உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Madhya Pradesh : طلبہ نے کیا احتجاج تو حجاب میں امتحان دینے آئی طالبہ کو ملی یہ ہدایت، دیکھئے Video

    Madhya Pradesh : طلبہ نے کیا احتجاج تو حجاب میں امتحان دینے آئی طالبہ کو ملی یہ ہدایت، دیکھئے Video

    Madhya Pradesh : طلبہ نے کیا احتجاج تو حجاب میں امتحان دینے آئی طالبہ کو ملی یہ ہدایت، دیکھئے Video

    MP Hijab Row: تازہ معاملہ ستنا ضلع کا ہے ۔ یہاں ایک کالج میں امتحان دینے ایک طالبہ حجاب پہن کر پہنچ گئی ۔ اس دوران وہاں موجود کچھ طلبہ نے اس بات کی مخالفت کی ۔ اس کے بعد کالج کے پرنسپل نے طلبہ سے تحریری طور پر لیا کہ وہ اگلی مرتبہ امتحان دینے کیلئے صرف کالج کی ڈریس میں ہی آئے گی ۔

    • Share this:
      ستنا : کرناٹک سے شروع ہوا حجاب تنازع (Hijab Row) مدھیہ پردیش بھی پہنچ گیا ہے ۔ تازہ معاملہ ستنا ضلع کا ہے ۔ یہاں ایک کالج میں امتحان دینے ایک طالبہ حجاب پہن کر پہنچ گئی ۔ اس دوران وہاں موجود کچھ طلبہ نے اس بات کی مخالفت کی ۔ اس کے بعد  کالج کے پرنسپل نے طلبہ سے تحریری طور پر لیا کہ وہ اگلی مرتبہ امتحان دینے کیلئے صرف کالج کی ڈریس میں ہی آئے گی ۔

      جانکاری کے مطابق دراصل ستنا ضلع کے ڈگری کالج میں ایم کام تھرڈ سیمیسٹر کے امتحانات ہورہے ہیں ۔ اس دوران دروازے پر طلبہ کی لائن لگی تھی ۔ اسی لائن میں ایک طالبہ حجاب پہن کر کھڑی ہوگئی ۔ اس پر کچھ طلبہ نے اس کی مخالفت کی ۔ طلبہ کی مخالفت کو دیکھتے ہوئے کالج انتظامیہ نے فورا طالبہ کو امتحان دینے سے روک دیا اور ہدایت دی ۔ انچارج پرنسل وشیش سنگھ نے طالبہ سے کہا کہ وہ اگلی مرتبہ سے کالج کی ڈریس میں امتحان دینے کیلئے آئے گی ۔ اس پر طالبہ نے بھی رضامندی ظاہر کی ۔


      کالج انتظامیہ نے طالبہ سے یہ بات اس کے ایڈمٹ کارڈ پر ہی لکھوا لی ہے ۔ اس کے بعد کالج انتظامیہ نے طالبہ کو امتحان دینے دیا ۔ اس پورے واقعہ کا ویڈیو بھی بنایا گیا ، جو اب سوشل میڈیا پر وائرل ہورہا ہے ۔ اس معاملہ پر کالج انتظامیہ نے کہا کہ کالج میں صرف ڈریس کوڈ میں ہی امتحان دینے کا حکم جاری کیا گیا ہے ۔ ہر طالب علم کو کالج ڈریس کوڈ میں ہی آنا ہوگا ، اس لئے طالبہ کو فی الحال ہدایت دے کر امتحان دینے کی اجازت دی گئی ہے ۔

      وہیں مخالفت کررہے طلبہ کا کہنا ہے کہ کالج میں طلبہ کو صرف ڈریس کوڈ میں آنے کا ہی ضابطہ ہے ۔ اگر کوئی اس پر عمل نہیں کرے گا تو اس کی مخالفت کی جائے گی ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: