میزورم الیکشن کے بعد "کانگریس مکت" ہوجائے گا شمال مشرق: امت شاہ کا دعویٰ

بی جے پی کے قومی صدر امت شاہ نے آئندہ اسمبلی الیکشن کو لے کر کانگریس پارٹی پر "نشانہ سادھا ہے۔ شاہ نے کہا کہ میزورم اسمبلی الیکشن کے بعد شمال مشرق "کانگریس مکت" ہوجائے گا۔

May 20, 2018 11:47 PM IST | Updated on: May 20, 2018 11:47 PM IST
میزورم الیکشن کے بعد

بی جے پی صدر امت شاہ ۔ فائل فوٹو : پی ٹی آئی ۔

نئی دہلی: کرناٹک میں ہاتھ آئی اقتدار گنوانے کے بعد بی جے پی اب سال کے آخر کے ہونے والے چار ریاستوں کو اسمبلی الیکشن پر فوکس کررہی ہے۔ سال کے آخر میں میزورم، راجستھان، مدھیہ پردیش اور چھتیس گڑھ میں الیکشن ہونے والے ہیں۔

بی جے پی کے قومی صدر امت شاہ نے آئندہ اسمبلی الیکشن کو لے کر کانگریس پارٹی پر "نشانہ سادھا ہے۔ شاہ نے کہا کہ میزورم اسمبلی الیکشن کے بعد شمال مشرق  "کانگریس مکت" ہوجائے گا۔

Loading...

امت شاہ نے اتوار کو یہ باتیں آسام کی راجدھانی گوہاٹی میں کہی۔ وہ بی جے پی کی پالیسی سیاسی منچ، شمال مشرقی جمہوری اتحاد کے تیسرے اجلاس کو خطاب کررہے تھے۔ شاہ نے کہا کہ شمال مشرق میں ہم نے پہلے آسام میں الیکشن جیتا، اس کے بعد منی پور اور اس کے بعد تریپورہ میں ہمیں لوگوں نے زبردست مینڈیٹ دیا۔ اب میزورم کی باری ہے۔ اس کے بعد شمال مشرق سے کانگریس کا نام ونشان مٹ جائے گا۔

واضح رہے کہ 40 سیٹوں والے میزورم اسمبلی کا دوراقتدار 15 دسمبر 2018 کو ختم ہورہا ہے۔ الیکشن اس کے پہلے کرائے جائیں گے۔

امت شاہ نے کہا کہ ناگالینڈ اور میگھالیہ میں بی جے پی کی حمایت سے نیڈا اقتدار میں ہے۔ الیکشن کے بعد میزورم بھی کانگریس مکت ہوجائے گا۔ اس سال کے آخر میں میزروم میں الیکشن کے بعد شمال مشرق کے سبھی 8 وزرا یہاں ایک ساتھ بیٹھیں ہوں گے۔

ان ریاستوں میں کانگریس کے دوراقتدار پر نشانہ سادھتے ہوئے بی جے پی نے کہا کہ سبھی کانگریس وزرائے اعلیٰ کو دہلی، ممبئی، بنگلور اور دیگر شہروں میں بنگلے ہیں۔ پیسہ کہاں سے آرہا ہے؟ غریبوں کی ترقی کے فنڈز سے پیسہ لیا گیا۔

امت شاہ نے کہا کہ بی جے پی حکومت نے یقینی کیا کہ بی جے پی حکومت نے یقینی بنایا کہ مرکز کی طرف سے جاری کیا گیا ایک ایک روپیہ لوگوں تک پہنچے۔ اس کے لئے ہماری حکومت کام کررہی ہے، آگے بھی کرتی رہے گی۔

 

Loading...