گرفتاری کے خلاف ہائی کورٹ پہنچے سی بی آئی کے ڈی ایس پی دیویندرکمار

گوشت تاجرمعین قریشی سے متعلق معاملے میں جانچ افسررہے کمارکو سی بی آئی نے کل گرفتارکیا تھا۔

Oct 23, 2018 02:50 PM IST | Updated on: Oct 23, 2018 02:50 PM IST
گرفتاری کے خلاف ہائی کورٹ پہنچے سی بی آئی کے ڈی ایس پی دیویندرکمار

سی بی آئی دفتر: فائل فوٹو

سی بی آئی کے ڈی ایس پی دیویندرکمار نے جانچ ایجنسی کے اسپیشل ڈائریکٹر راکیش استھانا سے متعلق رشوت خوری کے الزامات کے معاملے میں اپنی گرفتاری کو چیلنج دیتے ہوئے منگل کو دہلی ہائی کورٹ کا رخ کیا۔ سینئر وکیل دیان کرشنن نے چیف جسٹس راجیندرمینن اورجسٹس وی کے راو کی بنچ کے سامنے یہ معاملہ پیش کیا۔

عدالت نے دیویندر کمارکی عرضی کو سماعت کے لئے منگل کو لنچ کے بعد مناسب بینچ کے سامنے سماعت کے لئے فہرست میں شامل کیا ہے۔  گوشت تاجرمعین قریشی سے متلعق معاملے میں جانچ افسررہے کمارکو سی بی آئی نے پیرکو گرفتارکیا تھا۔ ان پرتاجرستیش بابو سانا کے بیان درج کرنے میں دھوکہ دہی کا الزام ہے۔

Loading...

ستیش سانا نے الزام لگایا تھا کہ انہوں نے اس معاملے میں راحت پانے کے لئے رشوت دی تھی۔ افسران کے مطابق ستیش سانا نے معاملے میں راحت پانے کے لئے مبینہ طورپررشوت دی تھی۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ ایسا الزام ہے کہ سانا کا بیان مبینہ طورپر26 ستمبر2018 کو استھانا کی قیادت والی جانچ  ٹیم کے ذریعہ درج کیا گیا۔ تاہم سی بی آئی کی جانچ میں سامنے آیا کہ اس دن سانا حیدرآباد میں تھے۔

یہ بھی پڑھیں:    سی بی آئی کے رشوت لینے کے معاملے پرراہل گاندھی کا طنز، وزیراعظم مودی کے پسندیدہ تھے استھانا

یہ بھی پڑھیں:       جے این یو کے نجیب کودو سال میں بھی نہیں تلاش کرسکی سی بی آئی، ماں نے سی بی آئی پی پراٹھایا سوال

یہ بھی پڑھیں:     جے این یوکے لاپتہ طالب علم نجیب کے حق میں آواز اٹھانے والوں سے ہی پوچھ گچھ کررہی ہے سی بی آئی

Loading...