ہوم » نیوز » وطن نامہ

کالاہرن شکارمعاملہ:سلمان خان جودھ پورعدالت سے ملی راحت ، حاضری سے ملی چھوٹ

کالاہرن شکارمعاملےمیں جودھ پورکورٹ نے آج سماعت کی ۔ ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج چندرکمارسونجیرہ نے اس معاملے کی سماعت کی۔سلمان کوآج عدالت میں پیش ہونا تھا۔

  • Share this:
کالاہرن شکارمعاملہ:سلمان خان جودھ پورعدالت سے ملی راحت ، حاضری سے ملی چھوٹ
سلمان خان ۔ فائل فوٹو

کالاہرن شکارمعاملےمیں جودھ پورکورٹ نے آج سماعت کی ۔ ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج چندرکمارسونجیرہ نے اس معاملے کی سماعت کی۔سلمان کوآج عدالت میں پیش ہونا تھا۔لیکن ان کے وکیل نے عدالت میں حاضری سے چھوٹ کی درخواست دینے کی اپیل کی ہے۔اس پرعدالت نے سلمان کی درخواست منظورکرتے ہوئے انہیں عدالت میں حاضری سے چھوٹ دیدی۔ اب اس کیس میں اگلی سماعت 19 دسمبر کو ہونی ہے۔سلمان خان کے وکیل کے ذریعہ پیش کردہ درخواست میں فلموں کی شوٹنگ میں ان کی شرکت کا حوالہ دیتے ہوئے انہیں عدالت میں حاضرہونے سے مستثنیٰ قراردینے کی اپیل کی گئی۔

سپراسٹار سلمان خان کے خلاف چل رہے تقریباً 21 سال پرانے کالے ہرن کے شکار کے معاملہ میں جودھپور کی سی جے ایم عدالت نے انہیں قصوروار قرار دے دیا ہے۔ قبل ازیں جودھپور کے بھواد اور گھوڑا فارم میں چنکارا شکار کے مختلف معاملات میں انہیں 5 سال اور ایک سال کی سزا سنائی گئی تھی تاہم وہ ہائی کورٹ سے بری ہو گئے تھے۔

راجستھان حکومت نے دونوں ہی مقدمات میں سپریم کورٹ میں ہائی کورٹ کے فیصلے کے خلاف اپیل کی ہے۔ جبکہ آرمس ایکٹ کے معاملے میں بھی سلمان نچلی عدالت سے بری ہو چکے ہیں۔ اب ان کے خلاف محض دو کالے ہرنوں کے شکار کے معاملہ میں سزا کا اعلان ہونا ہے۔ یہ معاملہ گزشتہ 20 سالوں میں کس طرح آگے بڑھا آئیے جانتے ہیں:

پہلی گرفتاری

کالاہرن شکارمعاملے میں 2 اکتوبر 1998 کوسلمان خان کو پہلی بارگرفتارکیا گیاتھا۔اگلے دن، محکمہ جنگلات کے دفتر میں، تفتیشی افسران نے سلمان خان اور گواہوں کے بیانات قلمبند کرلئے۔ بیان ریکارڈ کرنے کا یہ سارا عمل کیمرے پر قید ہوگیا۔

کمرے سے پستول اور رائفل برآمد
پانچ دن جیل میں رہنے کے بعد، سلمان کو جودھ پور جیل سے 17 اکتوبر کو ضمانت پر رہا کیا گیا تھا۔ گرفتاری کے دوران پولیس نے سلمان کے کمرے سے ایک پستول اور رائفل برآمد کیا۔ ان ہتھیاروں کا لائسنس کی مدت ختم ہوگئی تھی۔ لہذا ، سلمان کے خلاف آرمس ایکٹ کے تحت چوتھا مقدمہ بھی درج کیا گیا۔ وائلڈ لائف ایکٹ کی دفعہ 149 کے تحت بھی ایک مقدمہ درج کیاگیا۔
زیادہ سے زیادہ 6 سال کی ہوسکتی سزا
سیاہ ہرنوں کے شکارپرزیادہ سے زیادہ 7 سال قید کی سزا ہوسکتی ہے۔ کچھ سال پہلے تک یہ سزا چھ سال تھی۔ عدالت بھی کیس کی نوعیت کے اعتبار سے سزا کی مدت میں اضافہ یا کمی کرسکتی ہے ۔ سلمان خان کا یہ کیس21 سال پرانا ہے ، اس صورت میں زیادہ سے زیادہ چھ سال قید کی ہوسکتی ہے ۔
First published: Sep 27, 2019 09:57 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading