உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Budget 2022: کیسا ہوگا ریل بجٹ، عام آدمی کو ملے گا کتنا فائدہ، سرکار کرسکتی ہے یہ بڑے اعلانات

    Budget 2022: کیسا ہوگا ریل بجٹ، عام آدمی کو ملے گا کتنا فائدہ، سرکار کرسکتی ہے یہ بڑے اعلانات

    Budget 2022: کیسا ہوگا ریل بجٹ، عام آدمی کو ملے گا کتنا فائدہ، سرکار کرسکتی ہے یہ بڑے اعلانات

    مرکزی وزیر خزانہ نرملا سیتا رمن یکم فروری کو ملک کا بجٹ 2022-23 پیش کریں گی ۔ ملک کے ہر شہری کا بجٹ ، ملک کے بجٹ پر منحصر رہتا ہے۔ اس لئے اس مرتبہ بھی ملک کے عوام کو اس بجٹ سے کافی امیدیں وابستہ ہیں ۔

    • Share this:
      نئی دہلی : مرکزی وزیر خزانہ نرملا سیتا رمن یکم فروری کو ملک کا بجٹ 2022-23 پیش کریں گی ۔ ملک کے ہر شہری کا بجٹ ، ملک کے بجٹ پر منحصر رہتا ہے۔ اس لئے اس مرتبہ بھی ملک کے عوام کو اس بجٹ سے کافی امیدیں وابستہ ہیں ۔ ہر مرتبہ کی طرح اس مرتبہ بھی ملک کے عوام کی ریل بجٹ پر قریبی نظر ہوگی ۔ اس کی سب سے بڑی وجہ یہ ہے کہ ملک کا نچلا اور متوسط ​​طبقہ ہی نہیں بلکہ اعلیٰ طبقہ بھی ٹرینوں میں سفر کرتا ہے۔ اس لیے اس مرتبہ بھی سب کی نظریں ریل بجٹ پر ہوں گی

      ہندوستانی ریلوے ملک کی لائف لائن ہے ۔ ہندوستانی ریلوے نہ صرف ملک کے لوگوں کو سستے کرایوں میں محفوظ طریقہ سے ایک جگہ سے دوسری جگہ پہنچاتی ہے بلکہ حکومت کی کمائی میں بھی اہم کردار ادا کرتی ہے ۔ زی بزنس کی رپورٹ کے مطابق حکومت بجٹ میں ریلوے کے اخراجات میں 15 فیصد اضافہ کر سکتی ہے ۔ مسافروں کی سہولیات کو مدنظر رکھتے ہوئے 10 نئی ٹرینوں کا اعلان کیا جا سکتا ہے ۔ خاص بات یہ ہے کہ ان سبھی 10 ٹرینوں کو وندے بھارت والی ریک کے ساتھ پٹریوں پر اتارا جا سکتا ہے ۔ اس کے علاوہ اس بجٹ میں ہائی اسپیڈ ریل نیٹ ورک کے حوالے سے بھی بڑے اعلانات کئے جاسکتے ہیں کیونکہ اس پر حکومت کی خصوصی توجہ ہے ۔

      رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ اس مرتبہ حکومت ٹرینوں میں ایک بڑی تبدیلی کرنے کا اعلان کر سکتی ہے ۔ بتایا جا رہا ہے کہ طویل مسافت کی ٹرینوں کا وزن کم کرنے کے لئے ان میں ایلومینیم سے بنے ڈبے لگائے جا سکتے ہیں ۔ اس سے ٹرینوں کی رفتار بڑھے گی ۔ کہا جا رہا ہے کہ ایلومینیم کوچ والی ٹرینیں صرف ان روٹس پر چلائی جائیں گی ، جن پر الیکٹریفائیڈ اور ڈبل لائنیں ہیں ۔ خاص بات یہ ہے کہ اس میں پرائیویٹ کمپنیوں کو بھی شامل کیا جا سکتا ہے ۔

      رپورٹ کے مطابق اس مرتبہ بجٹ میں ملک کے 500 ریلوے سٹیشنوں کو ری ڈیولپ کرنے کا اعلان کیا جا سکتا ہے۔ یہی نہیں بجلی اور ڈیزل پر انحصار کم کرنے کے لیے حکومت جلد ہی ملک میں ہائیڈروجن، بایو فیول اور شمسی توانائی سے چلنے والی ٹرینیں چلانا شروع کر سکتی ہے اور اس حوالے سے بجٹ میں اعلان بھی کیا جا سکتا ہے۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: