உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Madhya Pradesh BJP: بی جے پی نے ’سنکلپ پتر‘ میں گئوشالہ اورمیٹ مارکیٹ کھولنےکا کیا عہد

    بی جے پی نے ’سنکلپ پتر‘ میں گئوشالہ اورمیٹ مارکیٹ کھولنےکا کیا عہد

    بی جے پی نے ’سنکلپ پتر‘ میں گئوشالہ اورمیٹ مارکیٹ کھولنےکا کیا عہد

    مدھیہ پردیش کے بلدیاتی انتخابات میں پارٹیوں کے ذریعہ منشور جاری کرنے کا سلسلہ جاری ہے۔ کانگریس کے بعد بی جے پی نے اپنا منشور ’سنکلپ پتر‘ کے نام سے جاری کیا ہے۔ بی جے پی کے ذریعہ یوں تو گوشت کی دکانوں کی مخالفت کی جاتی تھی، مگر سنکلپ پتر میں بی جے پی کے ذریعہ کورڈ میٹ مارکیٹ قائم کرنے کا عہدکیا گیا ہے۔

    • Share this:
    بھوپال: مدھیہ پردیش کے بلدیاتی انتخابات میں پارٹیوں کے ذریعہ منشور جاری کرنے کا سلسلہ جاری ہے۔ کانگریس کے بعد بی جے پی نے اپنا منشور ’سنکلپ پتر‘ کے نام سے جاری کیا ہے۔ بی جے پی کے ذریعہ یوں تو گوشت کی دکانوں کی مخالفت کی جاتی تھی، مگر سنکلپ پتر میں بی جے پی کے ذریعہ کورڈ میٹ مارکیٹ قائم کرنے کا عہدکیا گیا ہے۔ اسی کے ساتھ سنکلپ پتر میں گئو شالہ اور گئو وشرام گھاٹ قائم کرنےکی بھی بات کہی گئی ہے۔

    وہیں بی جے پی کے سنکلپ پترکو کانگریس نے جھوٹ کا پلندہ قرار دیا ہے تو جمیعۃ علما نے اسے ناکافی مانتے ہوئے سبھی طبقات کا خیال رکھنے اور میٹ مارکیٹ میں ذبیحہ کا انتظام کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ مدھیہ پردیش میں دو سال کی تاخیر سے سپریم کورٹ کے احکام کے بعد دو مرحلوں میں بلدیاتی انتخابات جاری ہیں۔ پہلے مرحلے کا شور پیر کے روز شام کے وقت تھم گیا ہے، جس کے لئے 6 جولائی کو ووٹنگ ہوگی جبکہ دوسرے مرحلہ کی ووٹنگ 13 جولائی کو ہوگی۔

    کانگریس کے ذریعہ جو منشور جاری کیا گیا، اس میں وہ روایتی باتیں کہی گئی ہیں، جو اس کے سابقہ منشور میں بھی رہی ہیں۔ البتہ ٹیکس کو نصف کرنے کا وعدہ کیا گیا ہے، لیکن بی جے پی کے ’سنکلپ پتر‘ میں گائے اور گئو شالہ پر خصوصی فوکس کرنے کے ساتھ میٹ مارکیٹ قائم کرنے کی بات زور و شورسے کی گئی ہے۔ جبکہ مسلم تنظیمیں بی جے پی کے منشور کو حساس مسائل کو چھیڑنے والا بتارہی ہیں۔ ان کا ماننا ہے کہ میٹ مارکیٹ کھولنے کا معاملہ بڑا نازک ہے اور اس میں سبھی مذاہب کے لوگوں کی رائے لینا اور سبھی کے جذبات کا خیال رکھنا ضروری ہے۔

    ایم پی جمعیت علما کے صدر نے کہا کہ اگر بلدیہ میں بی جے پی کا میئر آتا ہے تو اسے اس کا نفاذ کرنے سے قبل سبھی مذاہب کے لوگوں سے مشورہ کرنا ضروری ہے۔
    ایم پی جمعیت علما کے صدر نے کہا کہ اگر بلدیہ میں بی جے پی کا میئر آتا ہے تو اسے اس کا نفاذ کرنے سے قبل سبھی مذاہب کے لوگوں سے مشورہ کرنا ضروری ہے۔


    بی جے پی سنکلپ پتر اور بلدیاتی انتخابات کمیٹی کے کنوینر اوما شنکر گپتا کہتے ہیں کہ بی جے پی کا سنکلپ پتر عوام کی بنیادی ضرورت کو سامنے رکھ کر بنایا گیا ہے۔ سابقہ انتخابات میں ہم نے جو وعدہ کیا تھا، اسے پورا کیا اور جو رہ گئے ہیں اس کو ہم نے دہرایا نہیں ہے۔ ہم نے کانگریس کی طرح جھوٹے وعدے نہیں کئے ہیں، ہم جو کہتے ہیں اس پر عمل کرتے ہیں۔ بھوپال میں راجہ بھوج سنگھرالیہ، رانی  کملا پتی کے محل کی تزئین کاری، بھوپال میں گئو وشرام گھاٹ اور گئو شالہ کا قیام، نجی کالونیوں میں پانی کنکشن، کوورڈ میٹ مارکیٹ، نو بہار سبزی منڈی کی زمین پر نئی تعمیر اور یہاں پر پھول، پھل اورسبزی فروخت کرنے کا انتظام وغیرہ شامل ہیں۔ بھوپال میں میٹ مارکیٹ تو ہیں، لیکن یہ سب کھلے میں ہیں اس لئے ہماری کوشش کوورڈ میٹ مارکیٹ بنانے کی ہے۔

    یہ بھی پڑھیں۔

    سماجوادی پارٹی کے ریاستی صدر اور رکن اسمبلی ابو عاصم اعظمی کو جان سے مارنے کی دھمکی، حکومت سے کیا یہ بڑا مطالبہ
    وہیں کانگریس ترجمان بھوپیندر گپتا کا کہنا ہے کہ پچلھے دس سالوں سے بھوپال میں بی جے پی کا میئر رہا ہے اور اب تک بھوپال کے لوگوں کو پانی کی سپلائی یقینی نہیں بنائی جا سکی ہے۔ جھوٹ بولنا اور باربار بولنا بی جے پی کا ایجنڈا ہے۔ بلدیہ اور صوبہ میں حکومت کے باوجود عوام کی بنیادی ضرورت سے انحراف کرنا بی جے پی کادلچسپ مشغلہ ہے۔

    اس تعلق سے جب نیوز ایٹین اردو نے ایم پی جمعیت علما کے صدر حاجی محمد ہارون سے بات کی تو انہوں نے کہا کہ بی جے پی نے گائے اور میٹ کے دو حساس معاملوں کو اپنے ’سنکلپ پتر‘ میں جگہ دی ہے۔ گائے کی خرید و فروخت کو لے کر ملک میں کیا کیا ہو رہا ہے اور ہمارا مطالبہ ہے کہ سڑکوں پر جو گائیں ماری ماری پھر رہی ہیں اور جو لوگ گئو شالہ کے نام پر موٹی موٹی رقم حکومت سے لے کربدعنوانی کر رہے ہیں، سینکڑوں گایوں کی موت ہوجاتی ہے اور حکومت خاموش رہتی ہے اس کے لئے نیشنل پالیسی بنانے کی ضرورت ہے۔ اسی طرح کوورڈ میٹ مارکیٹ قائم کرنے کی بات کہی گئی ہے۔ پچیس لاکھ سے زیادہ کی آبادی میں ایک کوورڈ میٹ مارکیٹ ناکافی ہے اور دوسری بات یہ ہے کہ بہت سے لوگ ذبیحہ کھاتے ہیں اور بہت سے لوگ جھٹکا کھاتے ہیں، میٹ مارکیٹ میں ان جانوروں کا گوشت بھی فروخت کیا جائے گا، جس کا نام لینا بھی مسلمان پسند نہیں کرتے ہیں۔ ایسی ضرورت اقلیتی طبقہ کے لئے کوورڈ میٹ مارکیٹ میں کتنی جگہ ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ اگر بلدیہ میں بی جے پی کا میئر آتا ہے تو اسے اس کا نفاذ کرنے سے قبل سبھی مذاہب کے لوگوں سے مشورہ کرنا ضروری ہے۔
    Published by:Nisar Ahmad
    First published: