உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بامبے ہائی کورٹ نے خارج کی نواب ملک اور انل دیشمکھ کی عرضی، MLC الیکشن میں نہیں ڈال پائیں گے ووٹ

    بامبے ہائی کورٹ نے مہاراشٹر کی مہا وکاس اگھاڑی حکومت میں وزیر نواب ملک اور سابق وزیر انل دیشمکھ کی 20 جون کو ایم ایل سی انتخابات میں ووٹ ڈالنے کی اجازت دینے کا مطالبہ کرنے والی عرضی خارج کردی ہے۔

    بامبے ہائی کورٹ نے مہاراشٹر کی مہا وکاس اگھاڑی حکومت میں وزیر نواب ملک اور سابق وزیر انل دیشمکھ کی 20 جون کو ایم ایل سی انتخابات میں ووٹ ڈالنے کی اجازت دینے کا مطالبہ کرنے والی عرضی خارج کردی ہے۔

    بامبے ہائی کورٹ نے مہاراشٹر کی مہا وکاس اگھاڑی حکومت میں وزیر نواب ملک اور سابق وزیر انل دیشمکھ کی 20 جون کو ایم ایل سی انتخابات میں ووٹ ڈالنے کی اجازت دینے کا مطالبہ کرنے والی عرضی خارج کردی ہے۔

    • Share this:
      ممبئی: بامبے ہائی کورٹ نے مہاراشٹر کی مہا وکاس اگھاڑی حکومت میں وزیر نواب ملک اور سابق وزیر انل دیشمکھ کی 20 جون کو ایم ایل سی انتخابات میں ووٹ ڈالنے کی اجازت دینے کا مطالبہ کرنے والی عرضی خارج کردی ہے۔ جیل میں بند دونوں لیڈر اب راجیہ سبھا کے بعد ایم ایل سی انتخابات میں بھی ووٹ نہیں ڈال پائیں گے۔

      جسٹس این جے جمادار نے انل دیشمکھ کی ضمانت عرضی میں ایک عبوری درخواست اور نواب ملک کے ذریعہ دائر کی گئی ایک نئی عرضی پر حکم جاری کیا، جس میں صرف پولیس سیکورٹی کا استعمال کرکے اپنا ووٹ ڈالنے کی اجازت مانگی گئی تھی۔

      عدالت کے فیصلے کے بعد وکیل اندر پال سنگھ نے کہا کہ عدالت کے فیصلے کا حکم ہاتھ میں آنے کے بعد وہ اس پر ردعمل ظاہر کریں گے۔ واضح رہے کہ راجیہ سبھا الیکشن میں ووٹنگ کا اختیار نہیں دیئے جانے کے بعد نواب ملک اور انل دیشمکھ نے ایم ایل سی انتخابات میں ووٹ دینے کے حق کو لے کر پھر سے بامبے ہائی کورٹ کا رخ کیا تھا۔ تاہم عدالت نے دوبارہ ان کی عرضی کو نامنظور کردیا اور انہیں ووٹ ڈالنے کی اجازت نہیں دی گئی۔

      نیشنلسٹ کانگریس پارٹی (این سی پی) کے دونوں لیڈر عدالتی حراست میں ہیں۔ نواب ملک اور انل دیشمکھ کے خلاف الگ الگ معاملوں میں انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ (ای ڈی) منی لانڈرنگ کے الزامات کی جانچ کر رہا ہے۔ جانچ ایجنسی نے عوامی نمائندگی ایکٹ کی دفعہ 62 (5) کے تحت بار کا حوالہ دیتے ہوئے انل دیشمکھ اور نواب ملک کی ان درخواستوں کی مخالفت کی تھی، جو جیل میں بند شخص کو الیکشن میں ووٹنگ کرنے سے روکتا ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: