உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    تبلیغی جماعت سے وابستہ غیرملکی باشندوں کے مقدمات ختم ہونے سے جھارکھنڈ کے مسلمانوں میں خوشی کا ماحول

    تبلیغی جماعت سے وابستہ غیرملکی باشندوں کے مقدمات ختم ہونے سے جھارکھنڈ کے مسلمانوں میں خوشی کا ماحول

    تبلیغی جماعت سے وابستہ غیرملکی باشندوں کے مقدمات ختم ہونے سے جھارکھنڈ کے مسلمانوں میں خوشی کا ماحول

    رانچی کے سول کورٹ سے تبلیغی جماعت سے وابستہ 17 غیر ملکی افراد کے مقدمات ختم ہونے سے جھارکھنڈ کے مسلمانوں میں خوشی کا ماحول ہے ۔

    • Share this:
    رانچی کے سول کورٹ سے تبلیغی جماعت سے وابستہ 17 غیر ملکی افراد کے مقدمات ختم ہونے سے جھارکھنڈ کے مسلمانوں میں خوشی کا ماحول ہے ۔ گزشتہ شب رانچی کے جامعہ نگر واقع سر سید ریزیڈینسی میں ان غیر ملکی باشندوں کے لئے الوداعیہ تقریب کا انعقاد کیا گیا ۔ سید اقبال امام کے زیر اہتمام منعقدہ اس تقریب میں کانگریس رکن اسمبلی بندھو ترکی اور رانچی کے سابق ڈپٹی میئر اجئے ناتھ شہدیو کے علاوہ شہر کی کئی معروف شخصیات شامل ہوئیں ۔ اس موقع پر عشائیہ کا اہتمام کیا گیا اور ساتھ ہی کیک کاٹ کر خوشی کا اظہار کیا گیا ۔

    واضح رہے کہ چند دنوں قبل رانچی کے سول کورٹ نے ان لوگوں کے خلاف ڈیزاسٹر مینجمنٹ ایکٹ ۔ اپیڈیمک ڈیزیز ایکٹ اور دفعہ یو ایس 169 کو ختم کرتے ہوئے جرمانے کی رقم کے طور پر ہر فرد سے 22 ۔ 22 سو روپے کی ادائیگی کے بعد بری کر دیا تھا ۔ اس موقع پر کانگریس رکن اسمبلی بندھو ترکی نے کہا کہ غیر ملکی بھائی ایک لمبے عرصے سے قیام پذیر ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ان لوگوں کو فرضی طریقے سے مقدمات درج کراکر جیل بھیج دیا گیا تھا ۔ بندھو ترکی نے کہا کہ انہیں عدالت سے انصاف ملا ہے اور باعزت بری ہوئے ہیں ۔

    انہوں نے تمام غیر ملکی باشندوں کو جھارکھنڈ کی قبائلی برادری کی پہچان والی مخصوص شال اور پھولوں کا گلدستہ دیکر عزت افزائی کی اور کہا کہ یہ لوگ ہمارے مہمان ہیں اور مہمانوں کی عزت کرنا ہمارے ملک کی روایت ہے ۔ وہیں رانچی کے سابق ڈپٹی میئر اجئے ناتھ شہدیو نے تمام غیر ملکی باشندوں کو با عزت بری ہونے کے لئے مبارکباد پیش کی ۔ ساتھ ہی انہوں نے غیر ملکی باشندوں کی خدمت کرنے والے تمام مقامی باشندہ کو بھی مبارک باد پیش دی اور شکریہ ادا کیا ۔ اجئے ناتھ شہدیو نے بھی الزام لگایا کہ تبلیغی جماعت کے لوگوں کو ایک سازش کے تحت بدنام کرنے کی کوشش کی گئی ۔

    رانچی کے جامعہ نگر واقع سر سید ریزیڈینسی میں ان غیر ملکی باشندوں کے لئے الوداعیہ تقریب کا انعقاد کیا گیا ۔
    رانچی کے جامعہ نگر واقع سر سید ریزیڈینسی میں ان غیر ملکی باشندوں کے لئے الوداعیہ تقریب کا انعقاد کیا گیا ۔


    غیر ملکی باشندوں نے رانچی کے لوگوں کی اس محبت پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے بار بار ہندوستان آنے کی خواہش کا اظہار کیا ۔ لندن کے باشندہ کبیر زاہد نے کہا کہ جیل میں قیام کے دوران انہوں نے ہندی بولنا سیکھا ہے ۔ انہوں نے تمام لوگوں کا شکریہ ادا کیا ۔ ان باشندوں نے ہندوستان کی تہذیب اور تمدن کی تعریف کی ۔ رانچی کی آب و ہوا اور لوگوں کی تعریف کی ۔

    وہیں دوسری جانب تبلیغی جماعت سے وابستہ مقامی لوگوں نے غیر ملکی باشندوں کے مقدمات ختم کئے جانے کو لے کر آواز اٹھانے کے لئے کانگریس رکن اسمبلی عرفان انصاری کی عزت افزائی کی ۔ اس موقع پر موجود سابق رکن پارلیمنٹ فرقان انصاری کی بھی عزت افزائی کی گئی ۔  تمام 17 غیر ملکی باشندے ضروری اور مطلوبہ کاغذات ملنے کے بعد رانچی سے اپنے اپنے وطن کیلئے جلد ہی روانہ ہوجائیں گے ۔‌
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: