உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Mob Lynching In Jharkhand : بھیڑ بنی حیوان، لکڑی کاٹنے کے الزام میں پہلے کی پٹائی ، پھر زندہ جلایا

    Jharkhand : بھیڑ بنی حیوان، لکڑی کاٹنے کے الزام میں پہلے کی پٹائی ، پھر زندہ جلایا

    Jharkhand : بھیڑ بنی حیوان، لکڑی کاٹنے کے الزام میں پہلے کی پٹائی ، پھر زندہ جلایا

    Jharkhand News : جھارکھنڈ کے سمڈیگا ضلع سے بڑی خبر آرہی ہے ۔ دراصل سمڈیگا کے کولیبرا تھانہ علاقہ کے بیسراجارا بازار کے نزدیک ماب لنچنگ (Mob Lynching In Simdega) کا معاملہ سامنے آیا ہے ، جہاں مقامی لوگوں نے سنجو پردھان نام کے شخص کی پہلے تو جم کر پٹائی اور پھر زندہ جلا دیا ۔

    • Share this:
      سمڈیگا : جھارکھنڈ کے سمڈیگا ضلع سے بڑی خبر آرہی ہے ۔ دراصل سمڈیگا کے کولیبرا تھانہ علاقہ کے بیسراجارا بازار کے نزدیک ماب لنچنگ (Mob Lynching In Simdega) کا معاملہ سامنے آیا ہے ، جہاں مقامی لوگوں نے سنجو پردھان نام کے شخص کی پہلے تو جم کر پٹائی اور پھر زندہ جلا دیا ۔ ملی جانکاری کے مطابق کولیبرا تھانہ علاقہ کے تحت بندر چواں پنچایت کے بیسراجارا گاوں میں مقامی لوگوں نے لکڑی چوری کے الزام میں گاوں کے ہی سنجو پردھان نام کے شخص کو زندہ جلا (Burnt Alive) کر مار ڈالا ۔

      بتایا جاتا ہے کہ منگل کو دوپہر تقریبا دو بجے  بیسرا جارا گاوں کے رہنے والے سنجو پردھا کو گھر سے نکال کر ٹھیٹھئی ٹانگر پرکھنڈ کے بمبل کیرا گاوں کے تقریبا دو سو سے ڈھائی سو لوگوں نے جنگل سے لکڑی کاٹنے (Cutting Wood) کا الزام لگاکر پٹائی شروع کردی ۔ سنجو کو مار کھاتا دیکھ کر اس کی ماں اور بیوی سپنا دیوی و دیگر اہل خانہ نے اس کو چھوڑ دینے کی لگاتار فریاد کی ، لیکن لوگوں نے کسی کی نہیں سنی اور سنجو کی پٹائی کرتے رہے ۔

      اہل خانہ کے مطابق مقامی لوگوں کا جب اتنے سے بھی دل نہیں بھرا تو انہوں نے سنجو کے گھر کی باڑی میں رکھے لکڑی کو جلا کر زخمی سنجو کو اس میں ڈال دیا ۔ اس دوران اہل خانہ کے ذریعہ بار بار سنجو کو چھوڑنے کی فریاد کی گئی ، لیکن لوگ نہیں مانے ۔

      ادھر واقعہ کی جانکاری کولیبرا پولیس کو ملنے پر کولیبرا پولیس کی ٹیم جائے واقعہ پہنچی ۔ حالانکہ شروع میں پولیس کو بھی مقامی لوگوں نے گاوں میں داخل ہونے سے روک دیا ۔ اس کے بعد سمڈیگا ایس پی ڈاکٹر شمس تبریز کی ہدایت پر ایس ڈی پی او کی قیادت میں بانو انسپکٹر آلوک سنگھ ، صدر تھانہ انچارج انسپکٹر دیانند کمار اور ٹھیٹھئی تھانہ انچارج پربھاری کماراندریش کولیبرا پولیس کے ساتھ جائے واقعہ پر پہنچے ۔ پولیس نے آدھی جلی ہوئی لاش کو اپنے قبضہ میں لیا اور پوسٹ مارٹم کیلئے سمڈیگا بھیج دیا ۔

      ادھر واقعہ کے بعد مقتول سنجو کی اہلیہ سپنا نے بتایا کہ اس کے شوہر نے پیڑ خریدنے کے بعد کاٹا تھا ، وہ بے قصور تھا ۔ پھر بھی سارے گاوں کے لوگوں نے مل کر اس کے شوہر کو بے رحمی سے مار پیٹ کر زندہ جلا دیا ۔ ایسی موت کسی کو نہیں دینی چاہئے ۔

      بتادیں کہ جھارکھنڈ میں حال ہی میں بھیڑ تشدد روک تھام اور ماب لنچنگ ایکٹ 2021 کو اسمبلی سے پاس کیا گیا ہے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: