ہوم » نیوز » معیشت

بجٹ 2020: وزیرخزانہ نرملا سیتا رمن کا بڑا اعلان، بینک ڈوبنے یا دیوالیہ ہونے پراب 5 لاکھ تک کی رقم ہوگی محفوظ

ابھی تک ڈیپازٹ انشورنس ایک لاکھ روپئے تھا۔ وزیر خزانہ نرملا سیتا رمن نے اپنے بجٹ اعلان میں کہا کہ اس کی حد کو اب ایک لاکھ روپئے سے بڑھا کر 5 لاکھ روپئے کردیا گیا ہے۔

  • Share this:
بجٹ 2020: وزیرخزانہ نرملا سیتا رمن کا بڑا اعلان، بینک ڈوبنے یا دیوالیہ ہونے پراب 5 لاکھ تک کی رقم ہوگی محفوظ
بجٹ 2020: بینک ڈوبا تو اب 5 لاکھ تک کی رقم محفوظ ہوگی۔

نئی دہلی: بجٹ 2020: مرکزی وزیر نرملا سیتا رمن نے بینکوں میں بڑھتے فراڈ کی وجہ سے اکاؤنٹ ہولڈرس کے پیسے ڈوبنے سے بچانے کے لئے بڑا اعلان کیا ہے۔ پنجاب اینڈ مہاراشٹر بینک معاملہ سامنے آنے کے بعد جو سب سے بڑی تشویش تھی، وہ یہ کہ اگر کوئی بینک ڈوب جاتا ہے تو اس کے اکاؤنٹ ہولڈرس کو بھی زبردست نقصان ہوسکتا ہے۔ بینک اکاؤنٹ ہولڈرس کے اکاؤنٹ کی سیکورٹی کے لئے ڈیپازٹ انشورنس ایک لاکھ روپئے تھا۔ وزیر خزانہ نے اپنے بجٹ اعلان میں کہا کہ اس کی حد اب 1 لاکھ روپئے سے بڑھا کر 5 لاکھ روپئےکردی گئی ہے۔


اگر میرا بینک ڈیفالٹ کرتا ہے تو کیا ہوگا


ڈی آئی سی جی سی یعنی ڈیپازٹ انشورنس اینڈ کریڈٹ گارنٹی کارپوریشن کی طرف سے نئے ضوابط کے مطابق، صارفین کے 5 لاکھ روپئے کی سیکورٹی کی گارنٹی ملے گی۔ یہ ضابطہ بینک کے سبھی شاخوں پر نافذ ہوگا۔ اس میں پرنسل اور سود (Principal and Interest) دونوں کو شامل کیا جاتا ہے۔ مطلب واضح ہے کہ اگر دونوں جوڑ کر پانچ لاکھ سے زیادہ ہے تو صرف 5 لاکھ روپئے کی رقم ہی محفوظ مانی جائے گی۔




ڈی آئی سی جی سی ایکٹ، 1961 کی آرٹیکل 16 (1) کے التزام کے تحت، اگر کوئی بینک ڈوب جاتا ہے یا دیوالیہ ہوجاتا ہے، تو ڈی آئی سی جی سی ہر ایک اکاؤنٹ ہولڈر کو ادائیگی کے لئے ذمہ دار ہوتا ہے۔ اس کی جمع رقم پر پانچ لاکھ روپئے تک کا بیمہ ہوگا۔ آپ کا ایک ہی بینک کی کئی برانچ میں اکاؤنٹ (کھاتہ) ہے تو سبھی کھاتوں میں جمع رقم پیسے اور سود کو جوڑا جائے گا اور صرف پانچ لاکھ روپئے تک جمع کو ہی محفوظ مانا جائے گا۔ اس میں پرنسپل اور سود دونوں کو شامل کیا جاتا ہے۔ مطلب واضح ہے کہ اگر دونوں جوڑ کر 5 لاکھ سے زیادہ ہے تو صرف 5 لاکھ ہی محفوظ مانا جائے گا۔

وزیر خزانہ نرملا سیتا رمن عام بجٹ 2020 پیش کرتی ہوئیں۔
وزیر خزانہ نرملا سیتا رمن عام بجٹ 2020 پیش کرتی ہوئیں۔


پی ایم سی بینک معاملے کے بعد اعلان

اگر آسان زبان میں سمجھیں تو کسی بینک میں آپ کی کل جمع رقم 8 لاکھ روپئے ہے تو بینک کے ڈیفالٹ کرنے پر آپ کو صرف 5 لاکھ رپوئے ہی محفوظ مانے جائیں گے۔ باقی آپ کو ملنے کی گارنٹی نہیں ہوگی۔ واضح رہے کہ پی ایم سی بینک بحران سامنے آنے کے بعد اس بات کا مطالبہ کیا جانے لگا تھا کہ اکاؤنٹ ہولڈرس کے ڈیپازٹ انشورنس کی حد کو بڑھایا جائے۔ گارنٹی رقم بڑھانے پر حکومت کو کئی فائدے ہوں گے۔ ایک تو بینکوں میں لوگ گارنٹی رقم کے برابر پیسہ جمع کرانے کو لے کر پریشان نہیں ہوں گے۔ اس سے لوگوں کا اعتماد بھی بینکنگ سسٹم پر بڑھے گا۔ اس سے بینکوں کے پاس سیونگ میں بھی اضافہ ہوگا اور وہ زیادہ قرض دے سکیں گے۔
First published: Feb 01, 2020 01:57 PM IST