உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کورونا : مرکز کا مشورہ ، آن لائن منائیں تہوار ، تین مہینے تک لاپروائی پڑے گی مہنگی

    کورونا : مرکز کا مشورہ ، آن لائن منائیں تہوار ، تین مہینے تک لاپروائی پڑے گی مہنگی ۔ تصویر : AP

    کورونا : مرکز کا مشورہ ، آن لائن منائیں تہوار ، تین مہینے تک لاپروائی پڑے گی مہنگی ۔ تصویر : AP

    ملک میں دشہرہ ، نورراتری ، درگا پوجا ، عید ، دیوالی ، کرسمس ، نیو ایئر جیسے تہوار آنے والے ہیں ۔ آنے والے تین مہینے کافی اہم ہیں ۔ احتیاط برتنی ہے ۔ اکتوبر ، نومبر اور دسمبر میں کافی احتیاط برتنی ہے ۔

    • Share this:
      نئی دہلی : کورونا کی تیسری لہر کے خطرہ کے پیش نظر مرکزی حکومت نے لوگوں سے احتیاط کے ساتھ تہوار منانے کی اپیل کی ہے ۔ مرکزی وزارت صحت نے کہا کہ ہوسکے تو تہوار گھر کے اندر منائیں ۔ بھیڑ نہ لگائیں اور اگر اہل خانہ یا رشتہ داروں کے ساتھ تہوار منانا چاہتے ہیں تو آن لائن منائیں ۔

      مرکز نے دوسرے ممالک کی مثال بھی دی ، جہاں لاپروائی برتنے کی وجہ سے کورونا کے معاملات میں اضافہ ہوگیا ۔ وزارت صحت نے کہا کہ انگلینڈ اور نیدرلینڈ میں تہواروں میں دیکھا گیا کہ کوتاہی برتی گئی اور معاملات بڑھ گئے ۔ سرکار کا کہنا ہے کہ اسی سے سبق لیتے ہوئے اگلے تین مہینے خاص احتیاط برتنے کی ضرورت ہے ۔

      ملک میں دشہرہ ، نورراتری ، درگا پوجا ، عید ، دیوالی ، کرسمس ، نیو ایئر جیسے تہوار آنے والے ہیں ۔ آنے والے تین مہینے کافی اہم ہیں ۔ احتیاط برتنی ہے ۔ اکتوبر ، نومبر اور دسمبر میں کافی احتیاط برتنی ہے ۔

      اس سے پہلے آئی سی ایم آر نے لوگوں کے زیادہ گھومنے کو لے کر بھی خبردار کیا ۔ دراصل اس وقت دنیا بھر میں لوگ اپنے گھروں سے گھومنے کیلئے نکل رہے ہیں ۔ ہندوستان میں بھی بڑی تعداد میں سیاح پہاڑوں کا رخ کررہے ہیں ۔ سیاحتی مقامات پر لوگوں کی بھیڑ روز دیکھی جاسکتی ہے ۔ آئی سی ایم آر نے خبردار کیا کہ لوگوں کی گھومنے کی اس عادت کی وجہ سے ملک میں جلد ہی کورونا کی تیسری لہر آسکتی ہے ۔

      آئی سی ایم آر اور امپیریل کالج لندن کے محققین نے اپنی مشترکہ تحقیق میں کہا ہے کہ اس طرح سے گھومنا ہندوستان میں کورونا کی تیسری لہر کو دعوت دے سکتا ہے ۔ تحقیق کے مطابق ہندوستان میں اگلے سال فروری اور مارچ کے درمیان کورونا انفیکشن ہائی لیول پر ہونے کا اندیشہ ہے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: