ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

کورونا وائرس کا قہر ، مدھیہ پردیش کے سبھی شہروں میں ساٹھ گھنٹے کا مکمل لاک ڈاون

وزیر اعلی شیوراج سنگھ نے کہا کہ پورے مدھیہ پردیش میں سبھی شہروں میں جمعہ کی شام چھ بجے سے لیکر سنیچر ، اتوار اور پیر کی صبح چھ بجے تک شہر علاقہ بند رہیں گے ، لاک ڈاؤن رہے گا ۔ باقی جن شہروں میں کورونا کو لیکر قہر بڑھا ہے ، مریضوں کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے ، وہاں کرائسس مینجمنٹ کمیٹی کی میٹنگ کرکے ضروری فیصلہ کریں گے ۔

  • Share this:
کورونا وائرس کا قہر ، مدھیہ پردیش کے سبھی شہروں میں ساٹھ گھنٹے کا مکمل لاک ڈاون
کورونا وائرس کا قہر ، مدھیہ پردیش کے سبھی شہروں میں ساٹھ گھنٹے کا مکمل لاک ڈاون

بھوپال : مدھیہ پردیش میں حکومت کی تمام احتیاطی تدابیر کے باوجود کورونا کا قہر جاری ہے۔ ریاست میں کورونا کے ایکٹیو مریضوں کی تعداد اٹھائیس ہزار سے تجاوز کر گئی ہے ۔ وہیں چوبیس گھنٹے میں کورونا کے نئے مریضوں کی تعداد چارہزار تین سو چوبیس درج کی گئی ہے ۔ ریاست میں کورونا کے بڑھتے قہر کے بیچ حکومت نے جہاں آج سے چھندواڑہ میں ایک ہفتے کا مکمل لاک ڈاون کردیا ہے ، وہیں شاجاپور میں دودن کا لاک ڈاون کیا گیا ہے ۔ جبکہ آنے والے جمعہ کی شام چھ بجے سے پیر کی صبح چھ بجے تک ریاست کے سبھی اضلاع میں ساٹھ گھنٹے کے لئے مکمل لاک ڈاون ہوگا۔


وزیر اعلی شیوراج سنگھ نے کابینی وزرا اور کرائسس مینجمنٹ کمیٹی کی میٹنگ کے بعد ریاست میں کورونا کے قہر کو روکنے کے لئے سخت قدم اٹھایا ہے ۔ وزیر اعلی شیوراج سنگھ کہتے ہیں کہ ابھی کووڈ کو لے کر میں نے اعلی میٹنگ میں جائزہ لیا ہے ۔ پورے مدھیہ پردیش میں سبھی شہروں میں جمعہ کی شام چھ بجے سے لیکر سنیچر ، اتوار اور پیر کی صبح چھ بجے تک شہر علاقہ بند رہیں گے ، لاک ڈاؤن رہے گا ۔ باقی جن شہروں میں کورونا کو لیکر قہر بڑھا ہے ، مریضوں کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے ، وہاں کرائسس مینجمنٹ کمیٹی کی میٹنگ کرکے ضروری فیصلہ کریں گے ۔ ہم بڑے شہروں میں کنٹینمنٹ ایریا بھی بنا رہے ہیں ۔ کل ہم نے چھتیس ہزار بیڈ کا فیصلہ کیا تھا ، مگر آج کورونا مریضوں کی بڑی تعداد کو دیکھتے ہوئے ایک لاکھ بیڈ کا انتظام کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔


وزیر اعلی شیوراج سنگھ کے فیصلہ کے بعد رتلام میں جمعہ کی شام چھ بجے سے نو دن کے لئے جہاں مکمل لاک ڈاون کا فیصلہ کیا گیا ہے ، وہیں راجدھانی بھوپال کے کولار اور باوڑیا کلاں علاقہ کے سات وارڈوں میں نو دن کے لئے مکمل لاک ڈاون کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ راجدھانی بھوپال میں لاک ڈاون کو لے کر ضلع انتظامیہ کی میٹنگ کے بعد بھوپال کلکٹر اویناش لا وانیا نے بتایا ہے کہ بھوپال میں جمعہ کی شام چھ بجے سے پیر کی صبح چھ بجے تک مکمل لاک ڈاون تو رہے گا ۔ اس کے ساتھ کولار اور باوڑیا کلاں کے وارڈ نمبر اسی ، اکیاسی، بیاسی ، تیراسی ، چوراسی ، باون اور ترپن میں مکمل نو دن کے لئے لاک ڈاون کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ شہر میں یہ علاقے ہیں ، جہاں سب سے زیادہ کورونا کے مریض پائے گئے ہیں ۔


وہیں کانگریس نے کورونا قہر اور لاک ڈاون کو حکومت کی ناکامی سے تعبیر کیا ہے۔ مدھیہ پردیش کانگریس کے ترجمان بھوپیندر سنگھ کہتے ہیں کہ ریاست کے اسپتالوں میں دوا اور آکسیجن کی قلت جاری ہے ۔ ریمڈیسیور انجیکشن کی کالا بازاری ہو رہی ہے اور سرکار کی نیند نہیں کھل رہی ہے ۔ بھوپال، اندور اور ساگر کے اسپتالوں میں آکسیجن کی کمی کو لے کر کیا کیا ہو رہا ہے ، مگر حکومت آکسیجن کی سپلائی کو ابھی تک یقینی نہیں بنا سکی ہے ۔ بھوپال کے حمیدیہ اسپتال کے پوسٹ مارٹم روم سے نعش بدل جاتی ہے اور کسی کو خبر نہیں ہوتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ سرکار ایک طرف لاک ڈاون لگاتی ہے اور دوسری جانب شراب کی دکانیں رات میں بارہ بجے تک کھلتی ہیں تو یہ کیا ہے ۔ کیا شراب کی بوتل لاک ڈاون میں گھومنے کا پاس ہے۔ حکومت کو اب بھی وقت ہے کہ کورونا کو روکنے کے لئے عملی اقدام کرنا چاہیئے جو حکومت نہیں کررہی ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Apr 08, 2021 09:39 PM IST