ہوم » نیوز » وطن نامہ

چار سال میں اپوزیشن کی ایک بھی سیٹ نہیں جیت پائی بی جے پی !۔

کیرانہ اور بھنڈارا - گونڈیا سے بی جے پی کو ایک مرتبہ پھر بری خبر ملی ہے۔ حالانکہ پال گھر کی جت نے اسے تھوڑی راحت ضرور دی ہوگی ۔

  • Share this:
چار سال میں اپوزیشن کی ایک بھی سیٹ نہیں جیت پائی بی جے پی !۔
وزیر اعظم مودی ۔ فائل فوٹو ۔

کیرانہ اور بھنڈارا - گونڈیا سے بی جے پی کو ایک مرتبہ پھر بری خبر ملی ہے۔ حالانکہ پال گھر کی جت نے اسے تھوڑی راحت ضرور دی ہوگی ۔ پہلے راجستھان میں اجمیر اور الور پھر میں یوپی گورکھپور اور پھولپور بی جے پی کیلئے ضمنی انتخابات کے نتائج شکست ہی لے کر آرہے ہیں ۔ اعداد وشمار پر نظر ڈالیں تو بی جے پی نے 2014 کے لوک سبھا انتخابات کے بعد سے ایک بھی اپوزیشن کی لوک سبھا سیٹ نہیں جیتی ہے جبکہ کیرانہ کیرانہ اور بھنڈا-گوندیا کو ملا کر 8 سیٹیں گنوا چکی ہیں۔

دراصل بی جےپی نے لوک سبھ ا ضمنی الیکشن میں پال گھر سمیت جتنی بھی سیٹیں جیتی ہیں وہ پہلے بھی اس کے ہی قبضہ میں تھیں ۔یعنی 2014 میں وہ سیٹیں بی جے پی نے ہی جیتی تھیں اور اب اس پر اپنا قبضہ برقرار رکھ سکی ہے ۔ ان سیٹوں میں مہاراشٹر کی بیڑ ، گجرات کی وڈوڈرا ، مدھیہ پردیش کی شہڈول ، آسام کی لکھیم پور اور اب پال گھر بھی شمل ہے ۔ ان سبھی سیٹوں پر بی جے پی نے ہی 2014 میں جیت حاصل کی تھی اور بعد میں بھی ضمنی الیکشن میں اسے ہی کامیابی ملی ہے۔

ادھر کیرانہ، بھنڈارا-گونڈیا کےعلاوہ مدھیہ پردیش کی رتلام ، پنجاب کی گرداس پور ، راجستھان کی الور اور اجمیر ، اترپردیش کی گورکھپور اور پھولپور وہ آٹھ سیٹیں ہیں ، جو بی جے پی نے 2014 میں جیتی تھیں ، لیکن ضمنی الیکشن میں ایس پی ، آر ایل ڈی ، کانگریس کے ہاتھوں گنواد یں۔ بی جے پی کے ساتھ اتحاد کا اثر پی ڈی پی پر بھی ہوا اور اس نے سری نگر سیٹ نیشنل کانفرنس کے ہاتھوں گنوا دی۔

First published: May 31, 2018 07:50 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading