بی جے پی لیڈرکا چھلکا درد، کہا- ٹکٹ نہیں ملا تو ختم ہوجائے گا بیٹے کا کیریئر!۔

گوپال بھارگونےکہا کہ اب بیٹے کے کیریئرکےلئے کچھ نہیں بچا ہے۔ حالانکہ انہوں نے یہ بھی کہا کہ پارٹی کا فیصلہ سب سے اوپرہوگا۔

Mar 23, 2019 02:53 PM IST | Updated on: Mar 23, 2019 02:55 PM IST
بی جے پی لیڈرکا چھلکا درد، کہا- ٹکٹ نہیں ملا تو ختم ہوجائے گا بیٹے کا کیریئر!۔

بی جے پی لیڈر گوپال بھارگو: تصویر: ٹوئٹر

مدھیہ پردیش اسمبلی انتخابات میں اپوزیشن لیڈرگوپال بھارگوکے بیٹے ابھیشیک بھارگونے سوشل میڈیا کےذریعہ لوک سبھا الیکشن کے لئے اپنی دعویداری واپس لی توگوپال بھارگوکا درد چھلک آیا۔ گوپال بھارگونے کہا کہ اب بیٹے کے کیریئرکےلئے کچھ نہیں بچا ہے۔ حالانکہ انہوں نے یہ بھی کہا کہ پارٹی کا فیصلہ سب سے اوپرہوگا۔

دراصل وزیراعظم نریندرمودی کے خاندان پرستی کولے کرکئے گئے تبصرہ کے بعد ابھیشیک بھارگونے لوک سبھا الیکشن میں ٹکٹ کے لئے اپنی دعویداری واپس لے لی۔ ابھیشیک نے فیس بک پر لکھا 'عزت مآب مودی جی اوراڈوانی جی کے خاندان پرستی کے خلاف دیئے گئے بیان کے بعد خود کومجرم محسوس کررہا ہوں۔ اتنے بڑے عزم کولے کرپارٹی قومی مفاد میں ایک جنگ لڑرہی ہے اورصرف اپنے ذاتی مفاد کے لئے اس عزم کی کامیابی میں رکاوٹ بنیں، یہ بی جے پی کا کارکن ہونے کے ناطے میرا ضمیرمجھے اجازت نہیں دیتا'۔

Loading...

اس کے بعد نیوز 18 سے بات چیت میں گوپال بھارگوکا درد چھلکا۔ انہوں نے کہا کہ میرا بیٹا کئی سال سے پارٹی کے لئے کام کرہا ہے، لیکن اب بیٹے کے کیریئرکے لئے کچھ نہیں بچا ہے۔ گوپال بھارگونے یہ بھی کہا کہ سیاست میں خاندان کے کسی ایک ہی شخص کورہنا چاہئے اورپارٹی کا جوبھی فیصلہ ہوگا، وہ قابل قبول ہوگا۔

واضح رہے کہ ایسی خبریں ہیں کہ بندیل کھنڈ کی تینوں سیٹوں سے ابھیشیک بھارگو کا نام سینٹرل ا لیکشن کمیٹی کو بھیجا گیا ہے اورٹکٹ کی تقسیم کے لئے الیکشن کمیٹی میں غوروخوض چل رہا ہے۔ اسی درمیان ابھیشیک بھارگوکا یہ بیان آگیا ہے۔ وہیں ابھیشیک بھارگو کے اس بیان کے بعد کانگریس کا بھی ردعمل سامنے آیا ہے۔ کانگریس کے سینئرلیڈرسریش پچوری کا ماننا ہے کہ ٹکٹ مانگنے کا حق سب کوہے۔ ابھیشیک کا ٹکٹ مانگنا کوئی قابل اعتراض نہیں۔ حالانکہ انہوں نے کہا کہ اب اس کافیصلہ بی جے پی کو کرنا ہے۔

 

Loading...