ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

جھارکھنڈ کے لاتیہار ضلع انتظامیہ نے کی کاروائی، اقلیتی اسکالر شپ اسکیم بے ضابطگی میں ویلفیئر سپروائزر معطل

اقلیتی اسکالرشپ کی تقسیم میں بے ضابطگیوں کی تحقیقات میں بی ایم سی مکتب اسکول ، مہوڈنڈ ، رہائشی اسکول مہواندنڈ اور الاسلامیہ اسکول مہوئنڈ کے نام شامل ہیں۔ ویلفیئر سپروائزر پورن شنکر بھگت ، اسکول کے تنویر عالم ، اویش رضا ، ستیانند ورما اور اوم پرکاش قصوروار پائے گئے جس کے بعد ڈی سی ابو عمران نے کارروائی کی ہے۔

  • Share this:
جھارکھنڈ کے لاتیہار ضلع انتظامیہ نے کی کاروائی، اقلیتی اسکالر شپ اسکیم بے ضابطگی میں ویلفیئر سپروائزر معطل
جھارکھنڈ : اقلیتی اسکالر شپ اسکیم بے ضابطگی میں ویلفیئر سپروائزر معطل

رانچی۔ جھارکھنڈ کے لاتیہار میں مرکزی حکومت کے ذریعہ چلائی جا رہی اقلیتی اسکالرشپ گھوٹالہ معاملہ میں بے ضابطگیوں کی تصدیق کے بعد ڈپٹی کمشنر ابو عمران نے معاملے کی تحقیقات ، اینٹی کرپشن بیورو (اے سی بی) سے کی ہے۔ انہوں نے محکمہ بہبود میں تعینات ویلفیئر سپروائزر پورن شنکر بھگت کو معطل کرنے کے لئے محکمہ کے سکریٹری کو ایک خط بھیجا ہے جس کے ذریعہ انہوں نے کاروائی کی سفارش کی ہے۔


واضح رہے کہ لاتیہار ضلع سمیت ریاست میں مالی سال 2019۔20 میں اقلیتی اسکالرشپ کی فرضی تقسیم کے معاملے بے نقاب ہونے کے بعد ایک ٹیم کی تشکیل ڈپٹی کمشنر ابو عمران نے ایس ڈی او کی سربراہی میں کی تھی۔ اس معاملے کی تحقیقات میں کافی بے ضابطگی پائی گئی۔ اس دوران فلاح و بہبود کے نگراں کو قصوروار پایا گیا۔ جس کے بعد ڈی سی ابو عمران نے محکمہ بہبود میں تعینات فلاحی سپروائزر پورن شنکر بھگت کو معطل کرکے محکمہ فلاح کے سکریٹری کو خط بھیج کر پورے معاملے کی جانچ کرانے اور کاروائی کی سفارش کی ہے۔


ان اسکولوں میں بے ضابطگیاں پائی گئیں


اقلیتی اسکالرشپ کی تقسیم میں بے ضابطگیوں کی تحقیقات میں بی ایم سی مکتب اسکول ، مہوڈنڈ ، رہائشی اسکول مہواندنڈ اور الاسلامیہ اسکول مہوئنڈ کے نام شامل ہیں۔ ویلفیئر سپروائزر پورن شنکر بھگت ، اسکول کے تنویر عالم ، اویش رضا ، ستیانند ورما اور اوم پرکاش قصوروار پائے گئے جس کے بعد ڈی سی ابو عمران نے کارروائی کی ہے۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Dec 10, 2020 12:28 PM IST