ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

Assembly Election Results 2021: اسمبلی انتخابات کے ووٹوں کی گنتی جاری، ووٹروں نے کس کے حق میں سنایا ہے فیصلہ، آج صاف ہوگی تصویر

پانچوں ریاستوں میں ووٹوں کی گنتی 8 بجے ست شروع ہوگئی۔ ملک کی 5 ریاستوں (مغربی بنگال ، تمل ناڈو ،کیرالا ، آسام اور پڈوچیری) کے اسمبلی انتخابات کے نتائج کا اعلان ہوگا۔

  • Share this:

Assembly Election Results 2021 : پانچوں ریاستوں میں ووٹوں کی گنتی 8 بجے ست شروع ہوگئی۔  ملک کی 5 ریاستوں (مغربی بنگال ، تمل ناڈو ،کیرالا ، آسام اور پڈوچیری) کے اسمبلی انتخابات کے نتائج کا اعلان ہوگا۔ مغربی بنگال میں کانٹے کی ٹکر دیکھنے کو مل رہی ہے۔  ایسے میں اب ممتا کو حاصل ہوگا تیسری بار عوام کا اعتماد یا بی جے پی نئی تاریخ کی عبارت کرے گی ۔ آسام ، کیرالہ اور پڈوچیری میں ہوگا کوئی اُلٹ پھیر یا برسر اقتدار اتحاد کے ہاتھوں ہی رہے گی عنان حکومت۔ ووٹروں نے کس کے حق میں سنایا ہے فیصلہ  آج  یہ تصویر صاف ہوجائے گی۔ وہیں سیاسی قدآوروں جیہ للتا اور کروناندھی کے گزرجانے کے بعد ہوئے پہلے اسمبلی انتخابات دونوں علاقائی پارٹیوں کے لیے اہمیت کے حامل ہیں۔ تمل ناڈو میں سیاسی جانشنوں کا امتحان۔  ہے۔ اب یسے میں اے آئی اے ڈی ایم کے اور ڈی ایم کے کی سیاسی مستقبل کا رُخ نتائج  طے کریں گے۔

۔ممتا بنرجی بنگال کے قلعے کو بچانے میں کامیاب ہوئیں یا بی جے پی نے وہاں 'کمل' کھلایا ہے۔ اس کے ساتھ ، نگاہ آسام پر بھی ہے ، جہاں بی جے پی اقتدار بچانے کی کوشش کر رہی ہے۔جبکہ کیرالا ، پڈوچیری اور تمل ناڈو کے نتائج بھی اہم مانے جارہے ہیں۔


کیرالہ کے بارے میں بات کریں تو ، پنارائی وجین کی پارٹی ایل ڈی ایف دوبارہ حکومت تشکیل دے سکتی ہے ، تمام ایگزٹ پول اس کا دعویٰ کر رہے ہیں۔ تمل ناڈو میں ڈی ایم کے کو اقتدار ملنے کا امکان ہے۔ کانگریس اور بی جے پی میں سے پڈوچیری کی اقتدار کی کنجی کس کو ملے گی ؟ یہ آج آنے انتخابات نتائج کے ساتھ ہی صاف ہوگا ۔

مغربی بنگال میں اس وقت پوسٹل بیلٹوں کی گنتی جاری ہے ۔اب تک 138 سیٹوں پر رحجانات آرہے ہیں ۔ جن میں ٹی ایم سی72 ، بی جے پی 63 سیٹوں پر آگے ہے۔ اسی وقت ، یونائیٹڈ فرنٹ آف لیفٹ ، جس میں کانگریس بھی شامل ہے 2 نشستوں پر آگےہیں۔جبکہ 1سیٹ پردیگر آگے ہیں۔وہیں نندی گرام سے ممتا بنرجی پیچھے چل رہی ہے۔ مرکزی وزیر بابول سوپریوٹولی گنج سے آگے چل رہے ہیں۔



آسام میں این ڈی اے آگے

آسام کے تازہ ترین رجحانات کے مطابق ، این ڈی اے35 اور یو پی اے 19 نشستوں پر آگے ہیں ۔ آسام میں اسمبلی کی 126 سیٹیں ہیں۔ پہلے مرحلے میں آسام کے 12 اضلاع میں 47 اسمبلی حلقوں میں پولنگ کی گئی۔ ان میں سے بی جے پی نے 39 نشستوں پر امیدوار کھڑے کیے تھے اور باقی نشستوں پر آسام گن پریشد کے اس کے امیدواروں نے اپنے امیدوار کھڑے کیے تھے۔ اسی دوران کانگریس نے 43 نشستوں کے لئے امیدوار کھڑے کیے تھے۔


تمل ناڈو میں ڈی ایم کے آگے

تمل ناڈو کے بارے میں بات کریں تو ، وہاں پوسٹل بیلٹ کی گنتی میں ڈی ایم کے78 سیٹوں پر آگے ہے۔ اے آئی اے ڈی ایم کے اتحاد 55سیٹوں پر آگے چل رہا ہے۔


مغربی بنگال ، تمل ناڈو ، آسام ، کیرالہ اور پوڈوچیری سمیت پانچ ریاستوں اور مرکزی علاقوں کی 822 اسمبلی نشستوں پر ووٹوں کی گنتی جاری ہے۔ اس دوران کووڈ ۔19 قوانین کی سختی سے عمل کیا جائے گا۔ ہفتہ کو الیکشن کمیشن نے یہ جانکاری فراہم کی تھی ۔


کمیشن نے کہا کہ پانچ ریاستوں میں کل 2،364 مراکز میں ووٹوں کی گنتی کی جائے گی۔ سال 2016 میں گنتی کے مراکز کی کل تعداد 1،002 تھی۔ اس بار کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لئے جسمانی فاصلاتی اصول پر عمل کرنے کے لئے انتخابات کی وجہ سے گنتی مراکز کی تعداد میں 200 فیصد اضافہ کیا گیا ہے۔ مغربی بنگال میں سب سے زیادہ تعداد 1111 ، کیرالا میں 633 ، آسام میں 331 ، تمل ناڈو میں 256 اور پڈوچیری میں 31 مراکز ہیں۔
Published by: Sana Naeem
First published: May 02, 2021 09:56 AM IST