48 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading