உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Jharkhand: رانچی پہنچا جمعیت علما ہند کا وفد، مہلوکین کے اہل خانہ کو مدد کی یقین دہانی کرائی

    Jharkhand: رانچی پہنچا جمعیت علما ہند کا وفد، مہلوکین کے اہل خانہ کو مدد کی یقین دہانی کرائی

    Jharkhand: رانچی پہنچا جمعیت علما ہند کا وفد، مہلوکین کے اہل خانہ کو مدد کی یقین دہانی کرائی

    Ranchi Violence : صدر جمعیۃ علماء ہند مولانا محمود اسعد مدنی کی ہدایت پر جمعیۃ کے وفد نے فساد زدہ علاقہ ہند پیڑھی اور گدڑی چوک وغیرہ کا دورہ کیا اور مرنے والے محمد مدثر اور محمد ساحل کے اہل خانہ سے ملاقات کی ۔

    • Share this:
      رانچی : رانچی میں پیغمبر اسلام کو لے کر قابل اعتراض تبصرے کے خلاف ہوئے مظاہرے کے دوران فائرنگ میں دونوجوانوں کی موت ہوگئی تھی نیز ایک درجن سے زائد افراد زخمی ہوگئے تھے ۔ ان تمام حالات کا جائزہ لینے کے لئے صدر جمعیۃ علماء ہند مولانا محمود اسعد مدنی کی ہدایت پر جمعیۃ کے وفد نے فساد زدہ علاقہ ہند پیڑھی اور گدڑی چوک وغیرہ کا دورہ کیا اور مرنے والے محمد مدثر اور محمد ساحل کے اہل خانہ سے ملاقات کی ۔ اس وفد کی قیادت ناظم عمومی جمعیۃ علما ہند مولانا حکیم الدین قاسمی نے کی ۔ پندرہ سالہ محمد مدثر ہند پیڑھی محلہ کا رہنے والا تھا ، جمعیۃ کے وفد نے اس کے والد پرویز عالم سے ملاقات کی اور صدر جمعیۃ مولانا محمود اسعد مدنی کی طرف سے تعزیت کی اور کہا کہ اس دکھ کی گھڑی میں جمعیۃ کے خدام ان کے ساتھ کھڑے ہیں ۔

      اس کےعلاوہ گدڑی چوک پر 22 سالہ محمد ساحل کے والد محمد فضل بھی جمعیۃ کے وفد سے ملتے ہوئے آبدیدہ ہوگئے ۔ ان کے ساتھ بھی ہمدردی کا مظاہرہ کرتے ہوئے وفد نے ہر ممکن مدد کی یقین دہانی کرائی ۔ وفد نے ہسپتال میں زیر علاج محمد صابر وغیرہ سے ملاقات کرنے کی کوشش کی ، لیکن پولس حصار کی وجہ سے ملاقات ممکن نہ ہوسکی۔

       

      یہ بھی پڑھئے: یوگی سرکار کی بلڈوزر کارروائی کے خلاف جمعیۃ علما ہند کی سپریم کورٹ میں عرضی


      جمعیۃ کے وفد نے اس کے بعد رانچی کے ڈپٹی کمشنر شری چھوی رنجن سے ملاقات کرکے مرنے والوں کے اہل خانہ کو انصاف دلانے اور معقول معاوضہ دینے کا مطالبہ کیا ۔ اس موقع پر مولانا حکیم الدین قاسمی جنرل سکریٹری جمعیۃ علماء ہند نے کہا کہ جمعیۃ علماء ہند یہ مطالبہ کرتی ہے کہ ان پولس افسران کے خلاف سخت کارروائی کی جائے جو گولی چلانے کے عمل میں ملوث تھے ، نیز مرنے والوں کے اہل خانہ کو معقول معاوضہ دیا جائے اور گھر کے کسی بھی لائق ممبر کو نوکری دی جائے ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: بنگال تشدد میں اب تک 200 سے زائد افراد گرفتار، 42 معاملات درج


      جمعیۃ علماء کے مطالبہ پر ڈی سی نے کہا کہ وہ ان کے مطالبات پر سنجیدگی سے غور کررہے ہیں اور ہر ممکن طور سے متاثرہ خاندانوں کی مدد کی جائے گی ۔ اس دوران جمعیۃ کے وفد نے ڈی آئی جی انیس گپتا ، اے ڈی جی پی سنجے لاتکر سے بھی ملاقات کی ۔

      جمعیۃ علما ہند کے وفد میں جنرل سکریٹری مولانا حکیم الدین قاسمی کے علاوہ جمعیۃ علماء جھارکھنڈ کے ناظم اعلیٰ اصغر مصباحی، مولانا محمد قاسمی مہتمم مدرسہ حسینیہ کڈرورانچی ، مفتی قمرعالم ، قاری اسجد ، اقبال امام ، تنویر احمد، مولانا عبیداللہ قاسمی، شاہ محمد عمیر وغیرہ شامل تھے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: