உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    مظبوط خاندان مظبوط سماج مہم کا آغاز ، جانئے جماعت اسلامی ہند خاتون ونگ کا اس مہم کا کیا ہے مقصد

    مظبوط خاندان مظبوط سماج مہم کا آغاز ، جانئے جماعت اسلامی ہند خاتون ونگ کا اس مہم کا کیا ہے مقصد

    مظبوط خاندان مظبوط سماج مہم کا آغاز ، جانئے جماعت اسلامی ہند خاتون ونگ کا اس مہم کا کیا ہے مقصد

    جماعت اسلامی خاتون ونگ کی ریاستی صدر عفت آراء نے کہا کہ آج کے دور‌ میں خواتین کو مضبوط بنانے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ عورتوں کے تعلق سے مردوں کو بھی اپنی ذمہ داری سمجھنی ہوگی ۔

    • Share this:
    جماعت اسلامی ہند کے شعبہ خواتین کے زیر اہتمام 19 سے 28 فروری کے درمیان ملک گیر مہم ’مضبوط خاندان مضبوط سماج‘ چلائی جارہی ہے ۔ مہم کا مقصد بہتر خاندان کے ساتھ ساتھ بہتر سماج کی تعمیر کرنا ہے ۔ اسی سلسلے میں جماعت اسلامی ہند جھارکھنڈ کی جانب سے رانچی پریس کلب میں آج پریس کانفرنس کا انعقاد کیا گیا۔ اس موقع پر جماعت اسلامی سے جڑی خواتین نے میڈیا سے خطاب کیا۔ اس موقع پر زور دیا گیا کہ انسان ایک بہترین فرد بنے ، خاندان اختلافات کا شکار نہ ہوں ۔ نیز معاشرے میں مثبت تبدیلی لائی جائے۔

    میڈیا سے خطاب کرتے ہوئے جماعت اسلامی خاتون ونگ کی ریاستی صدر عفت آراء نے کہا کہ آج کے دور‌ میں خواتین کو مضبوط بنانے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ عورتوں کے تعلق سے مردوں کو بھی اپنی ذمہ داری سمجھنی ہوگی ۔ انہوں نے کہا کہ خواتین آگے آکر سماج میں بدلاو لائیں ۔ آج خواتین ہر شعبہ میں آگے ہیں۔ انہوں نے مزید مواقع فراہم کئے جانے پر کی ضرورت پر زور دیا ۔ انہوں نے کہا کہ ہم سدھریں گے تو دنیا سدھرے گی۔ خواتین میں بہت طاقت ہے۔

    انہوں نے کہا کہ سوچ بگڑتی ہے تو خاندان میں تناو، بکھراو اور علاحدگی ہوتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ خاندان کی ہئیت بگڑ گئی ہے۔ ہم خود کو سنواریں۔ انہوں نے کہا کہ خواتین میں اتنی ہمت ہونی چاہئے کہ وہ کہہ سکیں کہ میں ظلم کو برداشت نہیں کروں گی۔ انہوں نے کہا کہ عورتیں پڑھی لکھی ہونے کے باوجود تشدد کا شکار ہوتی ہیں۔ اس صورتحال کو بدلنے کی ضرورت ہے۔

    انہوں نے کہا کہ خاندان افراد کے مجموعہ کا نام ہے۔ اس کی بنیاد نکاح سے پڑتی ہے۔ خاندانی زندگی میں عورتوں اور مردوں کی ذمہ داریاں الگ الگ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بہتر انسان وہ ہے جو اپنے پڑوسی کا بھی خیال رکھے اور والدین کے حقوق ادا کرے۔ انہوں نے کہا کہ جو رشتہ توڑے ہم اس کو جوڑیں ۔

    مہم کی جھارکھنڈ کوآرڈینیٹر نے کہا کہ فرد سب سے پہلے اپنے آپ کو ٹھیک کرے۔ فرد جیسا ہوگا سماج بھی ویسا ہی ہوگا۔ انہوں نے بلا تفریق مذہب و ملت تمام لوگوں بالخصوص خواتین سے اس مہم ’مضبوط خاندان مضبوط سماج‘ کو کامیاب بنانے کی اپیل کی ۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: