உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بھوپال: شہریت ترمیمی قانون اوراین آرسی کی مخالفت میں سڑک پراترے لوگ، جامعہ کے طلباء کی حمایت

    بھوپال میں شہریت ترمیمی قانون اوراین آرسی کی مخالفت اور جامعہ کے طلباء کی حمایت میں احتجاج۔

    بھوپال میں شہریت ترمیمی قانون اوراین آرسی کی مخالفت اور جامعہ کے طلباء کی حمایت میں احتجاج۔

    مظاہرین نے قانون کوواپس لینے کا مطالبہ کیا۔ ساتھ ہی طلبا وطالبات کا کہنا تھا کہ وہ دہلی واقع جامعہ ملیہ اسلامیہ کے طلباء کی حمایت میں سڑک پراترے ہیں، جب تک اس قانون کوواپس نہیں لیا جائے گا، تب تک ہمارا احتجاجی مظاہرہ جاری رہے گا۔

    • Share this:
      بھوپال: شہریت ترمیمی قانون اوراین آرسی کی مخالفت میں بدھ کو مدھیہ پردیش کی راجدھانی بھوپال میں ہزاروں کی تعداد میں مسلم طبقےکے لوگ اورکالج کے طلبا وطالبات سڑکوں پر اترے۔ مظاہرین نے قانون کوواپس لینےکا مطالبہ کیا۔ طلباء وطالبات کا کہنا تھا کہ وہ دہلی واقع جامعہ ملیہ اسلامیہ کے طلباء کی حمایت میں سڑک پراترے ہیں، جب تک اس قانون کوواپس نہیں لیا جائےگا، تب تک ہمارا احتجاجی مظاہرہ جاری رہےگا۔ بھوپال کےاقبال میدان میں ہزاروں کی تعداد میں جمع ہوئےلوگوں نےقانون کی مخالفت میں پرامن طریقے سےاحتجاج کیا۔

      ملک کے لئے کالا قانون

      رکن اسمبلی عارف مسعود کےساتھ نوجوان شاعرعمران پرتاپ گڑھی بھی قانون کی مخالفت میں اترے۔ عارف مسعود نےکہا کہ یہ شہریت ترمیمی قانون اوراین آرسی ملک کے لئے بڑا شرمناک ہے۔ ہمارے آئین میں ہےکہ اگرہم کسی بات کونہیں مانتے ہیں، توپرامن طریقے سے مخالفت درج کراسکتے ہیں۔ دہلی میں طلبا وطالبات اگرپرامن طریقے سےاحتجاج کررہے تھے، توحکومت کوطلباء کی بات سننی چاہئے تھی۔ مگرحکومت ضد پراڑگئی اورطلباء پر لاٹھی چارج بھی کرایا۔ انہوں نےکہا کہ شہریت ترمیمی قانون ملک کےلئےکالا قانون ہے۔ واپس لینےکےمطالبے کے ساتھ یہ لڑائی جاری رہےگی۔ گاندھی وادی طریقے سے احتجاجی مظاہرہ جاری رہےگا، جب تک قانون کوواپس نہیں لیا جائے گا۔

      بھوپال میں ہوئے احتجاج میں خواتین نے بھی شرکت کی۔


      وزراء کے پاس ڈگری نہیں، ہم سے سرٹیفکیٹ مانگ رہے ہیں

      احتجاج میں شامل نوجوان شاعرعمران پرتاپ گڑھی نےکہا کہ شہریت کےلئے ہم سے سرٹیفکیٹ مانگا جارہا ہے۔ مرکزمیں حکومت کے وزراء کے پاس ڈگری نہیں ہے۔ ڈگری کی بات کروتوٹال مٹول کرتے ہیں اورہم سے سرٹیفکیٹ مانگ رہے ہیں شہریت کےلئے۔ آخر سرٹیفکیٹ کی ضرورت کیوں ہے، اپنے ہی ملک میں۔ رکن اسمبلی عارف مسعود نےکہا کہ جامعہ ملیہ اسلامیہ کی بنیاد مہاتما گاندھی نے رکھی تھی۔ چندہ کرکے جامعہ کوکھڑا کیا گیا تھا، لیکن اب اسی یونیورسٹی میں کیا ہورہا ہے۔ طلباء کےساتھ کیسا برتاؤ ہورہا ہے۔ جامعہ ملیہ اسلامیہ، وہاں کے طلباء اورمہاتما گاندھی کے ذریعہ رکھی گئی بنیاد والی یونیورسٹی کو بچانےکےلئے لڑائی آگے بھی جاری رہے گی۔
      First published: