உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کیا پنجاب میں آگے بڑھے گی الیکشن کی تاریخ؟ وزیر اعلیٰ چنی کے بعد بی جے پی، اکالی دل نے الیکشن کمیشن سے کیا یہ مطالبہ

    مرکزی الیکشن کمیشن۔ فائل فوٹو

    مرکزی الیکشن کمیشن۔ فائل فوٹو

    Punjab Assembly Election: پنجاب کے وزیر اعلیٰ چرنجیت سنگھ چنی نے 13 جنوری کو الیکشن کمیشن سے ووٹنگ کی تاریخ 6 دن کے لئے آگے بڑھانے کی اپیل کی تھی تاکہ شیڈول کاسٹ کے 20 لاکھ ریاستی اسمبلی الیکشن میں اپنے حق رائے دہی کا استعمال کرسکیں۔

    • Share this:
      چندی گڑھ: بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) اور اس کی اتحادی شرومنی اکالی دل (یونائیٹیڈ)  نے الیکشن کمیشن سے گرو روی داس جینتی کے پیش نظر پنجاب میں 14 فروری کو ہونے والے اسمبلی انتخابات کی تاریخ آگے بڑھانے کی اپیل کی ہے۔ گرو روی داس کی جینتی 16 فروری کو ہے۔

      بی جے پی کی پنجاب یونٹ کے جنرل سکریٹری سبھاش شرما نے اتوار کو چیف الیکشن کمشنر کو لکھے ایک خط میں الیکشن کمیشن کی تاریخ آگے بڑھانے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا، ’ریاست میں شیڈول کاسٹ (ایس سی) برادری سمیت گرو روی داس جی کے شاگروں کی اچھی خاصی آبادی ہے، جو پنجاب کی آبادی کا تقریباً 32 ہے۔

      سبھاش شرما نے لکھا ہے، ’اس مبارک موقع پر لاکھوں عقیدت مند اترپردیش کے بنارس میں گرو پرو منانے کے لئے جائیں گے۔ اس وجہ سے ان کے لئے ووٹنگ عمل میں حصہ لینا ممکن نہیں ہوگا۔ اس لئے آپ سبھی سے گزارش ہے کہ ووٹنگ کی تاریخ کو آگے بڑھایا جائے تاکہ پنجاب کے یہ لوگ ووٹنگ میں حصہ لے سکیں۔

      وزیر اعلیٰ چنی الیکشن کمیشن سے کرچکے ہیں تاریخ بڑھانے کی اپیل

      شرومنی اکالی دل (یونائیٹیڈ) کے سربراہ سکھدیو سنگھ ڈھینڈسا نے بھی الیکشن کمیشن کو لکھے خط میں ووٹنگ کی تاریخ آگے بڑھانے کا مطالبہ کیا۔ وزیر اعلیٰ چرنجیت سنگھ چنی نے 13 جنوری کو الیکشن کمیشن سے ووٹنگ کی تاریخ 6 دن کے لئے آگے بڑھانے کی اپیل کی تھی تاکہ شیڈول کاسٹ کے 20 لاکھ ریاستی اسمبلی الیکشن میں اپنے حق رائے دہی کا استعمال کرسکیں۔

      شیڈول کاسٹ (ایس سی) طبقے سے آنے والے وزیر اعلیٰ چرنجیت سنگھ چنی نے کہا کہ 10 سے 16 فروری تک ریاست سے بڑی تعداد میں شیڈول کاسٹ کے عقیدتمندوں کے اترپردیش کے بنارس جانے کا امکان ہے۔ ایسے میں اس طبقے کے کئی لوگ ریاستی اسمبلی انتخابات میں ووٹ نہیں ڈال سکیں گے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: