உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    CDS Bipin Rawat Helicopter Crash: لاشوں کی شناخت ڈی این اے ٹسٹ سے کی جائے گی

    CDS Bipin Rawat Helicopter Crash: لاشوں کی شناخت ڈی این اے ٹسٹ سے کی جائے گی

    CDS Bipin Rawat Helicopter Crash: لاشوں کی شناخت ڈی این اے ٹسٹ سے کی جائے گی

    تمل نادو کے کنور کے پاس بدھ کے روز ہندوستانی فضائیہ (Indian Airforce) کے ہیلی کاپٹر حادثہ (Helicopter crash) کے بعد ملی لاش کو شناخت ڈی این اے ٹسٹ سے کی جائے گی۔ ہندوستانی فضائیہ نے کہا کہ حادثے کی جانچ کے احکامات دیئے گئے ہیں۔

    • Share this:
      نئی دہلی: تمل نادو کے کنور کے پاس بدھ کے روز ہندوستانی فضائیہ (Indian Airforce) کے ہیلی کاپٹر حادثہ (Helicopter crash) کے بعد ملی لاش کو شناخت  ڈی این اے ٹسٹ سے کی جائے گی۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ تمل ناڈو میں فوجی ہیلی کاپٹر حادثہ میں شامل 14 میں سے 13 ملازمین کی موت کی تصدیق ہوگئی ہے۔ ہندوستانی فضائیہ نے کہا کہ حادثے کی جانچ کے احکامات دیئے گئے ہیں۔ آفیشیل ذرائع نے بتایا کہ اس ہیلی کاپٹر سے چیف ڈیفنس آف اسٹاف بپن راوت (cds bipin rawat) ویلنگٹن میں ڈیفنس اسٹاف کالج جا رہے تھے۔ وہ صبح 9 بجے دہلی سے نکلے تھے۔ تقریباً دوپہر 12:20 بجے ہیلی کاپٹر تباہ ہوگیا۔ آرمی کیمپ پہنچنے سے پانچ منٹ پہلے یہ حادثہ ہوا۔

      حادثے کا شکار ہونے والے ہیلی کاپٹر میں چیف آف ڈیفنس اسٹاف جنرل بپن راوت، ان کی اہلیہ، دفاعی معاون، سیکورٹی کمانڈوز اور فضائیہ کے پائلٹ سمیت کل 14 افراد سوار تھے۔ ہندوستانی فضائیہ نے حادثہ کے فوراً بعد ایک بیان میں کہا کہ سی ڈی ایس جنرل بپن راوت کو لے جا رہا ایک IAF Mi-17V5 ہیلی کاپٹر، تمل ناڈو کے کنور کے پاس آج حادثہ کا شکار ہوگیا۔ حادثہ کی وجوہات کا پتہ لگانے کے لئے جانچ کے احکامات دیئے گئے ہیں۔

      قومی، بین الااقوامی، جموں و کشمیر کی تازہ ترین خبروں کے علاوہ  تعلیم و روزگار اور بزنس  کی خبروں کے لیے  نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: