உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    اقلیتی طلبہ کے  تعلیمی حقوق کو یقینی بنانے کے لئے مختلف پہلوؤں پر غوروخوض

    بھوپال : مد ھیہ پردیش مدرسہ بورڈ اور نیشنل کمیشن فار پروٹیکشن آف چائلڈ رائٹس کے مشترکہ بینر تلے بھوپال میں ایک روزہ قومی ورکشاپ کا انعقاد کیا گیا ۔ ورکشاپ میں بڑی تعداد میں ماہرین تعلیم نے شرکت کی اوراس طرح کی ورکشاپ کو وقت کی اہم ضرورت سے تعبیر کیا ۔

    بھوپال : مد ھیہ پردیش مدرسہ بورڈ اور نیشنل کمیشن فار پروٹیکشن آف چائلڈ رائٹس کے مشترکہ بینر تلے بھوپال میں ایک روزہ قومی ورکشاپ کا انعقاد کیا گیا ۔ ورکشاپ میں بڑی تعداد میں ماہرین تعلیم نے شرکت کی اوراس طرح کی ورکشاپ کو وقت کی اہم ضرورت سے تعبیر کیا ۔

    بھوپال : مد ھیہ پردیش مدرسہ بورڈ اور نیشنل کمیشن فار پروٹیکشن آف چائلڈ رائٹس کے مشترکہ بینر تلے بھوپال میں ایک روزہ قومی ورکشاپ کا انعقاد کیا گیا ۔ ورکشاپ میں بڑی تعداد میں ماہرین تعلیم نے شرکت کی اوراس طرح کی ورکشاپ کو وقت کی اہم ضرورت سے تعبیر کیا ۔

    • Pradesh18
    • Last Updated :
    • Share this:

      بھوپال : مد ھیہ پردیش مدرسہ بورڈ اور نیشنل کمیشن فار پروٹیکشن آف چائلڈ رائٹس کے مشترکہ بینر تلے بھوپال میں ایک روزہ قومی ورکشاپ کا انعقاد کیا گیا ۔ ورکشاپ میں بڑی تعداد میں ماہرین تعلیم نے شرکت کی اوراس طرح کی ورکشاپ کو وقت کی اہم ضرورت سے تعبیر کیا ۔  اس دوان اقلیتی طلبہ کے  تعلیمی حقوق کو یقینی بنانے کے لئے مختلف پہلوؤں پر غور و خوض کیا گیا ۔
      بھوپال کے مانس بھون میں منعقدہ ورکشاپ میں جہاں مدارس کے طلبہ کو حکومت کی جانب سے دی جانے والی سہولیات کا ذکر کیا گیا ، وہیں اقلیتی طلبہ کے ڈراپ آؤٹ پر بھی مقررین نے اظہار خیال کیا ۔ ورکشاپ کا افتتاح مدھیہ پردیش کے وزیر برائے اسکولی تعلیم دیپک جوشی نے کیا ۔ اس موقع پر وزیر تعلیم نے حکومت کی جانب سے ریاست کے مدرسہ بورڈ کے تحت چلنے والے مدارس کی سہولیات کا ذکر کیا ، وہیں مدارس میں کوالٹی ایجوکیشن کی بھی بات کہی۔
      ورکشاپ میں مد ھیہ پردیش مدرسہ بورڈ کی کارکردگی کی جہاں بات کی گئی وہیں مدارس اسلامیہ کے نصاب کو جدید تعلیم سے جوڑنے پر بھی زور دیا گیا ۔ مقررین کا کہنا تھا کہ تعلیم کا حصول ہر انسان کا بنیادی فرض ہے اور مدراس کے طلبہ کو بھی مدارس کی تعلیم کے حصول کے ساتھ حکومت کی وہ تمام سہولیات مہیا کی جانی چاہیئں ، جو دیگر اسکول کے طلبا کو ملتی ہیں ۔ ورکشاپ میں اقلیتی طلبہ کے تعلیمی حقوق کے لئے تحریک چلانے پر بھی زور دیا گیا ، تاکہ تمام اقلیتی طلبہ خود کو زیور تعلیم سے آراستہ کر کے ملک و قوم کا نام روشن کر سکیں ۔

      First published: