ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

تلنگانہ :بی جے پی کولگ سکتاہے بڑاجھٹکا،پارٹی کےاس رکن پارلیمنٹ کوقراردیاجاسکتاہے نااہل

ڈی ارویند پر انتخابی حلف نامہ میں فرضی تعلیمی صداقت نامہ داخل کرکے الیکشن کمیشن کوگمراہ کرنے کا الزام ہے ۔ ڈی اروند نے اپنے انتخابی حلف نامہ میں پولیٹیکل سائنس میں پوسٹ گریجویٹ لکھا ہے۔

  • Share this:
تلنگانہ :بی جے پی کولگ سکتاہے بڑاجھٹکا،پارٹی کےاس رکن پارلیمنٹ کوقراردیاجاسکتاہے نااہل
بی جے پی دھیرے دھیرے بڑھا رہی ہے اپنی طاقت

تلنگانہ کے لوک سبھا حلقہ نظام آباد ۔کے رکن۔ اور جےپی لیڈر۔ ڈی اروند نا اہل قرار دئے جاسکتے ہیں۔ ڈی ارویند پر انتخابی حلف نامہ میں فرضی تعلیمی صداقت نامہ داخل کرکے الیکشن کمیشن کوگمراہ کرنے کا الزام ہے ۔ ڈی اروند نے اپنے انتخابی حلف نامہ میں پولیٹیکل سائنس میں پوسٹ گریجویٹ لکھا ہے۔اروند نے جناردھن رائے نگر راجستھان ودیاپیٹھ ، سے ایم اے فاصلاتی تعلیم کے ذریعہ ایم اے کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔ ڈی اروند نے اقرار کیا تھا کہ انہوں نے یہ کورس2018میں کامیاب کیا ہے ۔ تاہم ٹی آر ایس لیڈر ایم کرشانک کی داخل کردہ ایک آر ٹی آئی درخواست پر یہ انکشاف ہوا ہے کہ ڈی اروند نے ایم اے ۔ پولیٹیکل سائنس۔ کی ڈگری اس یونیورسٹی سے حاصل ہی نہیں کی ہے ۔


تلنگانہ کے لوک سبھا حلقہ نظام آباد ۔کے رکن۔ اور جےپی لیڈر۔ ڈی اروند نا اہل قرار دئے جاسکتے ہیں
تلنگانہ کے لوک سبھا حلقہ نظام آباد ۔کے رکن۔ اور جےپی لیڈر۔ ڈی اروند نا اہل قرار دئے جاسکتے ہیں


اس معاملے کو ٹی آر ایس لیڈر وائی ستیش ریڈی نے الیکشن کمیشن اور وزیر اعظم نریندر مودی کے علم میں لایا اور الیکشن کمیشن سے بی جے پی رکن پارلیمنٹ کے خلاف کارروائی کرنے کی اپیل کی ہے۔ ستیش ریڈی نے کہا کہ ڈی اروند پارلیمنٹ میں بیٹھنے کے اہل نہیں ہیں۔ انہیں نا اہل قرار دیا جانا چاہئے۔ ڈی اروند نے ، حالیہ لوک سبھا الیکشن میں ریاست تلنگانہ میں حلقہ لوک سبھا نظام آباد سے وزیراعلیٰ کے چندر شیکھر راؤ کی دختر، کویتا کو شکست دی ہے۔ اتناہی وہ وقفہ وقفہ متنازعہ بیانات بھی دیتے رہتے ہیں۔ ڈی اروند نے مجلس اتحادالمسلمین اور مسلمانوں کے خلاف متنازعہ بیانات دے کر سستی شہرت حاصل کرنے کی کوشش کی ہے۔ ڈی اروند نے انتخابی مہم کے دوران بھی مسلمانوں کے خلاف شرانگیز بیانات دیئے تھے۔


یاد رہے کہ حلقہ لوک سبھا نظام آباد سے ریکارڈ 186 امیدواروں نے مقابلہ کیا تھا جس میں سے 179 ناراض کسان تھے جنہوں نے اس حلقہ کی سابق رکن پارلیمنٹ کے کویتا پر ہلدی بورڈ کے قیام کا وعدہ پورا نہ کرنے کا الزام عائد کیا تھا ۔
First published: Apr 12, 2020 08:43 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading