ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

سرکاری اسکول کے ٹوائلیٹ میں بچی کے ساتھ ہوا یہ گھنونا کام! جھاڑیوں میں خون سے لتھ پتھ ملی ایک اور معصوم

حیدرآباد اور اناؤ کی وارداتوں سے لوگوں کا غصہ ابھی خاموش بھی نہیں ہو پایا تھا کہ جبل پورمیں دومعصوم بچیوں کے کے ساتھ درندگی نے پھر انسانیت کوشرمسار کردیا ہے۔ پہلا واقعہ پناگر تھانہ کے تحت ایک سرکاری ہائر سیکنڑری اسکول کا ہے۔

  • Share this:
سرکاری اسکول کے ٹوائلیٹ میں بچی کے ساتھ ہوا یہ گھنونا کام! جھاڑیوں میں خون سے لتھ پتھ ملی ایک اور معصوم
علامتی تصویر

جبل پور میں دو بچیوں کے ساتھ زیادتی کی خبر سامنے آئی ہے۔  پہلا واقعہ پناگر کا ہے یہاں ایک سرکاری اسکول میں پانچویں کلاس کی بچی کے ریپ کی شکایت پولیس میں درج کرائی گئی ہے۔ دوسرا معاملہ گورا بازار کا ہے۔ یہاں جھاڑیوں میں ایک بچی بری طرح زخمی پڑی ملی۔ بچی کو ہندووادی تنظیموں نے اسپتال مین داخل کرایا اور پولیس کو خبر دی۔ پولیس نے دونوں ہی معاملوں میں کیس درج کرکے جانچ شروع کردی ہے۔

حیدرآباد اور اناؤ کی وارداتوں سے لوگوں کا غصہ ابھی خاموش بھی نہیں ہو پایا تھا کہ جبل پورمیں دومعصوم بچیوں کے کے ساتھ درندگی نے پھر انسانیت کوشرمسار کردیا ہے۔ پہلا واقعہ پناگر تھانہ کے تحت ایک سرکاری ہائر سیکنڑری اسکول کا ہے۔ یہاں پولیس کو شکایت ملی ہے کہ درجہ 5 میں پڑھنے والی نابالغ طابہ کے ساتھ اسکول کے ٹوائلیٹ میں ریپ کی واردات کو انجام دیا گیا۔ ریپ کا الزام ایک لڑکے پر لگا ہے۔ بچی نےجو جانکاری دی ہے اس کے مطابق ملزم اسکول یونیفارم میں تھا۔ پولیس جانچ کر رہی ہے کہ ملزم اسکول کا ہی کوئی طالب علم تھا یا کوئی باہر کا تھا۔


وہیں دوسرا واقعہ گورا بازار علاقے کا ہے۔ یہاں 6 سال کی معصوم بچی سڑک کنارے بنے نالے کے پاس جھاڑیوں  میں پڑی ملی۔ بچی بری طرح زخمی تھی۔ اس کے پورے جسم پر مارپیٹ اور چوٹ کے نشان ہیں۔ زخموں سے خون بہہ رہا تھا۔ اس کی بھنک جیسے ہی ہندووادی تنظیموں کو لگی وہ فورا وہاں پہنچے اور پولیس کو اس واقعے کی اطلاع دی۔


ان دونو ہی واردات کے بعد جبلپور کی پولیس اور ضلع انچارچ ایکشن موڈ پر آگئے ہیں۔ ایس پی امت سنگھ نے دونوں معاملوں کی گہرائی سے جانچ کرنے اور ملزمین کو فوراً گرفتار کرنے کی ہدایات دی ہیں۔
First published: Dec 13, 2019 12:46 PM IST