بی جے پی ممبر اسمبلی پرہلاد لودھی نااہل قرار، مدھیہ پردیش میں شروع ہوئی سیاست

اسمبلی اسپیکر این پی پرجا پتی نے اس سلسلے میں یہاں میڈیا کو بتایا کہ سپریم کورٹ کے حکم کے تناظر میں یہ قدم اٹھایا گیا ہے اور سیٹ خالی قرار دے دی گئی ہے۔

Nov 03, 2019 12:06 AM IST | Updated on: Nov 03, 2019 12:07 AM IST
بی جے پی ممبر اسمبلی پرہلاد لودھی نااہل قرار، مدھیہ پردیش میں شروع ہوئی سیاست

پوئی سے بی جے پی ممبر اسمبلی پرہلاد لودھی نااہل قرار

بھوپال: مدھیہ پردیش کے پوئی اسمبلی حلقہ سے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) رکن اسمبلی پرہلاد لودھی کو ایک مجرمانہ معاملے میں دو سال کی سزا سنائے جانے کے بعد آج اسمبلی نے انہیں نااہل قراردیتے ہوئے یہ سیٹ خالی ہونے کا اعلان کردیا۔ اسمبلی اسپیکر این پی پرجا پتی نےاس سلسلے میں یہاں میڈیا کو بتایا کہ سپریم کورٹ کے حکم کے تناظر میں یہ قدم اٹھایا گیا ہےاورسیٹ خالی قرار دے دی گئی ہے۔ پنّا ضلع کے پوئی ممبراسمبلی پرہلاد سنگھ لودھی کوبھوپال کی خصوصی عدالت نےدو دن پہلے ہی ایک مجرمانہ معاملے میں دوسال کی سزا سنائی ہے۔

اسمبلی اسپیکرپرجاپتی نے ایک پروگرام کے دوران میڈیا کے سوال کے جواب میں کہا کہ ممبر اسمبلی کے خلاف عدالت کا ایک فیصلہ آیا ہے، جس میں انہیں دو سال کی سزا ہوئی ہے۔ سپریم کورٹ کے قوانین ہیں۔ اس کے مطابق ممبر اسمبلی پر کارروائی کی گئی ہے۔ فیصلے کے سلسلے میں تصدیق نامہ موصول ہونے پر اسمبلی نے آج رکن اسمبلی کو نااہل قرار دے کرسیٹ خالی قراردی ہے۔ اس سلسلےمیں گزٹ میں بھی شائع کیا گیا ہےاورالیکشن کمیشن کو بھی اس کی اطلاع دے دی گئی ہے۔

سابق وزیراعلیٰ شیوراج سنگھ چوہان اور اپوزیشن لیڈر گوپال بھارگو نے بھی پرہلاد لودھی کی رکنیت ختم کرنے پرناراضگی کا اظہار کیا۔ سابق وزیراعلیٰ شیوراج سنگھ چوہان اور اپوزیشن لیڈر گوپال بھارگو نے بھی پرہلاد لودھی کی رکنیت ختم کرنے پرناراضگی کا اظہار کیا۔

Loading...

گزشتہ برس کے اسمبلی انتخابات میں پنّا ضلع کے پوئی سے پرہلاد لودھی بی جے پی کے ٹکٹ پررکن اسمبلی منتخب ہوئے تھے۔ بھوپال کی ایک خصوصی عدالت نے پنّا ضلع کے تقریباً پانچ برس پرانے اس معاملے میں جس میں ریپورا کے ایک افسر کے ساتھ مارپیٹ کی گئی تھی ، دو دن قبل فیصلہ سناکر لودھی سمیت تقریباً ایک درجن ملزمین کو دو دو سال قید کی سزا سنائی ہے۔

استغاثہ کے مطابق متعلقہ افسر نے غیر قانونی طور پر لے جائی جا رہی ریت سے بھری ٹریکٹر ٹرالی کو روک لیا تھا۔ اس کے بعد لودھی اور ان کے ساتھیوں نے بیچ سڑک پرافسرکو روک کر ان کے ساتھ مارپیٹ کی تھی۔ دوسری جانب پارلیمانی امورکےماہراورمدھیہ پردیش اسمبلی کے سابق چیف سیکرٹری بھگوان دیو اسراني نے بتایا کہ نااہل قرار دیا گیا رکن اسمبلی اب چھ برسوں تک کوئی انتخاب بھی نہیں لڑ پائے گا۔ مسٹر اسراني نے کہا کہ جہاں تک انہیں یاد ہے، اس طرح کے معاملات میں عدالت سے راحت ملنے کا کوئی واقعہ انہیں یاد نہیں ہے۔

Loading...