உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    شیوراج کابینہ میں نہیں ملی جگہ ، ناراض ممبران اسمبلی نے دی استعفی کی وارننگ

    مدھیہ پردیش میں شیوراج کابینہ میں ردوبدل کے بی جے پی میں اندرونی اختلاف کھل کر سامنے آنے لگے ہیں ۔ کئی لیڈر جہاں پارٹی سے نکالنے جانے سے ناراض ہیں ، تو کچھ کو اس بات کی ناراضگی ہے کہ انہیں کابینہ کا حصہ نہیں بنایا گیا ۔

    مدھیہ پردیش میں شیوراج کابینہ میں ردوبدل کے بی جے پی میں اندرونی اختلاف کھل کر سامنے آنے لگے ہیں ۔ کئی لیڈر جہاں پارٹی سے نکالنے جانے سے ناراض ہیں ، تو کچھ کو اس بات کی ناراضگی ہے کہ انہیں کابینہ کا حصہ نہیں بنایا گیا ۔

    مدھیہ پردیش میں شیوراج کابینہ میں ردوبدل کے بی جے پی میں اندرونی اختلاف کھل کر سامنے آنے لگے ہیں ۔ کئی لیڈر جہاں پارٹی سے نکالنے جانے سے ناراض ہیں ، تو کچھ کو اس بات کی ناراضگی ہے کہ انہیں کابینہ کا حصہ نہیں بنایا گیا ۔

    • ETV
    • Last Updated :
    • Share this:
      مدھیہ پردیش میں شیوراج کابینہ میں ردوبدل کے بی جے پی میں اندرونی اختلاف کھل کر سامنے آنے لگے ہیں ۔ کئی لیڈر جہاں پارٹی سے نکالنے جانے سے ناراض ہیں ، تو کچھ کو اس بات کی ناراضگی ہے کہ انہیں کابینہ کا حصہ نہیں بنایا گیا ۔ بتایا جا رہا ہے کہ  ساگر ضلع سے کے رکن اسمبلی پردیپ لاريا کابینہ میں جگہ نہ ملنے سے کافی ناراض ہیں ۔ ایسے میں اب انہوں نے پارٹی کو اپنے رکن اسمبلی عہدہ سے استعفی دینے کی دھمکی دی ہے ۔

      بتایا جاتا ہے کہ پردیپ لاريا خود پردیش بی جے پی ہیڈ کوارٹر پہنچے ۔ تاہ یہاں ان کی پارٹی ریاستی صدر نند كمار سنگھ چوہان اور تنظیم کے جنرل سکریٹری سہاس کمار بھگت سے ملاقات نہیں ہو سکی ، لیکن انہوں نے دیگر پارٹی عہدیداروں کے سامنے اپنی ناراضگی ظاہر کی ۔

      ذرائع کے مطابق ممبر اسمبلی نے اپنے عہدہ سے استعفی دینے کی بھی وارننگ دی ہے ۔ تاہم  اس معاملے میں انہوں نے میڈیا کے سامنے کچھ بھی کہنے سے انکار کر دیا ۔ میڈیا سے بات چیت کے دوران رکن اسمبلی پردیپ لاريا نے کہا کہ وہ ناراض نہیں ہیں، اور وہ  سی ایم ہاؤس اور بی جے پی ہیڈ کوارٹر آتے جاتے رہتے ہیں ۔
      First published: