உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    MP News: تحریک آزادی میں علمائے دین کی قربانیاں کے عنوان سے بھوپال میں ہفت روزہ تقریب کا آغاز

    MP News: تحریک آزادی میں علمائے دین کی قربانیاں کے عنوان سے بھوپال میں ہفت روزہ تقریب کا آغاز

    MP News: تحریک آزادی میں علمائے دین کی قربانیاں کے عنوان سے بھوپال میں ہفت روزہ تقریب کا آغاز

    Madhya Pradesh : آزادی کا امرت مہوتسو کے تحت جہاں پورے ملک میں تحریک آزادی کے مجاہدین کو یاد کیا جا رہا ہے وہیں بھوپال میں عارف مسعود فینس کلب کے ذریعہ تحریک آزادی میں علمائے دین کی قربانیاں کے عنوان سے ہفت روزہ تقریب کا سلسلہ شروع کیاگیا ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Madhya Pradesh | Bhopal | Bhopal
    • Share this:
    بھوپال : آزادی کا امرت مہوتسو کے تحت جہاں پورے ملک میں تحریک آزادی کے مجاہدین کو یاد کیا جا رہا ہے وہیں بھوپال میں عارف مسعود فینس کلب کے ذریعہ تحریک آزادی میں علمائے دین کی قربانیاں کے عنوان سے ہفت روزہ تقریب کا سلسلہ شروع کیاگیا ہے۔ ہفت روزہ تقریب کا انعقاد راجدھانی بھوپال کے مختلف مقامات پرہوگا تاکہ نئی نسل تحریک آزادی میں علمائے دین کی قربانیوں سے واقف ہو سکے ۔ ہفت روزہ تقریب کے پہلے جلسہ کا انعقاد بھوپال قاضی کیمپ میں منعقدہ عوامی جلسہ سے کیاگیا۔ عوامی جلسہ میں بڑی تعداد میں اسکولوں کے طلباو طالبات نے شرکت کی اور اس طرح کے پروگرام کو وقت کی بڑی ضرورت سے تعبیر کرتے ہوئے ملک گیر سطح پر کرنے کا مطالبہ کیا ۔

     

    یہ بھی پڑھئے: اقبال میدان کے تحفظ کو لے کر مدھیہ پردیش جمعیت علما نے کھولا مورچہ


    واضح رہے کہ راجدھانی بھوپال میں تحریک آزادی میں علمائے دین کی قربانیاں کے عنوان سے دس سال قبل ہفت روزہ تقریب کا سلسلہ شروع کیاگیا تھا گزشتہ دو سال کووڈ قہر کے سبب پروگرام کا سلسلہ منقطع رہا اب جبکہ حالات سازگا ہوئے ہیں تو عارف مسعود فینس کلب کے ذریعہ پھر پروگرام کا سلسلہ شروع کیاگیا ہے۔ عارف مسعود فینس کلب کے سربراہ اور بھوپال وسط حلقہ سے ایم ایل اے عارف مسعود نے نیوز ایٹین اردو سے خصوصی بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ آج حیرت اس بات پر ہوتی ہے کہ علمائے دین کی قربانیوں اور مدارس کو تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے ۔ وہ وقت یاد کیجئے جب انگریزی حکومت میں ترنگا اٹھانے پر گولی ماری دی جاتی تھی اس وقت اسی مدارس کے لوگوں نے ہمارے علمائے دین نے مادر وطن کے لئے عظیم قربانیاں دی تھیں ۔

     

    یہ بھی پڑھئے: صرف 9 روپے میں کریں انٹرنیشنل ہوائی سفر! Vietjet دے رہی دھماکہ آفر


    وہ لوگ جنہیں آج اقتدار مل گیا ہے وہ اس وقت حاکم وقت کے لئے یا تو جاسوسی کرتے تھے یا پھر قدموں میں بیٹھ کر اپنا مفاد پورا کرتے تھے ۔ ہماری کوشش ہے کہ اس پروگرام کے ذریعہ علمائے دین کی عظیم قربانیوں کو سامنے لایا جائے اور نئی نسل کو اس تعلق سے بتایا جائے ۔ جب سے ہم نے پروگرام شروع کیاہے اللہ کا شکر ہے کہ تحریک آزادی اور علمائے دین کی قربانیوں کے حوالے سے طلبا کی معلومات میں اضافہ ہوا ہے ۔ان شا اللہ یہ سلسلہ آگے جاری رہے گا تاکہ غلط فہمیاں بھی دور کی جا سکے اور محبت عام ہوسکے ۔

    وہیں پروگرام میں شرکت کرنے والی طالبہ فرحین خان کا کہنا ہے کہ جب تک میں نے پروگرام میں شرکت نہیں کی تھی میں چار پانچ ہی علمائے دین کے نام تحریک آزادی کے حوالے سے جانتی تھی مگر اب میری معلومات میں دوسو سے زیادہ علمائے دین کے نام کا اضافہ ہوا ہے ۔ مجھے خوشی ہے کہ اس پروگرام میں صرف مسلم ہی نہیں بلکہ ہندو طلبا بھی شریک ہورہےہیں اور میں تو یہ چاہوں گی کہ سال میں صرف ایک بار اس پروگرام کا انعقاد نہ کیا جائے بلکہ کئی بار کیا جائے تاکہ زیادہ سے زیادہ طلبا استفادہ کرسکیں ۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: