کار میکینک حامد کی انوکھی ایجاد، ڈیزل اور پٹرول کے بغیر چلنے والا انجن بنایا

میرٹھ : یوپی کے باغپت میں ڈیزل اور پٹرول کی مہنگائی کی مار سے عوام کو نجات دلانے کے لئے ایک میکینک نے انوکھی ایجاد کی ہے۔

Sep 21, 2015 07:37 PM IST | Updated on: Sep 21, 2015 07:38 PM IST
کار میکینک حامد کی انوکھی ایجاد، ڈیزل اور پٹرول کے بغیر چلنے والا انجن بنایا

میرٹھ : یوپی کے باغپت میں ڈیزل اور پٹرول کی مہنگائی کی مار سے عوام کو نجات دلانے کے لئے ایک میکینک نے انوکھی ایجاد کی ہے۔ اس میکینک نے ایک ایسا انجن بنایا ہے جو پٹرول یا ڈیزل سے نہیں بلکہ ہوا سے چلتا ہے۔

بسود گاؤں کے رہنے والے میکینک حامد نے ہوا سے چلنے والے اس انجن کی ایجاد کی ہے۔ حامد نے دو ہارس پاور کی صلاحیت والا ایک ایسا انجن بنایا ہے ، جو ہوا سے چلتا ہے۔ انجن کا استعمال کار چلانے اور گھروں میں جنریٹر کی جگہ استعمال کرنے کے لئے کیا جا سکتا ہے۔ بجلی نہ ہونے پر گھروں کے پنکھوں اور بلبوں کو بھی اس کے انجن سے آرام سے جلایا جا سکتا ہے۔

فی الحال میکینک نے انجن میں ہوا کے ٹینک لگائے ہیں ، جس کی مدد سے انجن بخوبی دوڑتا ہے، لیکن میکینک کا دعوی ہے کہ آنے والے وقت میں انجن ہوا رسائیكل کر کے اپنا ایندھن خود ہی تیار کرلے گا۔ ہوا کس طرح رسائیكل ہو ، حامد اس پر ریسرچ کر رہا ہے۔

ہوا سے چلنے والا یہ انوکھا انجن ضلع بھر میں موضوع بحث بنا ہوا ہے۔ ہر انسان حامد کی اس منفرد ایجاد کی تعریف کرتے ہوئے نہیں تھک رہا ہے۔ حامد نے 10 سال پہلے اس پروجیکٹ پر کام کرنا شروع کیا تھا اور اب جاکر وہ اپنی محنت اور لگن سے اس پروجیکٹ کو مکمل کرنے میں کامیاب ہوا ہے ۔

Loading...

حامد نے بتایا کے اس نے اپنی آدھی زندگی اس ایجاد کو کامیاب بنانے میں گزار دی ہے۔ دس سال پہلے جب پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں اضافہ ہونے پر عوام کو پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑ رہا تھا ، تبھی اس نے اس طرح کے ایک انجن کو ایجاد کرنے کی ٹھان لی تھی۔

حامد کو جہاں اپنے اس ایجاد پر فخر ہے وہیں اسے باغپت انتظامیہ سے شکوہ بھی ہے۔ حامد کا کہنا ہے کہ تمام افسران نے اس ایجاد کی تعریف تو کی ، لیکن کسی نے بھی ماڈل نہیں بنایا اور نہ ہی کوئی مالی مدد دینے کا اعلان کیا۔

حامد کا کہنا ہے کہ اگر کوئی بھی سرکاری یا غیر سرکاری ادارہ اس ایجاد کے لئے اس کی مالی مدد کرتا ہے ، تو شاید ہوا سے چلنے والا یہ انجن آنے والے وقت میں ملک اور ضلع کے لئے ڈیزل اور پٹرول کے انجن کیجگہ ایک بڑا آپشن بن کر ابھر سکتا ہے۔

Loading...