உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    شادی کے لئے معشوقہ کو چھپرا سے دہلی بلایا، پھر دوستوں کے ساتھ مل کر اجتماعی آبروریزی کی

    شادی کے لئے معشوقہ کو چھپرا سے دہلی بلایا، پھر دوستوں کے ساتھ مل کر اجتماعی آبروریزی کی

    شادی کے لئے معشوقہ کو چھپرا سے دہلی بلایا، پھر دوستوں کے ساتھ مل کر اجتماعی آبروریزی کی

    Chapra Gang Rape: بہار کے چھپرا میں معاشقہ (Love Affair) میں گھر سے فرار ایک نابالغ لڑکی کے ساتھ دہلی میں اجتماعی آبروریزی (Gang Rape) کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ لڑکی کے عاشق نے پہلے اسے اغوا کیا اور دہلی لے گیا، جہاں اس کے دوستوں نے مل کر اس کے ساتھ اجتماعی آبروریزی کے واقعہ کو انجام دیا۔

    • Share this:
      چھپرا: بہار کے چھپرا میں معاشقہ (Love Affair) میں گھر سے فرار ایک نابالغ لڑکی کے ساتھ دہلی میں اجتماعی آبروریزی (Gang Rape) کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ لڑکی کے عاشق نے پہلے اسے اغوا کیا اور دہلی لے گیا، جہاں اس کے دوستوں نے مل کر اس کے ساتھ اجتماعی آبروریزی کے واقعہ کو انجام دیا۔ لڑکی کسی طرح چھپرا پہنچی، جہاں اس نے تریا تھانے میں معاملہ درج کرایا ہے۔

      عاشق کے دوستوں نے کردی یہ حرکت

      بتایا جا رہا ہے کہ تریا تھانہ علاقے کی ایک بارہویں کلاس کی طالبہ کے پاس کے گاوں کے نوجوان راہل کمار سے معاشقہ چل رہا تھا۔ اس کے بعد اس کا عاشق دہلی چلا گیا، جہاں سے موبائل سے طالبہ مسلسل اس کے رابطے میں تھی۔ گزشتہ 28 نومبر کو اس کے عاشق کے دوست سنجیو شرما اپنے تین دیگر دوستوں کے ساتھ تریا کھدرا پُل کے پاس چار پہیہ گاڑیوں سے آیا۔ اس وقت وہ انٹر کا امتحان دینے جا رہی تھی۔ اس دوران عاشق کے دوستوں نے ہاتھ پکڑ کر سے گاڑی میں بٹھا لیا۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      عمران خان کو جلد باہر کا راستہ دکھائے گی ہندوستانی فوج، نواز شریف کا استقبال کرے گی پاکستانی فوج


      عاشق کے دوستوں نے دہلی میں اجتماعی آبروریزی!

      لڑکی کے عاشق کےدوستوں نے کہا کہ تمہارا عاشق تم کو دہلی بلایا ہے، سب اسے چھپرا لے گئے اور پھر وہاں سے دہلی لے گئے۔ طالبہ کو دہلی میں ہی 8 دنوں تک رکھا گیا، جہاں اس کے عاشق اور دوستوں نے نابالغ کے ساتھ آبروریزی کی۔ چھپرا کی لڑکی کے ساتھ ہوئے آبروریزی کے اس حادثہ کی جانچ پولیس کر رہی ہے۔ اس معاملے میں پوچھنے پر چھپرا کے ایس پی سنتوش کمار نے بتایا کہ معاملے میں متاثرہ نے تحریری درخواست دی ہے۔ جانچ کے بعد کارروائی کا عمل شروع کر دیا گیا ہے۔ ایس پی نے بتایا کہ جلد ہی آبروریزی کے سبھی ملزمین کو گرفتار کیا جائے گا۔ متاثرہ لڑکی نے اس معاملے میں ایس پی سے بھی انصاف کی گہار لگائی ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: