ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کسانوں کو جتنا دبانے کی کوشش کرے گا مرکز، اتنا ہی مضبوط ہوگا آندولن: سکھبیر سنگھ بادل

سکبھیر سنگھ بادل نے کہا، ’ہم نے ہمیشہ کسانوں اور دلتوں کے حقوق کی لڑائی لڑی ہے۔ ہم کسان آندولن میں مدد بھی کر رہے ہیں، لیکن ہمیں اس بات کا درد ہے کہ مرکزی حکومت کو کسانوں کے درد سے کوئی فرق نہیں ہے’۔

  • Share this:
کسانوں کو جتنا دبانے کی کوشش کرے گا مرکز، اتنا ہی مضبوط ہوگا آندولن: سکھبیر سنگھ بادل
کسانوں کو جتنا دبانے کی کوشش کرے گا مرکز، اتنا ہی مضبوط ہوگا آندولن: سکھبیر سنگھ بادل

چمکور صاحب (پنجاب): شرومنی اکالی دل کے سربراہ سکھبیر سنگھ بادل (Shiromani Akali Dal President Sukhbir Singh Badal)نے پیر کو مرکز پر الزام لگایا کہ وہ کسانوں کو ’بدنام’ کرنے کی کوشش کے تحت ’بات چیت کا چھلاوا’ کر رہا ہے تاکہ یہ سوچ بنائی جاسکے کہ وہ صحیح ہیں اور کسان غلط ہیں۔ سکبھیر سنگھ بادل نے شہیدی زور میلے کے موقع پر گرودوارہ کتل گڑھ صاحب میں خراج عقیدت پیش کرنے کے بعد کہا۔ ’مرکز بات چیت کی شروعات کرکے کسانوں کو دباو میں لانے کی کوشش کر رہا ہے۔ یہ ایک بے مقصد قواعد ہے، جب کسان تنظیمیں پہلے ہی تین زرعی قوانین کو مستردکرچکی ہیں اور انہیں منسوخ کرنا چاہتے ہیں’۔


شرومنی اکالی دل کے سربراہ سکھبیر سنگھ بادل (Sukhbir Singh Badal) نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی (PM Narendra Modi) کو ایمرجنسی پارلیمنٹ کا سیشن بلانا چاہئے اور ان قوانین کو واپس لینا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ جمہوریت میں آخری فیصلہ لوگوں کا ہوتا ہے۔ سکبھیر سنگھ بادل نے کہا، ’لوگوں نے نریندر مودی کو وزیر اعظم بنایا ہے اور لوگوں کی آواز سننا ان کا فرض ہے’۔ سکبھیر سنگھ بادل کی پارٹی پہلے ہی زرعی قانون کو لے کر این ڈی اے سے الگ ہوچکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایسا کرنے کے بجائے، مرکز نے پہلے ’آندولن کو مذہب اور علیحدگی پسندوں سے جوڑا اور اب بھائی کو بھائی کے خلاف کھڑا کر رہا ہے’۔


مرکز کو کسانوں کے درد سے کوئی فرق نہیں


سکبھیر سنگھ بادل نے کہا، ’ہم نے ہمیشہ کسانوں اور دلتوں کے حقوق کی لڑائی لڑی ہے۔ ہم کسان آندولن میں مدد بھی کر رہے ہیں، لیکن ہمیں اس بات کا درد ہے کہ مرکزی حکومت کو کسانوں کے درد سے کوئی فرق نہیں ہے’۔ انہوں نے مرکز پر بچولیوں کو نشانہ بنانے کے لئے محکمہ انکم ٹیکس کا ’غلط استعمال’ کرنے کا بھی الزام لگایا۔ انہوں نے کہا، ’میں مرکز کو وارننگ دیتا ہوں کہ وہ جاری آندولن کو جتنا دبانے کی کوشش کرے گا، وہ اتنا ہی مضبوط ہوگا’۔ بعد میں چنڈی گڑھ میں شرومنی اکالی دل کی طرف سے کمیٹی کی میٹنگ کے بعد سکبھیر سنگھ بادل نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کو تینوں قوانین کو منسوخ کرنے کے لئے پارلیمنٹ کا خصوصی اجلاس بلانے سے ’پرہیز نہیں کرنا چاہئے۔

 

 
Published by: Nisar Ahmad
First published: Dec 22, 2020 10:50 AM IST