ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

حلف لینے کے چند گھنٹوں کے اندر چھتیس گڑھ کے وزیراعلیٰ نے بھی کسانوں کا قرض معاف کیا

بھوپیش بگھیل نے 16 لاکھ 65 ہزار سے زیادہ کسانوں کا قرض معاف کر کے دھان کی کم از کم امدادی قیمت میں بھی اضافہ کر دیا ہے۔

  • Share this:
حلف لینے کے چند گھنٹوں کے اندر چھتیس گڑھ کے وزیراعلیٰ نے بھی کسانوں کا قرض معاف کیا
چھتیس گڑھ کے نو منتخب وزیر اعلی بھوپیش بگھیل: فائل فوٹو۔

مدھیہ پردیش کے وزیر اعلی کے طور پر حلف اٹھانے کے چند گھنٹوں کے اندر ہی کمل ناتھ نے ریاست کے کسانوں کا قرض معاف کر دیا تھا۔ اس کے فورا بعد چھتیس گڑھ کے نو منتخب وزیر اعلی بھوپیش بگھیل نے بھی حلف برداری کے ٹھیک بعد پہلا کام کسانوں کے مفاد میں ہی کیا۔ بگھیل نے 16 لاکھ 65 ہزار سے زیادہ کسانوں کا قرض معاف کر کے دھان کی کم از کم امدادی قیمت میں بھی اضافہ کر دیا ہے۔


چھتیس گڑھ کے نو منتخب وزیر اعلی نے حلف لینے کے فورا بعد اس کا اعلان کیا۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس صدر راہل گاندھی نے اعلان کیا تھا کہ کانگریس حکومت بننے کے دس دن کے اندر کسانوں کا قرض معاف کر دیا جائے گا۔ اسی ضمن میں یہ فیصلہ لیا گیا ہے۔ بگھیل نے ٹویٹ کر اپنے فیصلوں کی جانکاری شئیر کی۔


انہوں نے بتایا کہ 16 لاکھ 65 ہزار سے زائد کسانوں کا 61،000 کروڑ روپے کا قرض معاف کر دیا گیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے کہا کہ ریاستی حکومت نے دھان کی ایم ایس پی 1700 روپئے فی کوئنٹل سے بڑھا کر 2500 روپئے فی کوئنٹل کئے جانے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس کے علاوہ بگھیل نے جھیرم حملے کے شہیدوں کو انصاف دلانے کے لئے ایس آئی ٹی کی تشکیل کرنے کا بھی اعلان کیا ہے۔


یہ بھی پڑھیں: چھتیس گڑھ: تمام پس وپیش ختم، بھوپیش بگھیل ہوں گے چھتیس گڑھ کے نئے وزیراعلیٰ

قابل ذکر ہے کہ پیر کے روز مدھیہ پردیش کے اعلی وزیر کمل ناتھ نے حلف لینے کے فورا بعد کسانوں کی قرض معافی سے متعلق فائل پر دستخط کئے تھے۔

 
First published: Dec 18, 2018 11:08 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading