உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    MP News: مدھیہ پردیش وقف بورڈ انتخاب پر ہائی کورٹ نے لگائی روک

    MP News: مدھیہ پردیش وقف بورڈ انتخاب پر ہائی کورٹ نے لگائی روک

    MP News: مدھیہ پردیش وقف بورڈ انتخاب پر ہائی کورٹ نے لگائی روک

    Madhya Pradesh Waqf Board Elections: مدھیہ پردیش وقف بورڈ انتخاب پر جبلپور ہائی کورٹ نے روک لگادی ہے۔ بورڈ انتخاب کو لے کر ریٹرننگ افسر کے ذریعہ کی گئی بے ضابطگی اور نا اہل لوگوں کو بورڈ کا ممبر نامزد کئے جانے کے خلاف جبلپور ہائی کورٹ میں پانچ عرضیاں دائر کی گئی تھیں۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Madhya Pradesh | Bhopal | Bhopal
    • Share this:
    بھوپال : مدھیہ پردیش وقف بورڈ انتخاب پر جبلپور ہائی کورٹ نے روک لگادی ہے۔ بورڈ انتخاب کو لے کر ریٹرننگ افسر کے ذریعہ کی گئی بے ضابطگی اور نا اہل لوگوں کو بورڈ کا ممبر نامزد کئے جانے کے خلاف جبلپور ہائی کورٹ میں پانچ عرضیاں دائر کی گئی تھیں۔ ہائی کورٹ نے سبھی عرضیوں پر ایک ساتھ سماعت کرتے ہوئے ریٹرننگ افسر کے ذریعہ کی گئی بے ضابطگی پر جہاں ناراضگی کا اظہار کیا اور انہیں ہٹاکر دوسرا ریٹرننگ افسر بنانے کی ہدایت دی ۔ وہیں عدالت کے احکام کے بعد ہائی کورٹ نے ریٹرننگ افسر داؤد احمد خان کو فوری طور پر ہٹا دیا ہے۔ ڈاکٹر صنوبر پٹیل اور محبوب  حسین کی نامزدگی کے معاملے میں عدالت نے  نوٹس جاری کرتے ہوئے ایم پی حکومت سے دو ہفتے میں جواب مانگا ہے ۔ جبلپور ہائی کورٹ نے معاملے کی سماعت کرتے ہوئے ایم پی وقف بورڈ انتخاب پر روک لگا دی ہے ۔

     

    یہ بھی پڑھئے: Cyrus Mistry کی موت کے بعد کون ہوگا 2.40 لاکھ کروڑ کی کمپنی کا وارث؟ 2 ماہ میں بکھرا کنبہ!


    مشہور وکیل شہنواز خان نے نیوز18 اردو سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں عدالت کا فیصلہ دیکھ کر بہت خوشی ہوئی ۔ قانون نے اپنا کام کیا ہے۔ عدالت نے جو فیصلہ دیا ہے ہم لوگ اسی کی مانگ کر رہے تھے اور بتا رہے تھے کہ ریٹرننگ افسر کے ذریعہ بورڈ انتخاب کو لے کر جو کچھ کیا جا رہا ہے وہ قانون کے  بر خلاف ہے۔

     

    یہ بھی پڑھئے: PoK سے دراندازی کیلئے ISI نے بنائے ہیں 9 لانچنگ پیڈس، 150 دہشت گردوں کو کیا تیار


    عدالت نے آج کی سماعت میں نہ صرف ریٹرننگ افسر کو ہٹانے کا احکام جاری کیا بلکہ پورے معاملے میں اسٹے دیتے ہوئے وقف بورڈ انتخاب کے لئے نیا ریٹرننگ افسر حکومت کو بنانے کی ہدایت دی ہے ۔ عرضی گزار کے ذریعہ محبوب حسین اور ڈاکٹر صنوبر پٹیل کی نامزدگی کو بھی چیلنج کیا گیا تھا، جس پر عدالت نے اپنی ناراضگی ظاہر کرتے ہوئے حکومت سے ان کے دستاویز کو پیش کرنے کی ہدایت دی ہے ۔ عدالت کے فیصلہ کے بعد ریٹرننگ افسر داؤد احمد خان نے اپنا استعفی دیدیا ہے۔اب جو نیا ریٹرننگ افسر ہوگا وہ بورڈ انتخاب کے مراحل کو طے کرے گا۔

    عدالت کے ذریعہ پورے معاملے میں دو ہفتے کی روک لگائی گئی ہے ۔عدالت کے فیصلہ سے جہاں ڈیفالٹر پر روک لگے گی تو وہیں امید ہے کہ بورڈ انتخاب کے بعد جو نئے لوگ آئیں گے وہ قانون کے مطابق کام کرکے بورڈ کو نئی بلندیوں پر لے جائیں گے۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: