உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    قابل اعتراض حالت میں ملا عاشق جوڑا تو مقامی لوگوں نے کیا یہ خوفناک کام ، پولیس کے بھی چھوٹ گئے پیسنے

    قابل اعتراض حالت میں ملا عاشق جوڑا تو مقامی لوگوں نے کیا یہ خوفناک کام ، پولیس کے بھی چھوٹ گئے پیسنے

    قابل اعتراض حالت میں ملا عاشق جوڑا تو مقامی لوگوں نے کیا یہ خوفناک کام ، پولیس کے بھی چھوٹ گئے پیسنے

    صاحب گنج میں قابل اعتراض حالت میں عاشق جوڑے کو پکڑنے کے بعد مقامی لوگوں نے دونوں کو چپل اور جوتے کا ہار پہنا کر گھومایا اور اس دوران معشوقہ کے ساتھ چھیر چھاڑ بھی کی ۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
      جھارکھنڈ کے صاحب گنج میں قابل اعتراض حالت میں عاشق جوڑے کو پکڑنے کے بعد مقامی لوگوں نے ان کا استحصال کیا ۔ دونوں کو چپل اور جوتے کا ہار پہنا کر گاوں میں گھمایا اور پھر دونوں کو تقریبا 16 گھنٹوں تک یرغمال بنا کر رکھا گیا ۔ دیہی لوگوں نے معشوقہ کے ساتھ فحش حرکتیں بھی کیں ، جس کا ویڈیو بناکر سوشل میڈیا پر وائرل کردیا گیا ۔ بعد میں کافی جدوجہد کے بعد پولیس نے دونوں کو دیہی لوگوں کی گرفت سے آزاد کرایا ۔ یہ واقعہ ضلع کے رانگا تھانہ حلقہ کے کشوپہاڑ گاوں میں پیش آیا ۔

      اطلاعات کے مطابق قابل اعتراض حالت میں دیکھنے پر دیہی لوگ جوڑے کو پکڑ کر پردھان کے پاس لے گئے اور پھر عاشق پر پانچ لاکھ روپے کا جرمانہ لگایا گیا ۔ معشوقہ ایک آدیواسی لڑکی ہے ، جو شادی شدہ ہے ۔ دونوں کے درمیان طویل عرصہ سے معاشقہ چل رہا تھا ۔ حالانکہ عاشق کے ساتھ  پکڑے جانے پر لوگوں نے اس کی شادی عاشق سے کروانے کی کوشش کی تو معشوقہ نے شادی کرنے سے انکار کردیا ، جس کے بعد لوگوں نے معشوقہ کے ساتھ چھیڑ چھاڑ بھی کی ، جس کا ویڈیو گاوں کے دیگر لوگوں نے بنا لیا اور سوشل میڈیا پر وائرل کردیا ۔

      قابل اعتراض حالت میں دیکھنے پر دیہی لوگ جوڑے کو پکڑ کر پردھان کے پاس لے گئے اور پھر عاشق پر پانچ لاکھ روپے کا جرمانہ لگایا گیا ۔
      قابل اعتراض حالت میں دیکھنے پر دیہی لوگ جوڑے کو پکڑ کر پردھان کے پاس لے گئے اور پھر عاشق پر پانچ لاکھ روپے کا جرمانہ لگایا گیا ۔


      لڑکی تین پہاڑ علاقہ کے باکو ڈیہہ کی رہنے والی ہے ۔ شیوا پہاڑ میں وہ اپنے ایک رشتہ دار کے یہاں رہتی ہے ۔ اس کا طویل عرصہ سے ایک نوجوان کے ساتھ معاشقہ چل رہا تھا ۔ ہفتہ کو دونوں کو گاوں کے نزدیک ریلوے لائن کے پاس کچھ مقامی لوگوں نے قابل اعتراض حالت میں پکڑ لیا ، جس کے بعد دونوں کو گاوں لاکر جوتے چپل کا ہار پہناکر گھمایا گیا ۔ اس دوران معشوقہ کی ساڑی کھول کر اس کے ساتھ چھیڑ چھاڑ بھی کی گئی ۔ مقامی لوگوں نے تقریبا 16 گھنٹوں تک دونوں کو یرغمال بنا کر رکھا ۔ بعد میں پولیس نے کافی جدوجہد کے بعد دونوں کو آزاد کرایا ۔

      بڑہروا ڈی ایس پی پرمود مشرا نے بتایا کہ عاشق جوڑے کو قابل اعتراض حالت میں پکڑا گیا تھا ، جس کے بعد مقامی لوگوں نے دونوں کو یرغمال بنالیا تھا ۔ اس دوران لڑکی سے چھیڑ چھاڑ کی گئی ۔ پولیس اس معاملہ میں کیس درج کرکے جانچ کررہی ہے ۔ اطلاع ملنے کے بعد فوری کارروائی کرتے ہوئے دونوں کو مقامی لوگوں سے آزاد کرایا گیا ۔ چھیڑ چھاڑ کا ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل کرنے والوں پر بھی ایکشن لیا جائے گا ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: