ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

رانچی یونیورسٹی کا ادبی مجلہ" نئی قدریں” کا اساتذہ نمبر جلد ہوگا شائع، ادبی شخصیات پر مضامین کو ملےگی جگہ

یہ ادبی مجلہ " نئی قدریں " رانچی یونیورسٹی کے وائس چانسلر ڈاکٹر رمیش کمار پانڈے کی سرپرستی میں گذشتہ تین سالوں سے شائع ہو رہا ہے۔ شعبہ اردو کے صدر ڈاکٹر منظر حسین کے مطابق پہلی بار اس ششماہی ادبی مجلہ کا خصوصی شمارہ منظر عام پر پیش کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

  • Share this:
رانچی یونیورسٹی کا ادبی مجلہ
رانچی یونیورسٹی کا ادبی مجلہ" نئی قدریں” کا اساتذہ نمبر جلد ہوگا شائع

رانچی۔ رانچی یونیورسٹی کے شعبۂ اردو کا ادبی مجلّٰہ’’نئی قدریں‘‘ کا اردو اساتذہ نمبر جلد شائع ہونے جا رہا ہے۔ اس ادبی مجلہ میں اپنے مضامین شائع کرانے کے مقصد کے تحت شائقین ادب سے درخواست کی گئی ہے ۔ مذکورہ عنوان کے تحت 15نومبر ٢٠٢٠ تک کسی ایک شخصیت کی ادبی خدمات پر اپنا مضمون ان پیج میں ٹائپ کراکر اس ای میل naieeqadrenurdu@gmail.comپر ارسال کر سکتے ہیں۔


اس مجلہ کی مدیر اور شعبہ اردو کی سابق صدر ڈاکٹر کہکشاں پروین کے مطابق مضمون فل اسکیپ سائز پر تین صفحات پر مشتمل ہونا چاہئے ۔ نیوز 18 اردو سے خاص بات چیت میں ڈاکٹر کہکشاں پروین نے کہا کہ جن شخصیات پر مضامین رقم ہوں گے ان کے نام ہیں پروفیسر وہاب اشرفی، پروفیسر ش۔ اختر، پروفیسر احمد سجاد ، پروفیسر ابوذر عثمانی، پروفیسر صدیق مجیبی، پروفیسر یونس ،پروفیسر حسن امام ، پروفیسر سمیع الحق، پروفیسر شعیب رحمانی، پروفیسر نادم بلخی، پروفیسر شعیب راہی، پروفیسر مظفربلخی، پروفیسر شان احمد صدیقی، پروفیسر عامر صدیقی، پروفیسر منظر شباب، پروفیسر منظرکاظمی، پروفیسر سید احمد شمیم، پروفیسر کہکشاں پروین، پروفیسر منظر حسین، پروفیسر سرور ساجد، پروفیسر شمیم الدین احمد، پروفیسر عبد القیوم ابدالی، پروفیسر جمشید قمر اور پروفیسر اختر یوسف۔


واضح رہے کہ یہ ادبی مجلہ " نئی قدریں " رانچی یونیورسٹی کے وائس چانسلر ڈاکٹر رمیش کمار پانڈے کی سرپرستی میں گذشتہ تین سالوں سے شائع ہو رہا ہے۔ شعبہ اردو کے صدر ڈاکٹر منظر حسین کے مطابق پہلی بار اس ششماہی ادبی مجلہ کا خصوصی شمارہ منظر عام پر پیش کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے ۔ انہوں نے واضح کیا کہ ماضی میں اب تک جو بھی شمارہ شائع ہوا ہے وہ عام شمارہ رہا ہے۔


ڈاکٹر منظر حسین نے واضح کیا کہ رانچی یونیورسٹی کے قیام سے لیکر اب تک جو بھی رانچی یونیورسٹی کے شعبہ اردو اور اس یونیورسٹی کے تحت دیگر کالجوں میں اردو اساتذہ کرام رہے ہیں انکی ادبی خدمات کو اس مجلہ کے خصوصی شمارہ کے ذریعہ منظر عام پر لانے کی کوشش کی جا رہی ہے تاکہ نئی نسل کو ان شخصیات کی ادبی خدمات سے متعارف کرایا جا سکے ۔ انہوں نے واضح کیا کہ رانچی یونیورسٹی کے سابقہ اردو اساتذہ کرام میں بیشتر صاحب تصنیف رہے ہیں۔ انہوں نے واضح کیا کہ چند اساتذہ کرام عالمی شہرت کے حامل رہے ہیں۔ منظر حسین کے مطابق اس خصوصی شمارہ سے اردو کے ریسرچ اسکالروں کو بھی بڑا فائدہ حاصل ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ اس ادبی مجلہ کی تقریباً ٥٠٠ کاپیاں شائع ہوں گی جسے طلباء و طالبات کے درمیان تقسیم کیا جائے گا۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Nov 05, 2020 09:06 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading