ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

بھوپال میں آیوش انٹرن ڈاکٹروں نے وزیر صحت کی رہائش گاہ کا کیا گھیراؤ ، جانئے کیوں

مدھیہ پردیش کے وزیر صحت ڈاکٹرنروتم مشرا کہتے ہیں کہ یہ ایک اہم معاملہ ہے اور کورونا بیماری کو ختم کرنے اور مریضوں کے علاج میں آیوش انٹرن ڈاکٹروں کی اہم خدمات ہیں ، ان کے لئے کیا بہتر ہو سکتا ہے ، وہ ہم کریں گے ۔

  • Share this:
بھوپال میں آیوش انٹرن ڈاکٹروں  نے وزیر صحت کی رہائش گاہ کا کیا گھیراؤ ، جانئے کیوں
بھوپال میں آیوش انٹرن ڈاکٹروں نے وزیر صحت کی رہائش گاہ کا کیا گھیراؤ ، جانئے کیوں

کورونا لاک ڈاؤن میں محکمہ صحت اور ڈاکٹرس جس طرح سے اپنی خدمات انجام دے رہے ہیں ، وہ کسی سے پوشیدہ نہیں ہے ۔ اسپتال اور فیلڈ میں کورونا مریضوں کی جانچ کے لئے جب ڈاکٹرس کی کمی محسوس کی گئی ، تو محکمہ آیوش نے انٹرن ڈاکٹروں کی ٹیم تو فیلڈ میں تعینات کرکے خوب واہ واہی لوٹی ، لیکن دو مہینہ گزرنے کے بعد بھی ان کی محنت کے نام پر انہیں کچھ بھی نہیں ادا کیا گیا ۔


محکمہ آیوش کی کارکردگی اور عدم توجہی سے مایوسی ہوکر آیوش انٹرن ڈاکٹروں نے اپنے مطالبات کو لیکر ضلع انتظامیہ سے بھی رجوع کیا ، لیکن جب یہاں بھی ان کو کوئی راحت نہیں ملی ، تو آیوش کے انٹرن ڈاکٹر مدھیہ پردیش کے وزیرصحت  ڈاکٹر نروتم مشرا کی رہائش پر اپنے مطالبات کو لیکر پہنچ گئے ۔


آیوش انٹرن ڈاکٹروں میں یونانی ، آیورویدک اور ہومیو پیتھی سسٹم آف میڈسین کے ڈاکٹرس شامل ہیں ۔ آیوش ڈاکٹروں کی شکایت ہے کہ جب ان سے کورونا لاک ڈاؤن میں سارے کام لئے جا رہے ہیں ، تو ان کی طبی خدمات کے عوض میں ان کی محنت کا حق ادا کیوں نہیں جاتا ہے ۔ آیوش انٹرن ڈاکٹرس ایسوسی ایشن کے صدر ڈاکٹر منوج سولنکی کہتے ہیں کہ محکمہ ان سے چوبیس گھنٹے کام لیتا ہے اور کئی کئی دن وہ اپنے گھر بھی نہیں جا پاتے ہیں ۔ دن دن بھر پی پی ای کٹ پہننے سے ان کے جسم میں دانے نکل آئے ہیں اور جب ہم اپنی محنت کی اجرت ان  سے مانگتے ہیں تو کہا جاتا ہے کہ دیکھتے ہیں ۔ لاک ڈاؤن میں ہم اپنی کفالت کیسے کریں ۔ یہ محکمہ آیوش ہمیں بتا دے ۔ ہم نے اپنے مطالبات کو لے کر وزیر صحت ڈاکٹر نروتم مشرا سے ملاقات کر کے انہیں سات نکاتی میمورنڈم پیش کیا ہے ۔ وزیر صحت نے جلد ہی معاملہ کو حل کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے۔




آیوش انٹرن ڈاکٹر رضوان کہتے ہیں کہ محکمہ آیوش ہمارے ساتھ پہلے دن سے دوئم درجہ کا سلوک کررہا ہے ۔ جب ایم بی بی ایس کے انٹرن ڈاکٹروں کو دوہزار یومیہ کے حساب سے ادائیگی کی جا رہی ہے ، تو وہی خدمات تو ہم بھی انجام دے رہیں ، ہمیں کیوں محروم کیا جا رہا ہے ۔ حکومت کو ہماری طبی خدمات کو ریکگنائز کرنا چاہئے اور ہماری سرکاری اسپتالوں میں تقرری کی راہ ہموار کرنی چاہئے ۔

ادھر مدھیہ پردیش کے وزیر صحت ڈاکٹرنروتم مشرا کہتے ہیں کہ یہ ایک اہم معاملہ ہے اور کورونا بیماری کو ختم کرنے اور مریضوں کے علاج میں آیوش انٹرن ڈاکٹروں کی اہم خدمات ہیں ، ان کے لئے کیا بہتر ہو سکتا ہے ، وہ ہم کریں گے ۔
First published: May 24, 2020 11:05 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading