ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

جھارکھنڈ: حج ہاوس میں سول سروسز کی تیاری کیلئے کوچنگ سینٹر کھولنے کا مطالبہ، حاجی حسین انصاری کا تھا خواب

رانچی سول کورٹ کے معروف وکیل ممتاز احمد خان نے کہا کہ حاجی حسین انصاری کے انتقال سے ریاست کے مسلم اقلیتی طبقہ کو خاصا نقصان ہوا ہے۔ انہوں نے واضح کیا کہ وزیر اقلیتی فلاح حاجی حسین انصاری نے جھارکھنڈ حج ہائوس میں اقلیتی اور پسماندہ طبقات کے طلباء کے لئے سول سروسیز امتحانات کی تیاری کے لئے کوچنگ سینٹر کے قیام کا منصوبہ بنایا تھا۔

  • Share this:
جھارکھنڈ: حج ہاوس میں سول سروسز کی تیاری کیلئے کوچنگ سینٹر کھولنے کا مطالبہ، حاجی حسین انصاری کا تھا خواب
علامتی تصویر

جھارکھنڈ کے وزیر اقلیتی فلاح حاجی حسین انصاری نے ممبئی حج ہائوس میں سول سروسیز کی تیاری کے لئے چل رہے کوچنگ سینٹر کی طرز پر رانچی کے کڈرو واقع عالیشان حج ہاوس میں کوچنگ سینٹر کے قیام کا منصوبہ بنایا تھا ۔ اس تعلق سے انہوں نے ریاستی حکومت کو ایک تجویز بھی پیش کی تھی لیکن اس پر عمل آوری سے قبل ہی حاجی حسین انصاری کا انتقال ہوگیا ۔ ریاست کے دانشوران اور سماجی کارکنان نے مرحوم حاجی حسین انصاری کے اس خواب کو پورا کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔


رانچی سول کورٹ کے معروف وکیل ممتاز احمد خان نے کہا کہ حاجی حسین انصاری کے انتقال سے ریاست کے مسلم اقلیتی طبقہ کو خاصا نقصان ہوا ہے۔ انہوں نے واضح کیا کہ وزیر اقلیتی فلاح حاجی حسین انصاری نے جھارکھنڈ حج ہائوس میں اقلیتی اور پسماندہ طبقات کے طلباء کے لئے سول سروسیز امتحانات کی تیاری کے لئے کوچنگ سینٹر کے قیام کا منصوبہ بنایا تھا۔ انہوں نے کہا کہ اس منصوبہ کو پایہ تکمیل تک پہنچانے کے لئے حسین انصاری نے ریاستی حکومت کو ایک تجویز بھی پیش کی تھی۔ ممتاز خان نے حسین انصاری کے انتقال پر صدمے کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس تجویز پر عمل آوری سے قبل ہی حاجی حسین انصاری کا انتقال ہو گیا۔ ممتاز خان نے ریاست کی ہیمنت سورین حکومت سے مطالبہ کیا کہ مرحوم حاجی حسین انصاری کے خواب کو پورا کرتے ہوئے حج ہائوس میں اقلیتی اور پسماندہ طبقات کے طلباء کے لئے سول سروسیز امتحانات کی تیاری کے مقصد سے کوچنگ سینٹر کا قیام کر انہیں سچا خراج عقیدت پیش کیا جائے۔


وہیں بوکارو کے معروف سماجی کارکن عبدالواحد خان نے کہا کہ حج ہاوس میں کوچنگ سینٹر کے قیام سے سول سروسیز امتحانات میں ریاست کے غریب اقلیتی اور پسماندہ طبقات کے طلباء کی کامیابی کا امکان روشن ہوگا ۔ انہوں نے کہا کہ ریاست میں سرکاری اعداد و شمار کے مطابق تقریباً ١٥ فیصدی مسلم اقلیتی آبادی ہے ۔ عبدالواحد خان نے کہا کہ ریاست کا مسلم اقلیتی طبقہ تمام شعبہ حیات میں پسماندگی کا شکار ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ریاست کی تشکیل کے بعد سے اب تک مسلم اقلیت کی پسماندگی دور کرنے کے تعلق سے کسی بھی حکومت نے مناسب قدم نہیں اٹھایا ہے۔


عبدالواحد خان نے حاجی حسین انصاری کی اس تجویز پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے حکومت سے مطالبہ کیا کہ حج ہائوس میں کوچنگ سینٹر کا جلد از جلد قیام کرکے مرحوم حاجی حسین انصاری کے خواب کو حقیقت بنایا جائے تاکہ ریاست کے غریب مسلم اقلیتی طلباء کی تعلیمی ترقی کا امکان روشن ہو سکے۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Oct 13, 2020 09:19 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading