ہوم » نیوز » No Category

مدھیہ پردیش کے دھار میں واقع بھوج شالا میں پوجا اور نماز کو لے کر کشیدگی

دھار۔ مدھیہ پردیش حکومت اور انتظامیہ کے لئے آج کا دن کافی اہم ہے۔

  • IBN Khabar
  • Last Updated: Feb 12, 2016 10:10 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
مدھیہ پردیش کے دھار میں واقع بھوج شالا میں پوجا اور نماز کو لے کر کشیدگی
دھار۔ مدھیہ پردیش حکومت اور انتظامیہ کے لئے آج کا دن کافی اہم ہے۔

دھار۔ مدھیہ پردیش حکومت اور انتظامیہ کے لئے آج کا دن کافی اہم ہے۔ آج بسنت پنچمی کے موقع پر بھوج شالا میں ہونے والی پوجا اور نماز کو لے کر کشیدگی کی صورت حال برقرار ہے۔ حالانکہ دونوں برادریوں میں تصادم کی نوبت نہ آئے اس کے لئے فارمولہ تیار کر دیا گیا ہے۔


لیکن انتظامیہ کو اپنے ہی فارمولے کو کامیاب بنانا ہی بڑا چیلنج ہے۔ بسنت پنچمی کے دن بھوج شالا میں پہلے پوجا پھر نماز اور اس کے بعد پھر پوجا کو لے کر حکومت اور پولیس محکمے کے ہاتھ پاؤں پھولے ہوئے ہیں۔ حکومت نے بھوج شالا کے چاروں طرف سیکورٹی کے سخت انتظامات کئے ہیں۔


دھار کی بھوج شالا میں آج لٹمس ٹیسٹ ہے۔ لٹمس ٹیسٹ حکومت کی، انتظامیہ کی اور یہاں جٹنے والے لوگوں کی۔ سب کچھ ٹھیک رہا تو آج یہاں پوجا بھی ہوگی اور طے وقت پر نماز بھی۔ لیکن دن گزرنے تک سب کی نظریں بھوج شالا پر ٹکی رہیں گی۔ فی الحال بھوج شالا سنگینوں کے سائے میں ہے۔ آج جمعے کی نماز اور بسنت پنچمی پر سرسوتی ماں کی پوجا کو لے کر چپے چپے پر پولیس فورس کو تعینات کر دیا گیا ہے۔


ہر مشتبہ پر گہری نظر رکھی جا رہی ہے۔ علاقے میں امن قائم رہے اس کے لیے ہر سرگرمی کو لے کر پولیس سرگرم ہے۔ اتنا ہی نہیں ڈرون سرولانس کی بھی مدد لی جا رہی ہے۔ بھوج شالا کی حفاظت میں 6 ہزار پولیس اہلکار، ایک اے ڈی جی، 3 ڈی آئی جی، 16 آئی پی ایس کو تعینات کیا گیا ہے۔ ان سب کے کندھوں پر پوجا اور جمعے کی نماز کو پرامن طریقے سے کرانے کی ذمہ داری سونپی گئی ہے۔

ادھر پولیس پس وپیش میں ہے تو ادھر حکومت بھی بھوج شالا تنازعہ کو لے کر پریشان ہے لیکن دونوں کمیونٹی میں تصادم کو ٹالنے کے لئے جو فارمولہ تیار کیا گیا ہے اس کے مطابق ہی پوجا اور نماز ادا کرائی جائے گی۔ معاملے کو لے کر شیوراج حکومت بھی مکمل طور پر محتاط ہے۔
First published: Feb 12, 2016 10:04 AM IST