ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

جھارکھنڈ : ضمنی انتخابات میں مسلم لیگ نے سیکولر پارٹی کی حمایت کا کیا اعلان

انڈین یونین مسلم لیگ کی ریاستی کمیٹی نے دونوں اسمبلی حلقوں میں سیکولر پارٹی کی حمایت کا فیصلہ کیا ہے ۔ مسلم لیگ کے ریاستی ترجمان محمد شہاب الدین نے واضح کیا ہے کہ مسلم لیگ ہمیشہ سیکولر کردار والی پارٹی کی حمایت کرتے رہی ہے ۔

  • Share this:
جھارکھنڈ : ضمنی انتخابات میں مسلم لیگ نے سیکولر پارٹی کی حمایت کا کیا اعلان
جھارکھنڈ : ضمنی انتخابات میں مسلم لیگ نے سیکولر پارٹی کی حمایت کا کیا اعلان

جھارکھنڈ کے دمکا اور بیرمو اسمبلی حلقوں میں آئندہ تین نومبر کو ضمنی انتخابات ہون گے ۔ انڈین یونین مسلم لیگ کی ریاستی کمیٹی نے دونوں اسمبلی حلقوں میں سیکولر پارٹی کی حمایت کا فیصلہ کیا ہے ۔ مسلم لیگ کے ریاستی ترجمان محمد شہاب الدین نے واضح کیا ہے کہ مسلم لیگ ہمیشہ سیکولر کردار والی پارٹی کی حمایت کرتے رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ریاست میں ہونے والے پارلیمانی اور اسمبلی انتخابات میں بھی سیکولر مانی جانے والی پارٹی کے امیدواروں کی حمایت کی گئی تھی ، جس وجہ کر اسمبلی انتخابات میں جے ایم ایم ۔ کانگریس اور آر جے ڈی کے اتحاد کو تاریخ ساز کامیابی ملی اور ایک سیکولر کردار والی حکومت کا وجود عمل میں آیا ۔ محمد شہاب الدین نے مزید کہا کہ اسی کامیابی کی وجہ سے ریاست کے دو اسمبلی حلقوں میں ہونے والے ضمنی انتخابات میں سیکولر کردار والی پارٹی کے امیدواروں کی حمایت کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ ساتھ ہی اس تعلق سے دونوں اسمبلی حلقوں کے مسلم لیگ کے لیڈران اور کارکنان کو ان امیدواروں کے حق میں تشہیری مہم چلانے کا حکم دیا گیا ہے ۔ تاکہ دونوں اسمبلی حلقوں سے ان کی کامیابی کو یقینی بنایا جا سکے ۔


دمکا اور بیرمو اسمبلی حلقوں میں ضمنی انتخابات کے لئے الیکشن کمیشن کے ذریعہ 9 اکتوبر کو نوٹیفیکیشن جاری کیا گیا ۔ 16 اکتوبر تک پرچہ نامزدگی داخل کئے گئے ۔ 17 اکتوبر کو پرچہ کی جانچ کی گئی جبکہ 19 اکتوبر نام واپسی کی تاریخ تھی ۔ ان دونوں حلقوں میں 3 نومبر کو ووٹ ڈالے جائیں گے جبکہ 10 نومبر کو ووٹوں کی گنتی ہوگی اور نتائج کا اعلان کیا جائے گا ۔ الیکشن کمیشن کے ذریعہ بتایا گیا ہے کہ ضمنی انتخابات کے لئے معقول تعداد میں ای وی ایم اور وی وی پیٹ کے انتظامات کر لئے گئے ہیں ۔ ووٹرس اپنے 11 شناختی کارڈ کا استعمال کر کے ووٹ ڈال سکتے ہیں ۔


 3 نومبر کو ووٹ ڈالے جائیں گے جبکہ 10 نومبر کو ووٹوں کی گنتی ہوگی اور نتائج کا اعلان کیا جائے گا ۔
3 نومبر کو ووٹ ڈالے جائیں گے جبکہ 10 نومبر کو ووٹوں کی گنتی ہوگی اور نتائج کا اعلان کیا جائے گا ۔


دمکا اسمبلی حلقہ میں ضمنی انتخاب جے ایم ایم کے کارگزار صدر اور وزیر اعلیٰ ہیمنت سورین کے استعفی دینے کی وجہ سے ہو رہا ہے ۔ ہیمنت سورین نے 2019 کے اسمبلی انتخابات میں دمکا کے علاوہ صاحب گنج کے برہیٹ اسمبلی حلقہ سے بھی کامیابی حاصل کی تھی اور بعد میں قانونی مجبوری کی وجہ کر دمکا سیٹ سے استعفی دینا پڑا ۔ اس سیٹ پر وزیر اعلیٰ ہیمنت سورین کے بھائی بسنت سورین کا مقابلہ بی جے پی امیدوار سابق وزیر اقلیتی فلاح ڈاکٹر لوئیس مرانڈی کے ساتھ ہے ۔

بیرمو سیٹ سے کانگریس رکن اسمبلی راجندر پرساد کے انتقال کی وجہ سے یہ سیٹ خالی ہو گئی تھی ۔ اس لئے اس اسمبلی حلقہ میں ضمنی انتخابات کرائے جا رہے ہیں ۔ دونوں سیٹوں پر یو پی اے کا قبضہ تھا ، اس لئے دونوں سیٹوں کو حاصل کرنا یو پی اے کے لئے ایک وقار کی بات ہے ۔ وہیں حزب اختلاف کی پارٹی بی جے پی بھی ضمنی انتخابات میں کامیابی حاصل کر کے اپنی کھوئی ہوئی طاقت حاصل کرنے کی کوشش کرے گی ۔ اس اسمبلی حلقہ سے کانگریس امیدوار انوپ سنگھ کا مقابلہ بی جے پی کے امیدوار یوگیشور مہتو کے ساتھ ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Oct 19, 2020 09:16 PM IST