உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Britainبھی ہندوستان کا قریبی دفاعی معاون بننے کو تیار، جنگی جہاز بنانے میں کرے گا مدد، ہوگا نیا دفاعی معاہدہ

    Youtube Video

    مودی اور جانسن نے میک ان انڈیا پروگرام کے تحت دونوں ممالک کے درمیان دفاعی ساز و سامان کی پیداوار، تحقیق، مشترکہ ترقی اور ٹیکنالوجی کی منتقلی کی اہمیت کو تسلیم کیا۔

    • Share this:
      نئی دہلی: برطانیہ چاہتا ہے کہ وہ امریکہ کی طرح ہندوستان کا قریبی دفاعی اتحادی بن جائے۔ یہی وجہ ہے کہ وزیر اعظم نریندر مودی اور برطانوی وزیر اعظم بورس جانسن کی ملاقات سے قبل ہی برطانوی حکومت نے ہندوستان کو اوپن جنرل ایکسپورٹ لائسنس (OGEL) جاری کرنے کا اعلان کیا تھا۔ برطانوی حکومت جس ملک کو یہ لائسنس دیتی ہے، وہاں سے ٹیکنالوجی کی منتقلی کی تمام رکاوٹیں دور ہو جاتی ہیں۔ جانسن نے بعد میں کہا کہ یہ ہندوستان پر مبنی لائسنس ہوگا، جو دونوں ممالک کے درمیان دفاعی تعلقات کو مزید گہرا کرے گا۔ جانسن کی مودی سے ملاقات میں اس پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ دونوں رہنماؤں نے اتفاق کیا کہ اس سے ہندوستانی کمپنیوں کے لیے برطانیہ کے ہوابازی اور بحری جہاز سازی کے شعبے میں داخلے کا دروازہ بھی کھل جائے گا۔

      برطانیہ کی اس اہم پیشکش کو مغربی ممالک کی اس کوشش کے طور پر دیکھا جا رہا ہے کہ وہ چاہتے ہیں کہ ہندوستان اپنی دفاعی ضروریات کے لیے روس پر انحصار کم کرے۔ ہندوستان اپنے دفاعی ساز و سامان کا 60 فیصد روس سے حاصل کرتا ہے۔ یہ ایک بڑی وجہ ہے کہ وہ روس کے ساتھ اپنے تعلقات خراب کرنے کا متحمل نہیں ہو سکتا۔ دوسری جانب یوکرین پر روس کے حملے کے بعد مغربی ممالک جمہوری ممالک کے ساتھ مل کر ہندوستان پر روس کی مخالفت کے لیے دباؤ ڈال رہے ہیں۔ ویسے امریکہ برطانیہ سے پہلے ہندوستان کے ساتھ ایسا معاہدہ کر چکا ہے۔ ہندوستان بھی دو دیگر مغربی اتحادیوں آسٹریلیا اور جاپان کے ساتھ دفاعی شعبے میں تعاون کو مسلسل تیز کر رہا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      India-UK talks: یوکرین جنگ، ہند-بحرالکاہل، دفاعی تعلقات اور روڈ میپ 2030 پر توجہ مرکوز

      دونوں ملکوں کے درمیان ہوگا نیا دفاعی سمجھوتہ
      ہندوستان کو جنگی طیاروں کی ضرورت کے پیش نظر برطانیہ نے بھی اس سلسلے میں مدد کی پیشکش کی ہے۔ جانسن نے عندیہ دیا کہ دونوں ممالک کے درمیان ایک نیا جامع دفاعی معاہدہ بھی ہوگا۔ انہوں نے دفاعی مصنوعات کے میدان میں خود کفیل بننے کی ہندوستان کی تیاری میں مکمل تعاون دینے کی بات کی ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      دہشت گردوں اوران کے حامیوں کاتیارہورہاہے Database، ہتھیاروں کے اسمگلرس پربھی کسے گا شکنجہ!

      مودی اور جانسن نے میک ان انڈیا پروگرام کے تحت دونوں ممالک کے درمیان دفاعی ساز و سامان کی پیداوار، تحقیق، مشترکہ ترقی اور ٹیکنالوجی کی منتقلی کی اہمیت کو تسلیم کیا۔ اس بات پر بھی اتفاق کیا گیا کہ ہندوستان یا دیگر ممالک کی دفاعی ضروریات کے مطابق مل کر مشترکہ منصوبے قائم کرنے کے امکانات تلاش کیے جائیں گے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: