ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

کورونا وائرس کے خطرات کو روکنے اور ملک وسماج کو بچانے کیلئے امسال نہیں نکالا جائے گا جلوس محمدی ، ادارہ شرعیہ جھارکھنڈ کا فیصلہ

فیصلہ کے مطابق جلوس محمدی کے علاوہ عید میلاد النبی کے موقع پر جتنی بھی تقریبات منعقد ہوا کرتی تھیں ، ان سب کا انعقاد ہوگا ۔

  • Share this:
کورونا وائرس کے خطرات کو روکنے اور ملک وسماج کو بچانے کیلئے امسال نہیں نکالا جائے گا جلوس محمدی ، ادارہ شرعیہ جھارکھنڈ کا فیصلہ
کورونا وائرس کے خطرات کو روکنے اور ملک وسماج کو بچانے کیلئے امسال نہیں نکالا جائے گا جلوس محمدی ، ادارہ شرعیہ جھارکھنڈ کا فیصلہ

رانچی کے ہندپیڑھی میں واقع اسلامی مرکز میں سنی بریلوی سنٹرل کمیٹی کے زیراہتمام اہم میٹنگ ادارہ شرعیہ جھارکھنڈ کے ناظم اعلیٰ مولانا قطب الدین رضوی کی صدارت میں منعقد ہوئی ، جس میں مفتیان کرام ، علمائے دین، ائمہ مساجد، انجمن، پنچایت اور مختلف کمیٹیوں کے ذمہ داران شریک ہوئے ۔ میٹنگ کے ایجنڈے پر روشنی ڈالتے ہوئے کمیٹی کے صدر مولانا جسیم الدین خان عنبر نے کہا کہ اس وقت کورونا کے خطرات بڑھ رہے ہیں ۔ آنے والے10-15 دن میں عید میلادالنبی بھی ہے ، جس میں تمام تقریبات کے انعقاد کرنے پر غور وخوض کیا جانا ضروری ہے ۔


نشست کے اخیر میں تمام شرکاء کے باہمی اتحاد واتفاق رائے سے فیصلہ کیا کہ چونکہ جھارکھنڈ اور ملک میں کورونا وائرس کے خطرات لگاتار بڑھ رہے ہیں اور اس کورونا وائرس کے خطرات کو روکنے کے لیے تمام ہندوستانی بالخصوص مسلمانوں نے بھی شب برات ، رمضان المبارک ، نماز تراویح ، الوداع ، عیدالفطر، عیدالاضحی اور محرم جیسے عظیم تہواروں میں جو قربانیاں پیش کی ہیں وہ ناقابل فراموش ہیں ۔


آج بھی کورونا وائرس کے خطرات کو روکنے کے لیے سرکاری گائڈلائنس کے مدنظر معاشرہ، سماج، ریاست، ملک کی حفاظت اور صحت عامہ کے پیش نظر فیصلہ لیا گیا کہ عید میلاد النبی بارہویں شریف کے موقع پر جلوس محمدی نہیں نکالا جائے گا ۔ تاکہ معاشرہ،سماج اور صحت عامہ کی حفاظت کے ساتھ ساتھ سرکاری گائڈ لائن کی پاسداری ہو،اور عام لو گوں کو اس مہاماری سے بچایا جاسکے مختلف اقسام کے ممکنہ پریشانیوں سے ملت کو بچایاجاسکے گرچہ ہرمسلمان کی عقیدت مچل رہی ہے کہ عیدمیلادالنبی کے پربہارموقع سے شاندار جلوس محمدی نکالاجاے اور نکالاجانابھی نہایت ضروری ہے تاہم حالات وکوائف کی روشنی میں مفتیان کرام،علماء دین اورعمائدین ملت نے امسال جلوس محمدی نہ نکالنے کا فیصلہ کیا ہے۔


فیصلہ کے مطابق جلوس محمدی کے علاوہ عید میلاد النبی کے موقع پر جتنی بھی تقریبات منعقد ہوا کرتی تھیں ، ان سب کا انعقاد ہوگا ۔ فیصلہ کے مطابق قرآن خوانی، ہر علاقوں، محلوں میں محفل میلاد ، لنگر خوانی، ہر گھر میں ہرے جھنڈے لگانا، ہر محلوں کو سجانا، مسجد ، مدرسے، خانقاہ اور محلوں میں قمقمے لگانا، اسے سجانا،  ہرعلاقہ میں آمد رسول کے تعلق سے گیٹ لگانا، بینر لگانا، غریبوں کی مدد کرنا ،خصوصا اسپتالوں میں مریضوں کے درمیان پھل وغیرہ کی تقسیم اور عوام الناس کے درمیان کتابچہ، پرچے کی تقسیم کرنا، ہر علاقہ میں علمائے کرام کی تقاریر کا اہتمام کرنا شامل ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Oct 15, 2020 11:23 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading