ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

ایک شادی ایسی بھی ، جہاں دولہا نے تمام تحائف کردئے واپس

دولہا نے نہ صرف دلہن والوں کی طرف سے کوئی تحفہ لینے سے انکار کر دیا، بلکہ شادی کی تقریب میں آئے تمام مہمانوں سے بھی کوئی تحفہ قبول نہیں کیا

  • UNI
  • Last Updated: Apr 21, 2017 12:47 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
ایک شادی ایسی بھی ، جہاں دولہا نے تمام تحائف کردئے واپس
علامتی تصویر

بیتول: ملک کے مختلف حصوں سے اکثر جہیز کا مطالبہ کرنے والے خاندان جہیز نہ ملنے پر بارات واپس لے جا تے یا پھر شادی سے متعلق کوئی کیس تھانے میں درج ہوتا ہے، لیکن یہاں مدھیہ پردیش کے بیتول ضلع سے شادیوں کے اس موسم میں اس کے برعکس ایک خوشگوار خبر سامنے آئی ہے۔

ضلع کے ملتائي علاقے کے گرام هیوركھیڑ میں کل شام ایک شادی میں دولہا نے نہ صرف دلہن والوں کی طرف سے کوئی تحفہ لینے سے انکار کر دیا، بلکہ شادی کی تقریب میں آئے تمام مہمانوں سے بھی کوئی تحفہ قبول نہیں کیا۔ انتہائی سادگی سے ہوئی اس شادی کے چرچے پورے علاقے میں ہورہے ہیں۔

ذرائع کے مطابق ملتائي تحصیل کے هیوركھیڑ کے رہنے والے سبھاش كمبھارے کے بیٹے ہیمنت اور اكلهرا کے دھن راج جھربڑے کی بیٹی کی شادی کل گایتری خاندان سے منسلک تمام رسم و رواج کے مطابق ہوئی۔ تمام لوگ دولہا دلہن کے لئے تحفہ لائے تھے، لیکن دولہا نے جہیز میں آئے کپڑے، زیورات اور برتن سمیت تمام اشیاء لینے سے انکار کر دیا۔ دولہا نے کہا کہ مجھے اس جہیز میں سے ایک روپیہ بھی نہیں چاہئے۔ دلہن والے اپنی بیٹی اور اس کی زندگی ہمارے حوالے کر رہے ہیں، یہی ہمارا سب سے بڑا جہیز ہے۔

First published: Apr 21, 2017 12:47 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading